اردو | हिन्दी | English
188 Views
Politics

ملائم نے کیا سماج وادی پارٹی کاتنازعہ ختم

mulayam
Written by Tariq Hasan

لکھنؤ،16 ستمبر (یو این آئی) اترپردیش میں حکمراں سماج وادی پارٹی میں گذشتہ پانچ دنوں سے جاری تنازع فی الحال ختم ہوگیا ہے ۔پارٹی صدر ملائم سنگھ یادو نے آج خود اس سلسلے میں اعلان کیا۔ پارٹی کے ریاستی دفتر میں مسٹر یادو نے کہا کہ میرے جیتے جی سماج وادی پارٹی میں ٹوٹ نہیں ہوسکتی۔ سب ٹھیک ہوگیا ہے ۔ گایتری پرساد پرجاپتی کو دوبارہ وزیر بنایا جائے گا اور شیو پال یادو کو بھی تمام محکمے واپس دئے جائیں گے ۔سماج وادی پارٹی کے صدر نے تنازع شروع ہونے کے بعد پہلی مرتبہ خاموشی توڑی اور کہا کہ سب ٹھیک ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کارکنان کافی فکر مند ہیں۔ کارکنان کو وہ یہ یقین دلانا چاہتے ہیں کہ اکھلیش ، رام گوپال اور شیو پال میں کوئی اختلاف نہیں ہے ۔ملائم سنگھ یادو کے سامنے ہی شیو پال یادو کے حامیوں نے جم کر نعرے بازی کی۔ حالانکہ پارٹی صدر نے نعرے بازی کرنے والے کارکنوں کو کئی مرتبہ ڈانٹا۔ مسٹر یادو نے کہا کہ باپ اور بیٹے میں اختلاف ہونا عام بات ہے لیکن انہیں پورا یقین ہے کہ اکھلیش ان کی بات نہیں ٹالیں گے ۔ وزیر اعلی اکھلیش یادو اپنے چچا شیو پال یادو کے گھر جائیں گے ۔مسٹر یادو نے کہا کہ سماج وادی خاندان ان کا ہے ۔ خاندان میں کوئی جھگڑا نہیں ہے ۔ اکھلیش اور شیو پال میں بات ہوئی ہے ۔ ان کے رہتے ہوئے کس کی ہمت نہیں ہے کہ گڑبڑی کرے ۔انہوں نے کارکنوں کو یقین دلایا کہ جلد ہی حالات معمول پر آجائیں گے ۔ ہمارے رہتے ہوئے پارٹی ٹوٹ نہیں سکتی۔ انہوں نے کارکنوں سے فکر مند نہیں ہونے کی اپیل کی اور کہا کہ پارٹی اور خاندان میں اختلاف نہیں ہے ۔سماج وادی پارٹی صدر نے کارکنان سے کہا کہ سات اکتوبر کو ان کا جلسہ اعظم گڑھ میں ہے اور سب مل کر اسے کامیاب بنائیں۔

About the author

Tariq Hasan