اردو | हिन्दी | English
189 Views
Sports

کوہلی اور اشون کی بدو لت پہلے ٹسٹ پر بھارت کی گرفت مضبوط

ASHVIN
Written by Taasir Newspaper

انٹیگا 23 جولائی (یو این آئی) کپتان وراٹ کوہلی (200) کے کیریئر کی پہلی ڈبل سنچری اور روی چندرن اشون (113) کی عمدہ سنچری کے دم پر ہندوستان نے ویسٹ انڈیز کے خلاف جمعہ کو پہلے کرکٹ ٹیسٹ کے دوسرے دن آٹھ وکٹ پر 566 رنز بنا کر اپنی اننگز کا اعلان کر دیا اور دن کا کھیل ختم ہونے تک میزبان ٹیم کا ایک وکٹ 31 کے اسکور پر حاصل کرلیا۔وراٹ نے اپنے ناٹ آ ٹ 143 رنز کے اسکور سے اننگز کو آگے بڑھاتے ہوئے شاندار ڈبل سنچری لگائی۔ یہ جہاں ان کے کیریئر کی پہلی ڈبل سنچری ہے ، وہیں غیر ملکی زمین پر کسی بھی ہندوستانی کپتان کی طرف سے بنایا گیا سب سے زیادہ اسکور بھی ہے۔اس سے پہلے محمد اظہر الدین نے نیوزی لینڈ کے خلاف 1990 میں آکلینڈ میں 192 رنز کی اننگز کھیلی تھی۔وراٹ کا اس سے پہلے ذاتی سب سے زیادہ ا سکور 169 رنز تھا۔وراٹ نے اپنی اننگز میں 283 گیندوں کا سامنا کیا اور 24 چوکے اڑایے۔انہوں نے چھٹے نمبر پر بلے بازی کرنے آئے اشون کے ساتھ بہترین 168 رنز کی شراکت کی۔اشون نے اپنی اننگز میں وراٹ کا بخوبی ساتھ نبھاتے ہوئے 253 گیندوں میں 12 چوکوں کی مدد سے اپنی سنچری مکمل کی۔ٹیم انڈیا نے 566 رنز پر اپنی پہلی اننگز ڈکلئیر کردی اور دن کا کھیل ختم ہونے تک ویسٹ انڈیز کی ایک وکٹ 16 اوور میں 31 کے اسکور پر حاصل کرلی۔اوپنر راجندر چندریکا کو 16 کے نجی اسکور پر محمد سمیع نے اپنا شکار بنایا۔انہیں وکٹ کے پیچھے ردھمان ساہا نے لپکا۔کریگ بریتھویٹ (ناٹ آ ٹ 11) اور دویندر بشو (0) پر ٹکے ہوئے ہیں۔ہندستان کا ویسٹ انڈیز کے خلاف اسی کے گھر میں ہندوستان کا دوسرا سب سے بڑا اسکور ہے۔ اس سے پہلے 2006 میں یہاں ہندستان نے آٹھ وکٹ پر 588 رنز پر اننگز ڈکلیئر کردی تھی۔ میزبان ٹیم ویسٹ انڈیز پہلی اننگز کے مقابلے میں اب بھی مہمان ٹیم سے 535 رنز پیچھے ہے۔اس سے پہلے فالو آن بچانے کے لئے کھیلیں گے۔ہندستان کے کپتان وراٹ کوہلی (200) نے جہاں اپنے کیریئر کی پہلی ڈبل سنچری لگائی اور کئی ریکارڈ قائم کئے ، وہیں آل را نڈر کھلاڑیوں میں شامل روی چندرن اشون نے 113 رنز کی اننگز کھیلی اور اپنے کیریئر کی تیسری سنچری لگائی۔اس کے علاوہ امت مشرا نے شاندار نصف سنچری بناتے ہوئے 68 گیندوں میں چھ چوکوں کی مدد سے 53 رنز بنائے۔وکٹ کیپر ساہا نے 40 اور سمیع نے ناٹ آ ٹ 17 رنز کئے۔ویسٹ انڈیز کی جانب سے کریگ بریتھویٹ اور دویندر بشو نے تین تین کامیابی حاصل کیں جبکہ شینن گیبریل نے دو وکٹیں حاصل کیں۔اس سے پہلے ہندستان نے دوسرے دن کا آغاز چار وکٹ پر 302 رنز سے کیا۔وراٹ 143 اور روی چندرن اشون 22 رنز بنا کر کریز پر موجود تھے۔
ہندستانی کپتان نے اپنی سنچری اننگز کے دوران ٹیسٹ کرکٹ میں اپنے 3000 رنز بھی پورے کر لیے۔اپنی اس سنچری کے ساتھ وراٹ نے سابق ہندستانی بلے باز وریندر سہواگ کا ایک بڑا ریکارڈ اپنے نام کر لیا۔وراٹ ہندستان کے لئے 12 ٹیسٹ سنچری پوری کرنے والے دوسرے سب سے تیز بلے باز بن گئے ہیں۔وہ سہواگ کی 77 اننگز میں 12 سنچریوں کے ریکارڈ کو توڑ کر ان سے آگے نکل گئے ہیں۔کوہلی نے 72 اننگز میں یہ کامیابی حاصل کر لی۔ہندستان نے پہلے دن ساتویں ہی اوور میں 14 رن کے اسکور پر مرلی وجے (سات) کا وکٹ کھو دیا تھا لیکن اس کے بعد شکھر (ناٹ آوٹ 46) اور چتیشور پجارا (ناٹ آ ٹ 14) نے صبر کے ساتھ کھیلنے ہوئے دوسرے وکٹ کی ناٹ آ ٹ ساجھے داری میں 20.4 اوور میں 58 رن جوڑ ڈالے۔پجارا 16 رنز بنا کر بشو کا شکار بنے۔شکھر 84 رنز بنا کر ٹیم کے 179 رن کے اسکور پر آ ٹ ہوئے۔چوتھے بلے باز کے طور پر میدان میں اجنکیا رہانے نے 22 رنز بنائے۔انہیں بشو نے آ ٹ کیا۔ وراٹ نے دھون کے ساتھ تیسرے وکٹ کے لئے 105، اجنکیا رہانے (22) کے ساتھ چوتھے وکٹ کے لئے 57 اور پانچویں وکٹ کے لئے روی چندرن اشون کے ساتھ 168 رن جوڑے۔وراٹ کو لنچ کے بعد شینن گیبریل نے بولڈ کر دیا۔وراٹ کا وکٹ گرنے کے بعد اشون نے وکٹ کیپر ردھمان ساہا (40) کے ساتھ 71 رنز کی مفید شراکت کی۔ساہا نے 88 گیندوں کا سامنا کیا اور ایک چوکا اور ایک چھکا لگایا۔ہندستان نے چائے کے وقفہ تک چھ وکٹ پر 512 رنز بنائے تھے اور اس وقت تک اشون اپنی سنچری مکمل کر چکے تھے۔امت مشرا 23 رنز بنا کر ان کا ساتھ دے رہے تھے۔چائے کے وقفہ کے بعد بھی یہ شراکت جاری رہی اور دونوں نے ساتویں وکٹ کے لئے 51 رن جوڑے۔اشون 253 گیندوں پر 12 کے نفاذ کے بعد 526 کے مجموعی اسکور پر آ 182ٹ ہوئے۔مشرا کا وکٹ 566 کے مجموعی اسکور پر گرا۔مشرا نے ذمہ داری کے ساتھ کھیلتے ہوئے چوتھی نصف سنچری مکمل کی۔آخری وقت پر مشرا اور سمیع نے کافی تیزی سے رن بٹورے۔دونوں نے نویں وکٹ کے لئے 40 رنز بنائے۔ مشرا نے 68 گیندوں پر چھ چوکے لگائے جبکہ سمیع نے نو گیندوں پر دو چھکے اڑائے۔

About the author

Taasir Newspaper