اردو | हिन्दी | English
656 Views
Around the World

مودی نے شنگھائی تعاون تنظیم میں بھارت کی شمولیت کو تاریخی قرار دیا

9psi15
Written by Taasir Newspaper

آستانہ، 9 جون (یو این آئی) وزیراعظم نریندر مودی نے شنگھائی تعاون تنظیم میں آج ہندستان کی شمولیت کو تنظیم کے حق میں ایک ”تاریخی موڑ” قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہندستان کی اس رکنیت سے تمام ممبر ملکوں کو مختلف شعبوں بشمول ارتباط کے میدان میں نئی بلندیاں حاصل کرنے میں مدد ملے گی۔شنگھائی تعاون تنظیم کی سربراہ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر مودی نے کہا کہ ہندستان اس خطے میں انسلاک اور ارتباط کی بنیاد گہری کرنے کیلئے خاطر خواہ دلچسپی لے گا کیونکہ تعلیم، زراعت اور توانائی کے علاوہ ترقیاتی اور انسداد دہشت گردی کے اقدامات جیسے شعبوں میں تنظیم کے رکن ملکوں کے درمیان تعاون کی بے پناہ صلاحیتیں موجود ہیں۔واضح رہے کہ چین ، روس، قزاقستان، کرغیزستان، تاجکستان اور ازبکستان اس تنظیم کے بانی اراکین ہیں۔ ہندستان 2005 سے شنگھائی تعاون تنظیم کا ”مشاہد” چلا آرہا ہے ۔وزیراعظم نے کہا کہ اس تنظیم کے فروغ سے 42 فیصد عالمی آبادی کو فروغ حاصل ہوگا اور اس تنظیم میں ہندستان کی شمولیت کو ارتباط بڑھانے اور دہشت گردی کے خلاف جنگ تیز کرنے کے لئے ممبر ملکوں کے درمیان تعاون کو یقینی بنانے کے لئے ایک نمایاں قدم کے طور پر دیکھا جارہا ہے ۔مسٹر مودی نے اس موقع پر چین کو نیک تمنائیں بھی پیش کیں جو آستانہ سربراہ کانفرنس کے بعد اس تنظیم کی صدارت اختیار کرے گا اور چین کی میزبانی میں آئندہ سال تنظیم کی چوٹی کانفرنس ہوگی۔وزیراعظم نے مزید کہا کہ شنگھائی تنظیم ماحولیاتی تبدیلی کی طرف بھی توجہ دے سکتی ہے ۔قبل ازیں آج صبح مسٹر مودی نے چین کے صدر شی جن پنگ سے باہمی ملاقات اور بات چیت کی۔ کل شام وزیراعظم نے اپنے پاکستانی ہم منصب نواز شریف سے بھی ان کی طبیعت اور ان کی والدہ کا حال دریافت کیاتھا۔

About the author

Taasir Newspaper