اردو | हिन्दी | English
224 Views
Politics

مرکزی حکومت ترقی میں مصروف: روی شنکر

gopalganj
Written by Taasir Newspaper

گوپال گنج، 11 جون (ارون مشرا)۔ مرکزی حکومت غریبوں کی ترقی کے لئے بے چین ہے اور کام بھی کر رہی ہے۔ دلتوں کے احترام کے لئے ہم نے کئی منصوبوں کو سطح زمین پر اتارے ہیں اور آپ ہی کے ضلع کے بڑے لیڈر کام کے بدلے میں زمین لکھواتے پھر رہے ہیں۔ یہ فاصلے ہیں مرکزی حکومت اور آپ صوبے کے مہاگٹھ بندھن حکومت کے درمیان۔غریبوں کو غربت سے نجات ملے، ان کے باورچی خانے سے لے کر کمرے تک اجالا ہو ہم اس کے لئے دن رات کام کر رہے ہیں لیکن یہاں تو لیڈروں کو تحفہ لینے کی دھن سوار ہے۔ مذکورہ باتیں مرکزی وزیر قانون روی شنکر پرساد نے سدھولیا کے کشہر پنچایت بھون پر کہیں۔ کشہر پنچایت بھون پر مرکزی وزیر نے مرکزی حکومت کے تین سال مکمل ہونے پر جہاں حکومت کی کامیابیوں کا ذکر کیا وہیں وزیر اعظم اجول منصوبہ کے تحت غریبوں کے درمیان ایل پی جی کنکشن کی تقسیم بھی کیا۔ اتوار کو مقرر پروگرام کے تحت روی شنکر پرساد محمد پور پہنچے اور ایل پی جی گیس کی تقسیم تقریب میں بطور مہمان ایل پی جی کنکشن تقسیم کیا۔ اس موقع پر عام اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکومت ہند کے تین سال پورے ہو گئے ہیں۔وزیر اعظم کے منصوبوں کو اس دوران عوام تک پہنچانے کا کام کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم ایک غریب کے بیٹے تھے۔ان کی ماں دوسروں کے گھر میں برتن دھوتی تھیں اور اس وقت لکڑی پر کھانا بنتا تھا۔ مودی جی کو یاد آیا کہ غریبوں کی آنکھیں جلد خراب ہو جاتی ہیں لہٰذا انہوں اجول منصوبہ کو عوام تک پہنچانے کا کام کیا ہے۔ روی شنکر پرساد نے کہا کہ حکومت کی پہلی ترجیح دلت بستی میں رہنے والے بچوں، ماؤں اور بزرگوں کو عزت دینا ہے۔اور آج میں کشہر پنچایت میں پہنچ کر فخر کر رہا ہوں۔ غریبوں کی ترقی کے لئے جن دھن یوجنا کے تحت ڈیڑھ سال میں 28 کروڑ غریبوں کے اکاؤنٹ کھلے۔ اس کے تحت منریگا میں کام کر رہے مزدوروں کو براہ راست بینیفٹ ملے گا۔ بجلی کی سپلائی کے لئے ہر جگہ کام زوروں پر ہے۔پہلے مدرا منصوبہ کے تحت امیر لوگوں کو بینک سے لون ملتا تھا۔ آج چائے اور پان بیچنے والے کو بھی وزیر اعظم مدرا منصوبہ کے تحت 50 ہزار، کپڑا تاجروں کو پانچ لاکھ اور بڑے تاجروں کو دس لاکھ کا لون مل رہا ہے۔ اور اس کے تحت اب تک 7.92 کروڑ درخواست آئے ہے۔ چار لاکھ کروڑ لون کی منظوری کی گئی ہے۔ ہمارا نعرہ تھا سب کا ساتھ، سب کا وکاس اور اس کے تحت حکومت کام کر رہی ہے۔

About the author

Taasir Newspaper