اردو | हिन्दी | English
122 Views
Politics

کسی تیسری پارٹی کی ثالثی کی ضرورت نہیں : راج ناتھ

RAJNATH
Written by Tariq Hasan

سری نگر ، 24جولائی (یو ا ین آئی) تشدد زدہ وادی کشمیر میں امن وامان کی بحالی کے لئے کسی تیسری پارٹی کی ثالثی کو مسترد کرتے ہوئے مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے کہا کہ علیحدگی پسندوں کے ساتھ مذاکرات کا کوئی فوری منصوبہ حکومت کے زیر غور نہیں ہے ۔ انہوں نے پڑوسی ملک پاکستان سے کہا کہ وہ وادی کشمیر کے نوجوانوں کو اپنی ہی حکومت کے خلاف ہتھیار اٹھانے کی اپیلیں کرنا بند کرے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان خود دہشت گردی کا شکار ہے ۔ مسٹر راجناتھ سنگھ نے کہا کہ اگر ضروری پڑی تو ہم زخمیوں کو علاج ومعالجہ کے لئے ایک خصوصی طیارے کے ذریعے نئی دہلی پہنچائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ایک کمیٹی تشکیل دی جائے گی جو پیلٹ بندوقوں کی جگہ کسی دوسرے متبادل طریقے کے استعمال پر دو ماہ کے اندر اپنی رپورٹ پیش کرے گی۔ مسٹر راجناتھ سنگھ نے اپنے دو روزہ دورۂ کشمیر کو سمیٹے ہوئی نئی دہلی روانہ ہونے سے قبل یہاں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ‘ہمیں کشمیر میں معمول کے حالات بحال کرنے کے لئے کسی تیسری پارٹی کی ثالثی کی ضرورت نہیں ہے ۔ جہاں تک عسکریت پسندی کا تعلق ہے ، حکومت ہند اسے کسی بھی صورت میں برداشت نہیں کرے گی’۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ وادی میں معمول کے حالات بحال ہونے کے بعد ہی علیحدگی پسندوں کے ساتھ بات چیت ثمر آور ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت علیحدگی پسندوں کے ساتھ بات چیت کے معاملے پر پہلے ریاستی حکومت کو اعتماد میں لے گی اور اس کے بعد ہی کوئی فیصلہ لیا جائے گا۔ یہ پوچھے جانے پر کہ سابق وزیر اعظم اٹل بہاری واجپائی کا مسئلہ کشمیر پر نظریہ ثمرآور ثابت نہیں ہورہا ہے کیونکہ علیحدگی پسندوں اور پاکستان کے ساتھ بات چیت میں کوئی پیش رفت نہیں ہورہی ہے ، تو مسٹر راجناتھ کا اس پر کہنا تھا ‘وادی میں حالات معمول پر آنے کے بعد ہی اِن تمام معالات پر کوئی فیصلہ لیا جائے گا’۔ پاکستان پر وادی کشمیر میں عسکریت پسندی کو فروغ دینے کا الزام عائد کرتے ہوئے وزیر داخلہ نے کہا ‘ہم اپنے ہمسایہ سے کہنا چاہتے ہیں کہ وہ خود دہشت گردی سے متاثر ہے اور اسے لال مسجد کے اندر دہشت گردوں کو ہلاک کرنا پڑا تھا۔ اس کے دیکھتے ہوئے اسے کشمیری نوجوانوں کو بندوقوں اٹھانے کی اپیلیں کرنا بند کرنا چاہیے ‘۔ وادی میں 9 جولائی سے احتجاجی مظاہروں کے دوران ہلاک ہونے والے افراد کے لواحقین کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے مسٹر راجناتھ سنگھ نے کہا کہ انہوں نے سیکورٹی فورسز کو مشتعل ہجوموں کے ساتھ نمٹنے کے دوران زیادہ سے زیادہ صبر تحمل برتنے کی ہدایت دی ہے ۔

About the author

Tariq Hasan