اردو | हिन्दी | English
276 Views
Politics

چترا میں صحافی کے قتل کے معاملے میں لالونے بی جے پی کو آڑے ہاتھوں لیا

Lalu-Prasad-Yadav
Written by Taasir Newspaper

پٹنہ، 18 مئی (یو این آئی) جھارکھنڈ کے چترا میں ٹی وی جرنلسٹ اکھلیش پرتاپ سنگھ کے قتل کے معاملے میں بھارتیہ جنتاپارٹی (بی جے پی) کے ممبر اسمبلی کے ایک قریبی شخص کے شامل ہونے کی خبر آنے کے بعد راشٹریہ جنتادل (آر جے ڈی) کے صدر لالوپرساد یادو نے بی جے پی کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ٹیلی ویژن پر کھوکھلی دلیلیں دینے والے اس معاملے میں خاموش کیوں ہیں۔مسٹر لالو یادو نے قتل کے اس واقعہ کے سلسلے میں مائکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر پر پولیس کے انکشاف سے متعلق رپورٹ کا حوالہ دیتے ہوئے لکھا ہے کہ ”چور مچائے شور ”اب کہاں گئے بی جے پی کے لوگ ، صدرراج ، جنگل راج اور ٹی وی اسکرین پر گلا پھاڑ کر کھوکھلی دلیلیں دینے والے لوگ۔خیال رہے کہ 12 مئی کو رات تازہ ٹی وی چینل کے صحافی اکھلیش پرتاپ سنگھ عرف اندر دیو یادو کا دیوریا پنچایت سکریٹریٹ کے نزدیک گولی مارکر قتل کردیا گیا تھا ۔ اس قتل کیس میں پولیس نے سمریا حلقے سے بی جے پی کے ممبراسمبلی گنیش گتمبھو کے قریبی سورج ساؤکوگرفتار کیا ہے ۔مسٹر لالو پرساد یادو نے میڈیا کو نصیحت دیتے ہوئے ایک دیگر ٹوئٹ میں کہا کہ بہار کے خلاف منفی خبریں فروخت کرنا تجارت بن گیا ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ جس طرح اچھی اور نقلی دوائیں ہوتی ہیں ، اسی طرح اچھا اور غلط میڈیا بھی ہوتا ہے ۔آر جے ڈی کے سربراہ نے نیشنل کرائم ریکارڈ بیورو کے تازہ ترین اعداد و شمار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ بی جے پی جب بہار کی مخلوط حکومت میں شامل تھی تو ریاست میں قتل کے واقعات کا گراف سب سے زیادہ تھا لیکن جب سے ریاست میں مہا گٹھ بندھن کی حکومت بنی ہے ۔ یہ گذشتہ کئی برسوں کے مقابلے کم ہے ۔

About the author

Taasir Newspaper