اردو | हिन्दी | English
296 Views
Uncategorized

انسانیت کے سب سے عظیم پیشوا تھے امام حسین

امام-حسین
Written by Taasir Newspaper

یوم حسین پر سبھی مذاہب کے علماء کا خطاب

لکھنؤ ۱۳؍ مئی (محمد آفاق) امامیہ ایجوکیشنل ٹرسٹ کے زیر اہتمام آج جے شنکر پرساد ہال قیصر باغ ، لکھنؤمیں یوم حسین منایا گیا۔ جس میں سبھی مذاہب کے سیاسی ، مذہبی رہنما ، دانشور اور سماجی کارکنوں نے امام حسین کی زندگی پر روشنی ڈالی اور امام حسین کو انسانیت کا سچا پیشوا، آخری پیغمبرحضرت محمدؐ کے نواسے ،رسول کی چہیتی بیٹی فاطمہ زہرا کے دل کے ٹکڑے ، حضرت علی کے بیٹے، امام حسن کے بھائی، انسانیت کے رہبر اور اللہ کا مقرب بتایا۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے قاضی شہر مولانا ابوالعرفان فرنگی محلی نے کہا کہ امام حسین رسول اسلام کے نواسے تھے، انھوں نے اسلام کے ذریعہ انسانیت کو بڑھاوا دینے کے لیے بڑا کام کیا۔ مولانا عامر رشادی مدنی نے کہا کہ امام حسین کی زندگی کے جس گوشے پر روشنی ڈالی جائے وہ اسلامی طرز کا نمونہ ثابت ہوتی ہے۔ امام جمعہ مولانا کلب جواد نے کہاکہ امام حسین رسول کی بیٹی فاطمہ زہرا کے دل کا ٹکڑا تھے ٹھیک اسی طرح جس طرح سے ہر ماں کا بیٹا اس کے دل کا ٹکڑا ہوتا ہے۔امامیہ ایجوکیشنل ٹرسٹ کے جنرل سکریٹری مولانا علی حسین قمی رضوی نے کہاکہ امام حسین کی پیدائش کے موقع پر فرشتوں نے بھی رسول کو مبارکباد دے کر بتایا کہ امام حسین کتنے بلند تھے، مولانا رضا حسین رضوی نے کہا کہ جب امام حسین نماز میں رسول کے مبارک کندھے پر چلے گئے تو خدا نے رسول کو سجدہ طویل کرنے کا حکم دیا جو اللہ کی امام حسین سے محبت کا ثبوت ہے، بھیا صوفی ایس ڈی خان نے کہا کہ امام حسین انسانیت کے پیشوا تھے اور آپ کی پیدائش کے بعد جب رسول اللہ نے اپنی گود میں اٹھاکر اذان کہی اور یہ کہاکہ اس اذان کی اور نماز کی لاج رکھنا تو آپ رسول اللہ کے نواسے نے فوراً آنکھ ملاکر گواہی دی۔ راشٹریہ بھاگیداری آندولن کے قومی کنوینر پی سی کریل نے اپنے خطاب میں کہا کہ ہمارے ہیں رسول ، ہمارے ہیں حسین، یوم حسین کا مقصد ہے کہ انسانیت کے لیے سبھی مذاہب کے علما متحد ہوکر ان خیالات سے واقف ہوسکیں جو ان کے دل میں امام حسین کے بارے میں پائے جاتے ہیں۔ امامیہ ایجوکیشنل ٹرسٹ کے میڈیا انچارج اور سماجی کارکن محمد آفاق نے کہا کہ امام حسین کا یوم پیدائش ہم اس لیے مناتے ہیں کہ جشن میں شرکت کرنے سے انسانیت اور ہم آہنگی کا پیغام جاتا ہے اس کے علاوہ ایسے جشن سے راہب کو اولاد، مردوں کو زندگی، اسلام کو روشنی اور لوگوں کو جنت کا پروانہ ملتا ہے۔سماجی کارکن محمد آفاق نے اپنے خطاب میں مزید کہاکہ ہمارا مقصد امام حسین کی تعلیم کو لوگوں تک پہنچانا ہے تاکہ ان کی تعلیم سے لوگ واقف ہوں اور ان پر عمل پیرا ہوسکیں۔پچھڑا جن سماج پارٹی کے قومی صدر واحد حسین گھوسی نے کہا کہ آدم علیہ السلام سے جو دنیا کا وجود ہوا، آخری نبی حضرت محمدؐ سے مکمل ہوا اسی لیے آج دنیا کا ہر مسلمان رسول کا امتی اسی لیے کہلاتا ہے کہ کیونکہ اس نے اسلام کے گھر میں جنم لیا اور اسی لیے وہ اسلام کی دعوت دیتا ہے۔ان کے علاوہ اس پروگرام میں مولانا سید ابو افتخار زیدی، پچھڑا جن سماج پارٹی کے قومی جنرل سکریٹری محمد شاہد حسین گھوسی، کیدار ناتھ، رام پال یادو، حاجی محمد فہیم صدیقی، شکوہ آزاد، قاری محمد جبار، طفیل اختر اور نواب جعفر میر عبداللہ نے بھی امام حسین کی زندگی پر روشنی ڈالی اور کہاکہ امام حسین کا یوم پیدائش سبھی لوگ پورے عقیدہ اور یقین کے ساتھ مناتے ہیں ۔ جس سے یہ سچ سامنے آتا ہے کہ امام حسین کسی ایک مذہب کے لیے نہ تھے بلکہ وہ ہر مذہب اور طبقے سے محبت کرتے تھے جو انسانیت اور ہم آہنگی کے لیے کام کرے۔ اسلام انسانیت کا مذہب ہے ، رسول انسانیت کا پیغام لے آئے اسی لیے جب تک انسانیت زندہ ہے امام حسین اور ان کے کارنامے یاد رکھے جائیں گے۔پروگرام کے اختتام پر اسٹیٹ بینک آف انڈیا کی جانب سے تعلیمی مقابلے میں حصہ لینے والے سبھی طلبا اور طالبات کو انعامات تقسیم کیے گئے اور دانشوروں کو ایوارڈ اور تحائف سے نوازا گیا۔

About the author

Taasir Newspaper