اردو | हिन्दी | English
879 Views
Technology

موتیہاری میں عالم وفاضل کا امتحان پرامن ماحول میں اختتام پذیر

exam
Written by Taasir Newspaper

مشرقی چمپارن، 12 اپریل (محمد ارشد)۔ مولانا مظہر الحق عربی وفارسی یونیورسٹی پٹنہ کے تحت درجہ عالم وفاضل کے امتحان کے لئے مشرقی چمپارن موتیہاری کے ڈاکٹر رحمن ماڈل اکیڈمی تعلیم آباد کو اکزامینیشن سینٹر بنایاگیا تھا۔اس مرکز پر امتحان درجہ عالم وفاضل کے طلبا نے پرامن اور صاف شفاف ماحول میں امتحان دیا۔ اس بابت جانکاری دیتے ہوئے امتحان مرکز کے سی ایس جناب مفتی نوشاد قاسمی نے بتایا کہ اس مرکز پر درجہ عالم سال اول سے کل ۴۳۶، درجہ عالم سال دوم کے ۳۳۳، عالم سال سوم کے ۱۵۱ طلبہ وطالبات نے امتحان میں شرکت کی۔ جب کہ درجہ فاضل سال اول سے ۶۰، فاضل دوم فائنل سے ۳۸ طلبہ وطالبات امتحان میں شریک ہوئے ۔موصوف نے بتایا کہ امتحان مرکز پر دونوں نشستوں کا امتحان بہت ہی صاف وشفاف ماحول میں مکمل ہوا۔ موقع پر جوائنٹ سی ایس جناب مشتاق احمد صاحب نے بتایا کہ یونیورسٹی کے اصول وضوابط کے مکمل پابندی کے ساتھ مرکز پر امتحان لینے کی بھرپور کوشش ہوئی۔ انہوں نے کہاکہ مرکز پر کسی قسم کی بدعنوانی نہیں ہوئی۔ موصوف نے بتایا کہ مرکز ہذا کے محافظین میں مولانا جاوید قاسمی ، محمداسلم، خوشبو خاتون رخسار پر وین وغیرہم کافی متحرک نظرآئے۔جن کی تعاون سے امتحان بآسانی اپنا سفر طیکیا۔ مرکز پر موجود یونیورسٹی کی جانب سے آبزرور پروفیسر احتشام ظفرنے مرکز پرہوئے امتحان کے تئیں پوری طرح اطمینان کا اظہار کیا ہے۔ موصوف نے کہا کہ مرکز ہذا کے سکریٹری جناب خورشید عزیز صاحب کافی متحرک ہیں۔ سکریٹری موصوف ہذا کے خود مرکز پر مکمل طورپر اپنا قیمتی وقت صرف کیا ہے۔ تاکہ محافظین اور طلبہ وطالبات کو کسی قسم کی پریشانیوں کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ آبزرور موصوف نے اسکول کے انتظام وانصرام سے بھی اطمینان کا اظہار کیا۔ موصوف نے نمائندہ کو بتایا کہ مشرقی چمپارن کا یہ قدیم اسکول ہے ۔یہاں وہ ساری سہولیات موجود ہیں جن کے لئے اس دور کے اسکول کوشاں ہیں۔ امتحان اس طرح سے لیا گیاکہ اسکول کی چہار دیواری میں بدعنوانی تو دور چڑیا بھی پر نہیں مارسکی۔ امتحان دہندگان طلبہ وطالبات کا مکمل جانچ امتحان مرکز کی چہار دیواری میں داخل ہونے سے پہلیہی کرایا گیا۔ اس طرح سے امتحان بدعنوانی سے پاک ماحول میں مکمل ہوا۔جھلسا دینے والی گرمی کے بیچ امیدواروں نے امتحان مکمل کیا۔

About the author

Taasir Newspaper