اردو | हिन्दी | English
129 Views
Politics

بریانی کے نمونے حاصل کرنے کا مقصد فرقہ وارانہ صف بندی : یچوری

yachuri
Written by Tariq Hasan

نئی دہلی، 9 ستمبر (یو این آئی) ہندستان کی مارکسی کمیونسٹ پارٹی (سی پی آئی ۔ایم) نے بقرعید کے موقع پر ہریانہ کے میوات علاقہ میں بریانی کے نمونے حاصل کرنے کے ریاستی حکومت کے اقدام پرآج سخت نکتہ چینی کی ہے اور الزام لگایا کہ یہ قدم واضح طور پر سیاسی اور انتخابی فائدہ کے لئے فرقہ وارانہ صف بندی تیز کرنے اور لوگوں کو دہشت زدہ کرنے کے لئے اٹھایا گیا ہے ۔ اس قدم کو واپس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے پارٹی کے پیولٹ بیورو نے کہا ہے کہ بظاہر ایسا لگتا ہے کہ آر ایس ایس اور بی جے پی کو گائے کے تحفظ سے کوئی سروکار نہیں کیونکہ گوا میں ان کی طرف سے جہاں لوگوں کے بیف کھانے کے حق کی مدافعت کی جارہی ہے وہیں شمال مشرق میں تو یہ بیف کھانے کے حق میں ہیں ۔ ریاستی حکومت صوبہ میں فروخت کئے جانے والی بریانی کے نمونے حاصل کررہی ہے ۔ کہاجاتا ہے کہ یہ پتہ لگانا مقصود ہے کہ اس میں بیف ہے یانہیں۔ پولٹ بیورو نے بظاہر سرکاری سرپرستی والی اس مہم کو فوراً ختم کرنے کا مطالبہ کیا ہے اور کہا ہے کہ ریاست میں تحفظ گاؤ قانون سازی کے وقت بھی اس نے کہا تھا کہ ایک مذہبی اقلیت کو خوفزدہ کرنے اور معاشرے کو صف بند کرنے کے لئے اس کا بیجا استعمال ہوسکتا ہے ۔ واضح رہے کہ ہریانہ میں اقلیتی آبادی کا ارتکاز میوات علاقہ میں ہے ۔

About the author

Tariq Hasan