اردو | हिन्दी | English
401 Views
Sports

گلابی گیند سے بولنگ کرنا مشکل : وہاب

wahab
Written by Tariq Hasan

دبئی، 16 اکتوبر (یو این آئی) پاکستان کے تیز گیند باز وہاب ریاض کا خیال ہے کہ ڈے نائٹ ٹیسٹ میں جیسے جیسے گیند پرانی ہوتی جاتی ہے ویسی ہی گلابی گیند سے بولنگ کرنا مشکل ہوتا جا تا ہے ۔وہاب نے ویسٹ انڈیز کے خلاف گلابی گیند سے ہو رہے پہلے ڈے نائٹ ٹیسٹ میچ کے تیسرے دن کے کھیل ختم ہونے کے بعد کہاکہ گلابی گیند سے بولنگ کرنے میں ہمیں دقت آ رہی ہے ، خاص طور پر تب جب اوس پڑنا شروع ہو جاتی ہے اور ہمیں روشنی کے اندر بولنگ کرنی ہوتی ہے ۔پاکستان اور ویسٹ انڈیز کے درمیان گلابی گیند سے یہ پہلا اور مجموعی دوسرا ڈے نائٹ ٹیسٹ میچ ہے ۔31 سالہ وہاب نے کہاکہ پہلے دو سیشن تو اس میں کوئی دقت نہیں ہوتی ہے لیکن تیسرے سیشن میں جب گیند گیلی ہو جاتی ہے تو اس سے سوئنگ نہیں ہو پاتی ہے ۔اگلے دن جب ہم اسی گیند سے بولنگ کرتے ہیں تو گیند بالکل نرم رہتی ہے سوئنگ کرنا بند کر دیتی ہے ۔تیز گیند باز نے کہاکہ 55 اوور کے بعد گیلے ہونے کی وجہ سے گیند اپنا سائز تبدیل کرلیتی ہے اور پھر ہمیں نئی گیند لینی پڑتی ہے ۔سہیل نے اس لئے سیموئلز کو آؤٹ کیا کیونکہ نئی گیند کافی ٹھوس تھی اور یہ رک رک کر بلے پر جا رہی تھی۔وہاب نے تیسرے دن کے آخری سیشن میں دو وکٹ لئے ہیں۔

About the author

Tariq Hasan