اردو | हिन्दी | English
210 Views
Politics

چدمبرم اور کجریوال کے بعد سنجے نروپم نے بھی ثبوت مانگا

sanjay
Written by Tariq Hasan

نئی دہلی، 4 ستمبر (یو این آئی) کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق مرکزی وزیر پی چدمبرم اور دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال کے بعد اب کانگریسی لیڈر سنجے نروپم نے بھی آج پاک مقبوضہ کشمیر میں ہندوستانی فوج کی طرف سے سرجیکل اسٹرائک کرنے کے حکومت کے دعوے پر سوال ٹھایا اور حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ ثبوت پیش کرکے یہ ثابت کرے کہ پاک مقبوضہ کشمیر میں فوج کی محدود کارروائی ‘جھوٹ ‘ نہیں ہے ۔آج یہاں نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے مسٹر سنجے نروپم نے کہا کہ لوگ سرجیکل اسٹرائک کے حوالے سوالات پوچھ رہے ہیں اور انہیں یہ پوچھنے کا حق ہے ۔ انہوں نے کہا کہ “ہم سرجیکل اسٹرائک کا ٹھوس ثبوت دیکھنا چاہتے ہیں اور حکومت کو یہ ثبوت پیش کرنا چاہئے “۔اس سے پہلے ٹویٹر پر انہوں نے کہا کہ ” ہر ہندوستانی باشندہ پاکستان کے خلاف سرجیکل اسٹرائک چاہتا ہے ، لیکن یہ کوءي جعلی سرجیکل اسٹرائک نہ ہو، جس کا مقصد قومی مفاد پر صرف بی جے پی کے سیاسی فائدے حاصل کرنے کا دعوی نہ ہو”۔ قابل ذکر ہے کہ گزشتہ ہفتہ ہندوستانی فوج نے سرحد پار پاک مقبوضہ کشمیر میں محدود فوجی کارروائی (سرجیکل اسٹرائک) کرکے متعدد دہشت گردانہ ٹھکانوں کو تباہ کرنے کا دعوی کیا تھا۔ جبکہ پاکستان نے اس دعوی کی تردید کی تھی۔ اس سے قبل سینئر کانگریسی لیڈر اور سابق مرکزی وزیر داخلہ پی چدمبرم نے حکومت پر ‘سرجیکل اسٹرائک’ کی تشہیر کرکے سیاسی فائدہ اٹھانے کا الزام لگایا تھا۔مسٹر چدمبرم نے ایک نیوز چینل پر یہ دعوی کرتے ہوئے کہ سابقہ ترقی پسند اتحاد (یو پی اے ) حکومت میں بھی پاکستان کے خلاف فوج نے سرجیکل اسٹرائک کیا تھا، کہا کہ مرکزی حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ سرجیکل اسٹرائک کی خبر عوام کے سامنے لانے کے بعد اس کا ثبوت پیش کرے ۔ انہوں نے کہا کہ “یو پی اے نے بھی پاک مقبوضہ کشمیر میں سرجیکل اسٹرائک کیا تھا، لیکن یہ معاملہ فوج تک محدود تھا۔ اب حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ ثبوت پیش کرے “۔ چدمبرم نے کہا کہ فوج کی طرف سے گزشتہ ہفتہ کی کاررواءي کوءي پہلا موقع نہیں ہے جب ہندوستانی فوج ایل او سی کو پار کرکے پی او کے میں داخل ہوءي ہے ۔ اس سے قبل جنوری 2013 میں بھی سرجیکل اسٹرائک انجام دیا گیا تھا، جب یو پی اے کی حکومت تھی ،مگر اس وقت کی حکومت نے فوجی حکمت عملی کی پالیسی کے تحت اس معاملے کو عوام کے سامنے نہیں لانے کا فیصلہ کیا تھا۔مسٹر پی چدمبرم کا یہ تبصرہ وزیر اعظم نریندر مودی کے شدید نکتہ چیں مسٹر اروند کیجریوال کے اس بیان کے ایک روز بعد آیا ہے ، جس میں انہوں نے مرکزی حکومت سے اپیل کی ہے کہ عالمی سطح پر پاکستان کے پروپیگنڈے کا جواب دینے کے لئے حکومت آگے آئے اور سرجیکل اسٹرائک کا ثبوت پیش کرے ۔

About the author

Tariq Hasan