اردو | हिन्दी | English
468 Views
Sports

بھارت نے ا نگلینڈکو باری اور 36 رنو ںسے ہرایا

256194
Written by Tariq Hasan

ممبئی،12دسمبر(آئی این ایس انڈیا)ہندوستان نے اپنا دبدبہ برقرار رکھتے ہوئے چوتھے کرکٹ ٹیسٹ میں آج یہاں انگلینڈ کو اننگز اور 36رنز سے شکست دے کر پانچ ٹیسٹ میچوں کی سیریز میں 3-0کی ناقابل شکست برتری حاصل کرلی۔اسٹار اسپنر روی چندرن اشون نے 55رنز دے کر 6 وکٹ چٹکاتے ہوئے انگلینڈ کے نچلے آرڈر کو منہدم کرتے ہوئے ٹیم کو 55.3اوور میں 195رن پر سمیٹا۔آخری دن ہندوستان نے صرف آٹھ اوور میں چار وکٹ گراکر جیت کی خانہ پوری کی۔اشون نے کل رات اور پھر آج صبح اپنے 9.3اوور کے اسپیل میں 15رنز دے کر چھ وکٹ حاصل کئے۔انگلینڈ نے اپنے آخری 6 وکٹ صرف 15رن جوڑ کر گنوائے۔یہ پہلی بار ہے جب کسی مہمان ٹیم نے پہلی اننگز میں 400رنز بنانے کے بعد ہندوستان میں میچ گنوایا ہے۔اشون نے میچ میں 167رنز دے کر 12وکٹ حاصل کئے۔انہوں نے ساتویں بار میچ میں 10یا اس سے زیادہ وکٹ حاصل کئے اور ہندوستانی گیندبازوں میں وہ اب صرف ٹیم انڈیا کے چیف کوچ انیل کمبلے سے پیچھے ہیں جن کے نام پر آٹھ بار اننگز میں 10یا اس سے زیادہ وکٹ کا کارنامہ درج ہے۔کپتان وراٹ کوہلی کی قیادت میں ہندوستان نے مسلسل پانچویں سیریز جیتی ہے،اس ترتیب کا آغاز گزشتہ سال سری لنکا میں 2-1کی فتح کے ساتھ ہواتھا جس کے بعد ہندوستان نے اپنے ملک میں جنوبی افریقہ کو 3-0سے شکست دی۔ٹیم انڈیا نے اس کے بعد ویسٹ انڈیز کو اس کی سرزمین پر 2-0سے شکست دی جبکہ اپنی سرزمین پر نیوزی لینڈ کو 3-0سے کلین سوئپ کیا۔سیریز جیتنے کے ساتھ ہی ہندوستان نے ایک بار پھر انتھونی دی میلو ٹرافی اپنے نام کر لی جو اس نے 2012میں ایلسٹر کک کی ٹیم کو گنوائی تھی۔پانچواں اور آخری ٹیسٹ چنئی میں 16سے 20دسمبر تک کھیلا جائے گا۔آج صبح انگلینڈ کے بلے باز کوئی چیلنج پیش نہیں کر پائے اور اشون نے چار اوور میں چار وکٹ گراکر فتح کی خانہ پوری کی۔اشون نے جانی بےیرسٹا(51)کو کیرم بال پر ایل بی ڈبلیو کیا اور پھر کرس ووکس(00)کو آف بریک پر بولڈ کیا۔عادل راشد(02)نے اشون کی گیند کو فلک کرنے کی کوشش میں ڈیپ مڈ وکٹ پر لوکیش راہل کو کیچ تھمایا جس اشون نے اننگز میں 24ویں بار پانچ یا اس سے زیادہ وکٹ حاصل کئے۔جیمز اینڈرسن(02)نے اس کے بعد جیسے فلک کرکے امیش یادو کو کیچ تھمایا جس سے ہندوستان نے جیت کو یقینی بنایا۔ہندوستان نے اس کے بعد بڑی تعداد میں پہنچے ناظرین کی حمایت کا شکریہ ادا کرتے ہوئے پورے ٹیسٹ کے کرشمائی کپتان کی قیادت میں ”لیپ آف آنر“لگایا۔ہندوستان نے میچ کے دوران دبدبہ برقرار رکھا۔کپتان کوہلی نے چار ٹیسٹ میں اب تک 128کے اوسط سے 640رنز بنا چکے ہیں۔اشون سیریز میں 27وکٹیں حاصل کر چکے ہیں جبکہ بلے سے انہوں نے 239رنز بھی بنائے ہیں۔نوجوان جینت یادو سیریز کی دریافت رہے اور اب تک 221رن بنانے کے ساتھ نو وکٹ بھی حاصل کر چکے ہیں۔چتیشور پجارا(385رنز )، مرلی وجے(328)اور روندر جڈیجہ(16وکٹ)نے بھی مفید شراکت دی ہے ۔ہندوستان نے 23سال سے بھی زیادہ عرصے بعد انگلینڈ کے خلاف دوطرفہ سیریز میں تین ٹیسٹ جیتے ہیں۔پچھلی بار یہ کارنامہ 1993سیشن میں ہوا تھا جب گراہم گوچ کی ٹیم کو محمد اظہرالدین کی قیادت والی ٹیم نے 3-0سے شکست دی تھی۔اس کے بعد ہندوستان گھریلو سرزمین پر انگلینڈ کے خلاف 2001-2006، 2008اور 2012میں ہوئی چار سیریز میں تین ٹیسٹ جیتنے میں ناکام رہا۔

About the author

Tariq Hasan