اردو | हिन्दी | English
178 Views
Sports

دھونی کے سوئمنگ پل سے لوگوں کو اعتراض، وزیر کے جنتا دربار میں کی شکایت

dhoni
Written by Taasir Newspaper

رانچی، 21اپریل (معیز الدین خان)۔ مہندر سنگھ دھونی کے ہرمو علاقے میں موجود آبائی گھر میں بنے سوئمنگ پل کو لے کر تنازعہ کھڑا ہو گیا ہے۔ پانی کی تنگی سے برسرپیکار لوگوں نے جھارکھنڈ کے ریونیو وزیر امر کمار باؤری کے جنتا دربار میں اس کی شکایت کی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ دھونی کے پل میں ہر دن 15 ہزار لیٹر پانی استعمال ہو رہا ہے۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ انہیں پینے کو پانی نہیں مل رہا اور دھونی کے سوئمنگ پل میں پانی بھرا رہتا ہے جبکہ وہ بہت کم وقت کے لئے رانچی آتے ہیں۔ ان کے گھر میں دس سے زیادہ لوگ بھی نہیں رہتے۔ ان کا کہنا ہے کہ یہاں کے محلوں کی حالت مہاراشٹر کے لاتور جیسی ہو گئی ہے. دھونی کے گھر میں موجود سوئمنگ پل کے لئے 15 ہزار لیٹر پانی کا انتظام ہو سکتا ہے، لیکن پانچ ہزار آبادی والے یمنانگر کی پرواہ کسی کو نہیں ہے۔ دھونی کے گھر سے محض ایک کلومیٹر کے فاصلے پر آباد یمنانگر میں نہ تو بورویل سے پانی نکل رہا ہے اور نہ ہی ٹینکر سے پانی سپلائی ہو رہا ہے۔ دو سال سے علاقے کے وارڈ کونسلر سے لے کر میونسپل افسران سے لوگوں نے التجاکی، لیکن کچھ نہیں ہوا تو وزیر کے پاس پہنچے لوگوں نے محلے میں پائپ لائن بچھانے فریاد کی۔ لوگوں نے وزیر سے دس بورنگ کرانے کی مانگ کی۔دھونی کے قریبی لوگوں کا کہنا ہے کہ ان الزامات میں سچائی نہیں ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ سوئمنگ پل میں ہر وقت پانی نہیں بھرا رہتا، بلکہ جب کبھی دھونی آئے، تب سوئمنگ پل میں پانی ہوتا ہے۔اس کے لئے کسی کا حق یا حصہ مار کر پانی نہیں لیا جاتا۔

About the author

Taasir Newspaper