اردو | हिन्दी | English
242 Views
Politics

سواتی کے کنبہ کو ملی لکھنؤ پولیس کی سیکورٹی ، جان کے خطرہ کا خدشہ ظاہر کیا تھا

dayashankar-wife_647_072216113516
Written by Taasir Newspaper

Jul 23, 2016 03:15 PM IST

Posted on: Jul 23, 2016 12:55 PM IST | Updated on: Jul 23, 2016 13:45 PM IST

لکھنو : لکھنؤ پولیس میں گزشتہ جمعہ کو مایاوتی کے خلاف قابل اعتراض تبصرہ کرنے والے دياشنكر سنگھ کی اہلیہ نے بی ایس پی سربراہ سمیت کئی بڑے لیڈروں کے خلاف کیس درج کرواتے ہوئے پولیس سے سیکورٹی کا مطالبہ کیا تھا، جس پر لکھنؤ کے آئی جی ستیش گنیش نے ایس ایس پی کو ہدایت دی ہے کہ سواتی کے کنبہ کو فوری طور پر ان کی سہولت کے مطابق سیکورٹی فراہم کرائیں۔ وہیں سواتی نے بی ایس پی کے لیڈروں پر قتل کی سازش رچنے کا الزام لگاتے ہوئے سیکورٹی کا مطالبہ کیا تھا۔

خیال رہے کہ نازیبا زبان بازی پر بی جے پی اور بی ایس پی میں ٹھن گئی ہے، جہاں بی جے پی ہفتہ کو بی ایس پی کے خلاف سڑکوں پر ہلہ بولتے ہوئے مظاہرہ کر رہی ہے، وہیں بی ایس پی لیڈروں نے حکومت کو 36 گھنٹے کی مهلت دیتے ہوئے کہا ہے کہ اگر دياشنكر کی گرفتاری نہیں ہوئی، تو پوری ریاست میں تحریک چلائی جائے گی

About the author

Taasir Newspaper