کھیل

اشون اور جڈیجہ نے ہندوستان کی لڑکھڑاتی اننگز کوسنبھالا

Written by Dr.Mohammad Gauhar

موہالی، 27 نومبر (یو این آئی) دنیا کے نمبر ایک آل را¶نڈر روی چندرن اشون (ناٹ آ¶ٹ 57) کی شاندار نصف سنچری اور ان کی رویندر جڈیجہ (ناٹ آ¶ٹ 31) کے ساتھ ساتویں وکٹ کے لئے 67 رن کی قیمتی ناٹ آ¶ٹ ساجھے داری کی بدولت ہندستان نے انگلینڈ کے خلاف تیسرے کرکٹ ٹیسٹ کے دوسرے دن اتوار کو خراب صورت حال سے ابرتے ہوئے چھ وکٹ پر 271 رنز بنا لئے ۔اشون اور جڈیجہ نے ہندوستان کو چھ وکٹ پر 204 رن کی نازک صورت حال سے نکالا اور دن کے اختتام تک انگلینڈ کے اسکور کے قریب پہنچا دیا۔ہندستان اب انگلینڈ کے 283 کے اسکور سے محض 12 رن پیچھے ہے اور اس کے چار وکٹ باقی ہیں۔ہندوستان کے پاس پیر کی صبح پہلی اننگز میں اہم برتری حاصل کرنے کا موقع رہے گا لیکن اس کے لئے اس جوڑی کو اپنی شراکت کو مضبوطی کے ساتھ آگے بڑھانا ہوگا۔دونوں اب تک 19.3 اوور میں ساتویں وکٹ کے لئے ناٹ آ¶ٹ 67 رن جوڑ چکے ہیں۔اشون نے 82 گیندوں کی اننگز میں آٹھ چوکے اور جڈیجہ نے 59 گیندوں میں تین چوکے اور ایک چھکا لگایا۔دونوں بلے باز جب دن کے ختم ہونے کے بعد پویلین لوٹ رہے تھے تو کپتان وراٹ کوہلی اپنی جگہ کھڑے ہو کر تالیاں بجا رہے تھے ۔وراٹ کو یہ معلوم تھا کہ ان دونوں اسپنروں میں کس طرح نازک وقت میں ایسی شاندار شراکت کی۔اشون نے ایک اور نصف سنچری بنائی اور ایک کیلنڈر سال میں 500 رنز اور 50 وکٹیں ڈبل بھی پورا کر لیا۔ہندستانی اننگز میں کپتان وراٹ نے 62، چتیشور پجارا نے 51 اور آٹھ سال بعد ٹیم میں واپس آئے وکٹ کیپر پارتھیو پٹیل نے 42 رنز بنائے ۔مرلی وجے 12، اجنکیا رہانے صفر اور پہلا ٹیسٹ کھیل رہے کرونا نائر چار رن بنا کر آ¶ٹ ہوئے ۔ہندستان کو وجے اور پارتھیو نے پہلے وکٹ کے لئے 39 رن جوڑ کر اچھی شروعات دی۔ وجے 38 گیندوں میں دو چوکوں کے سہارے 12 رن بنا چکے تھے لیکن ایک بار پھر وہ اپنی اننگز کو طویل نہیں کرپائے ۔ وجے وشاکھاپٹنم ٹیسٹ میں بھی دونوں اننگز میں سستے میں آ¶ٹ ہو گئے تھے ۔بین اسٹوکس نے وجے کو وکٹ کیپر جانی بیرسٹو کے ہاتھوں کیچ کرایا۔آٹھ سال بعد ٹیم میں واپسی کرنے والے پارتھیو نے شاندار بلے بازی کی اور وہ نصف سنچری کے قریب پہنچ رہے تھے لیکن لیگ اسپنر عادل راشد نے پارتھیو کو ایل بی ڈبلیو کر دیا۔پارتھیو نے 85 گیندوں پر 42 رنز میں چھ چوکے لگائے ۔ہندستان کا دوسرا وکٹ 73 کے اسکور پر گرا۔شاندار فارم میں کھیل رہے پجارا اور کپتان وراٹ نے تیسرے وکٹ کے لئے 75 رنز کی بہترین شراکت کی۔اس شراکت سے ہندستان کی صورتحال انتہائی مضبوط نظر آ رہی تھی لیکن راشد نے پجارا کو آ¶ٹ کرکے جیسے ہی شراکت کو توڑا ہندستان نے 56 رنز کے وقفے پر اپنے چار وکٹ گرا دیے ۔پجارا نے 104 گیندوں پر 51 رن میں آٹھ چوکے لگائے ۔ان کا وکٹ 148 کے اسکور پر گرا۔ چار رن بعد راشد نے نائب کپتان رہانے کو ایل بی ڈبلیو کر دیا۔رہانے کا وکٹ 152 کے اسکور پر گرا۔اس کے چار رن بعد نائر رن آ¶ٹ ہو گئے ۔نائر کا وکٹ 156 کے اسکور پر گرا۔وراٹ نے اس کے بعد اشون کے ساتھ ہندستان کے اسکور کو 200 کے پار پہنچایا لیکن اسٹوکس نے وراٹ کو بیرسٹو کے ہاتھوں کیچ کراکر ہندستان کو سب سے بڑا جھٹکا دے دیا۔وراٹ نے 127 گیندوں پر 62 رنز میں نو چوکے لگائے ۔وراٹ کا وکٹ 204 کے اسکور پر گرا لیکن اس کے بعد اشون اور جڈیجہ نے پورے جذبے کے ساتھ کھیلتے ہوئے ہندستانی اننگز کو سنبھال لیا۔ راشد نے 81 رن پر تین وکٹ اور اسٹوکس نے 48 رن پر دو وکٹ لئے ۔اس سے پہلے انگلینڈ نے کل کے آٹھ وکٹ پر 268 رن سے آگے کھیلنا شروع کیا اور 15 رنز کا اضافہ کر کے اس کی ٹیم 283 رن پر سمٹ گئی۔ناٹ آ¶ٹ بلے باز عادل راشد نے اپنے کل کے چار رن کے اسکور پر آ¶ٹ ہو گئے جبکہ گیرتھ بیٹی محض ایک رن بنا سکے ۔آخری بلے باز جیمز اینڈرسن 13 رنز پر ناٹ آ¶ٹ رہے ۔انگلینڈ کی صبح اننگز 3.5 اوور میں 15 رنز کا اضافہ کر کے آ¶ٹ ہو گئی۔صبح گرے دونوں وکٹ فاسٹ بولر محمد سمیع نے لئے ۔سمیع 21.5 اوور میں 63 رن پر تین وکٹ لے کر سب سے کامیاب رہے ۔دوسرے فاسٹ بولر امیش یادو نے 16 اوور میں 58 رن پر دو وکٹ لئے ۔آف اسپنر جینت یادو نے 15 اوور میں 49 رن پر دو وکٹ، لیفٹ آرم اسپنر رویندر جڈیجہ نے 23 اوور میں 59 رن پر دو وکٹ اور آف اسپنر روی چندرن اشون نے 18 اوور میں 43 رن پر ایک وکٹ لیا۔

About the author

Dr.Mohammad Gauhar

Chief Editor - Taasir