اردو | हिन्दी | English
161 Views
Uncategorized

آل انڈیامسلم پرسنل لاء بورڈکی مجلس عاملہ میں وکلاء کی مضبوط ٹیم کے ساتھ مسلم پرسنل لاء پرعدالت میں جدوجہدکافیصلہ

un
Written by Taasir Newspaper

امیرشریعت مولانا محمد ولی رحمانی، مسلم پرسنل لاء بورڈکے جنرل سکریٹری، مولانافضل الرحمن مجددی، سکریٹری منتخب، صدربورڈ،مولانارابع حسنی ندوی کااعلان،خواتین کے درمیان ورکشاپ اوربین مسلکی اتحادپرزور،دین بچاؤدستوربچاؤتحریک کے مزیداستحکام کاعزم،نومنتخب جنرل سکریٹری اورسکریٹری کومختلف حلقوں کی طرف سے تہنیتی پیغاما ت

لکھنو16اپریل (آفاق عالم):ممتازعالم دین ماہرقانون وماہرتعلیم امیرشریعت مولانامحمد ولی رحمانی کو آج لکھنومیں منعقدہ مجلس عاملہ کی میٹنگ میں اتفاق رائے سے آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کاجنرل سکریٹری اور مولانا فضل الرحمن مجددی کو سکریٹری منتخب کرلیا گیا۔ جنرل سکریٹری اور سکریٹری کے نام کااعلان بورڈکے صدرحضرت مولاناسیدرابع حسنی ندوی نے کیا۔عاملہ نے مسلم پرسنل لاء میں عدالتی مداخلت کے پس منظرمیں وکلاء کی ایک بڑی ٹیم کے ساتھ سپریم کورٹ میں کیس لڑنے اورپوری قوت کے ساتھ عدالت میں مسلم پرسنل لاء کوواضح کرنے کے ساتھ ساتھ اس کی حفاظت کااظہارِعزم کیا،نیزخواتین کے تعلق سے پھیلائی جارہی غلط فہمیوں کے ازالہ کیلئے مسلم خواتین کے درمیان ورکشاپ اورتعلیم یافتہ خواتین کے ذریعہ ان کی ذہن سازی کابھی فیصلہ کیاگیا۔ساتھ ہی بورڈکی جاری دین بچاؤ دستور بچاؤتحریک کومزیدمضبوطی کے ساتھ آگے بڑھانے نیزبورڈکے مزاج اورمسلکی ہم آہنگی کی توسیع جیسے اہم امورپرتبادلہ خیال ہوا۔واضح رہے مولانا محمد ولی رحمانی عرصہ سے ہی بورڈ کے سکریٹری ہیں ۔ ان کی ہمہ جہت سرگرمی کو دیکھتے ہوئے گذشتہ میٹنگ میں سابق جنرل سکریٹری امیرشریعت مولاناسیدنظام الدین علیہ الرحمۃ نے اپنی وفات سے چندماہ قبل مولاناولی رحمانی کوکارگذارجنرل سکریٹری بنایاتھا۔ بورڈ کے ذمہ داران نے حضرت مولانا سیدنظام الدین کی وفات کے بعد جنرل سکریٹری جیسے اہم عہدے کیلئے ان کے نام کو اتفاق رائے سے منظوری دے دی۔عاملہ کی صدارت صدربورڈمولانارابع حسنی نے فرمائی جب کہ میٹنگ میں عاملہ کے راکین مولاناکلب صادق،مولاناولی رحمانی ،مولاناعبدالوہاب خلجی ،ڈاکٹرقاسم رسول الیاس ،ایڈووکیٹ ظفریاب جیلانی، مولاناخلیل الرحمان سجادنعمانی، مولانا خالدسیف اللہ رحمانی،مولانافضل الرحیم مجددی،مولانایٰسین علی عثمانی بدایونی، مولاناسفیان قاسمی،مولاناانیس الرحمان قاسمی ،اسدالدین اویسی،کمال فاروقی، مولاناخالدرشیدفرنگی محلی، محمدرحیم الدین انصاری ،الحاج ملک محمدہاشم چنئی ،مولانااطہرعلی ممبئی ،الحاج عارف مسعودبھوپال ،ڈاکٹراسماء زہراصاحبہ حیدرآباد،نورجہاں شکیل صاحبہ،جناب محمدجعفردہلی،پروفیسرریاض عمر، ڈاکٹر پروفیسر شکیل صمدانی علی گڑھ موجودتھے۔مولانا محمد ولی رحمانی کو مسلم پرسنل لاء بورڈ کا جنرل سکریٹری منتخب ہونے پرہرحلقے میں مسرت پائی جارہی ہے۔ سوشل میڈیاپراس خبر کے عام ہوتے ہوئے انہیں مبارک بادپیش کرنے کا سلسلہ شروع ہوگیا ۔سوانح نگارجناب شاہ عمران حسن نے اس حسن انتخاب پرصدر بورڈ کومبارکباددی ہے نیزمعروف عالم دین مولاناابوطالب رحمانی نے اپنے تہنیتی پیغامات میں کہاہے کہ حضرت مولاناسیدنظام الدین علیہ الرحمۃ نے اپنی زندگی میں اپنی نیابت سپردکرکے جواشاردہ دیاتھا ،پہلے امارت شرعیہ کے امیراوراب بورڈکے جنرل سکریٹری بناکریہ امانت ان کے معتمدکومل گئی ۔آپ کی شخصیت معروف قانوں داں ،متبحرعالم دین اورماہرتعلیم کے ساتھ ساتھ تحریکی رہی ہے ۔وہ بانی بورڈاوراپنے والدمولاناسیدمنت اللہ رحمانی ؒ کے ساتھ بورڈسے اولین دن سے ہی جڑے ہیں اوربورڈمیں ان کی خدمات کی طویل فہرست ہے۔ان کے علاوہ مولانا شمشاد رحمانی، مولانا نوشادنوری، بصیرت میڈیا گروپ کے چیف ایڈیٹرجنا ب مولاناغفران ساجدقاسمی،نیشنل بیوروچیف نازش ہماقاسمی،،مولانارضاء الرحمان رحمانی ،حافظ امتیازرحمانی ،مولانا عبدالسلام رحمانی،مولانامحمدشارب ضیاء رحمانی، قاضی فخرالدین قاسمی، مولانا شہنواز بدرقاسمی ،اسٹارنیوزپورٹل کے ایڈیٹر مولاناظفرصدیقی ،مولانافضل الرحمان ازہری،مولانانسیم انظرندوی،حافظ احتشام ،مولانا منظرقاسمی،مفتی سعودعالم قاسمی،قاضی رضی ،مولاناافروزعالم سلیمی القاسمی قاضی ارشدعلی سمیت علماء اورصحافتی برداری وسماجی تنظیموں کے ذمہ داران نے اس حسن انتخاب پرمجلس عاملہ کواورمولانامحمدولی رحمانی کومبارکبادپیش کرتے ہوئے مسلم پرسنل لاء بورڈ کی سرگرمی میں مزید بہتری کی امیدظاہرکرتے ہوئے خوشی ظاہر کی ہے ۔آل انڈیااسلامک فقہ اکیڈمی کے رفیق مفتی نادرالقاسمی نے مولاناکومبارکبادپیش کرتے ہوئے اس انتخاب کو دورس اورقابل قدرفیصلہ قراردیاہے ۔دریں اثناء آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ جیسے باوقار وفعال ادارہ کے جنرل سکریٹر ی عہدے کیلئے وقت کی مایہ نازشخصیت مفکر اسلام امیر شریعت بہار اڑیسہ و جھارکھنڈ حضرت مولانا سید محمد ولی رحمانی کے انتخاب کو پیام انسانیت ایجوکیشنل ٹرسٹ نے ایک نہایت خوش آئند قدم قرار دے کر اسے ملک کے اندر مسلمانوں کے شاندار دینی مستقبل کی علامت سے تعبیرکیا ہے۔پیام انسانیت ٹرسٹ کے صدر مولانا محمد ارشد فیضی قاسمی اور جنرل سکریٹری مولانا مظفر احسن رحمانی نے مشرکہ طورپر اخبار کے نام جاری اپنے بیان میں کہا کہ اس وقت جبکہ ملک کے اندر ایک عجیب وغریب مذہبی نظرئیے کو جنم دے کر مسلم پرسنل لاء کے خلاف طرح طرح کی سازشیں رچی جارہی ہیں اور مسلم قوم کی دینی غیرت کو للکارنے کی کوشش ہورہی ہے مولانا سید محمد ولی رحمانی جیسے جری، فعال، دور بیں، بیباک اور دینی موضوعات پر گہری بصیرت رکھنے والے شخص کی مناسب رہنمائی مسلم قوم کو اس بحران سے نکالنے اور پورے ملک کو غیر یقینی صورت حال سے بچانے میں بہت حدتک معاون ثابت ہوگی ،انہوں نے کہا کہ مولانا ولی رحمانی ان لوگوں میں سے ہیں جنہوں نے اپنی ابتک کی زندگی میں مسلم قوم کی مناسب دینی وملی رہنمائی کا فرض ہمیشہ پوری جوابدہی اور احساس ذمہ داری سے نبھایا ہے ،اور کبھی ایسا نہیں ہوا کہ انہوں نے مسلمانوں کے مسائل سے اپنی نظریں ہٹالی ہوں کیونکہ انہوں نے اپنی گوناگوں صلاحیت کی بنیاد پر مسلم قوم کو زندگی کی جو مناسب سمت بتائی ہے اس کی نظیر بہت کم مل سکے گی ،اس لئے امید کی جانی چاہئے کہ مسلم پرسنل لاء کے پلیٹ فارم سے وہ مسلمانوں کی قابل رشک قیادت ورہنمائی کا فرض پورا کریں گے ۔انہوں نے کہا کہ مسلم پرسنل لاء مسلمانوں کی وہ نمائندہ تنظیم ہے جو ملک کے اندر مسلمانوں کے خلاف اٹھنے والی ہر آواز کا پوری جرآت اورحوصلہ مندی کے ساتھ مقابلہ کرتی رہی ہے اور اس حوالے سے انہوں نے تاریخ کے کسی دور میں بھی مصلحت یا مصالحت کو اپنے عزم اورمقصدکے سامنے حائل ہونے نہیں دیا ،اس تنظیم کا سب سے بڑا امتیاز یہ رہا ہے کہ اس نے حکومت اور فرقہ پرست طاقتوں کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر نہ صرف بات کی بلکہ حکومت کو یہ باور بھی کرایا کہ ملک کے اندر مسلمان سب کچھ برداشت کرسکتا ہے مگر مسلم پرسنل لاء کے خلاف کسی بھی آواز برداشت نہیں کر سکتا کیونکہ مسلم پرسنل لاء اللہ کے بنائے ہوئے ان اصولوں کا نام ہے جنہیں کسی بھی طرح بدلا نہیں جاسکتا ،انہوں نے کہا کہ یہ مسلم پرسنل لاء کہ جد وجہد کا ہی نتیجہ ہے کہ ہزارطوفانی جھونکے کھا نے کے باوجود اس ملک کے اندر مسلمان مکمل دینی تشخص کے ساتھ اپنے وجود کو یقینی بنائے رکھنے میں کامیاب ہیں ،انہوں نے کہا کہ ملک اس وقت جس روش کا شکار ہے اسے کسی بھی طرح قابل اطمینان نہیں کہا جاسکتا فرقہ پرست جماعتیں پورے سازشی انداز میں مسلم پرسنل لاء کی اہمیت کو ختم کردینے کی فراق میں ہیں اور اس کیلئے مختلف طریقہ کاراپنائے جارہے ہیں ایسی سنگین صورت حال میں مولانا ولی رحمانی جیسے حساس فکر رکھنے والے افرادکی قیادت سے ہی اس مایوس کن صورت حال کا اطمینان بخش حل تلاش کر پانا ممکن ہوگا ،انہوں نے اس حسن انتخاب کیلئے مسلم پرسنل لاء بورڈ کی انتظامیہ کمیٹی کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ اس سے نہ صرف دور رس اثرات مرتب ہونگے بلکہ مسلم قوم کوملک کے اندرمکمل خود اعتمادی کے ساتھ جینے کا حوصلہ بھی ملے گا۔

About the author

Taasir Newspaper