کھیل

اشون کے پانچ وکٹ، ہندستان کی میچ پر گرفت مضبوط

Written by Dr.Mohammad Gauhar

وشاکھاپٹنم، 19 نومبر (یو این آئی) تجربہ کار آف اسپنر روی چندرن اشون (67 رن پر پانچ وکٹ) کی شاندار گیند بازی اور پھر وراٹ کوہلی (ناٹ آوٹ 56) کی نصف سنچری اننگز کی بدولت ہندستان نے انگلینڈ کے خلاف دوسرے کرکٹ ٹیسٹ کے تیسرے دن ہفتہ کو 298 رن کی بڑی سبقت بنا کر میچ پر اپنی گرفت مضبوط کرلی۔ہندستان نے انگلینڈ کو پہلی اننگز میں 102.5 اوور میں 255 رن پر سمیٹنے کے بعد دن کا کھیل ختم ہونے تک اپنی دوسری اننگز میں 34 اوور میں تین وکٹ کے نقصان پر 98 رن بنا لئے ۔ ہندوستان کے پاس اب کل 298 رن کی سبقت ہو گئی ہے ۔ ہندستان کو پہلی اننگز میں 200 رن کی سبقت ملی تھی۔پہلی اننگز میں شاندار 167 رن بنانے والے کپتان وراٹ نے دوسری اننگز میں بھی اپنی بہترین کارکردگی کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے 70 گیندوں میں چھ چوکوں کی مدد سے ناٹ آوٹ 56 رن بنا لئے ہیں۔ ان کے ساتھ اجنکیا رہانے 54 گیندوں میں دو چوکوں سے 22 رن بنا کر کریز پر موجود ہیں۔ہندستان کی میچ کے چوتھے دن پوری کوشش ہوگی کہ وہ اپنی سبقت کو 400 کے پار پہنچا کر انگلینڈ کے سامنے ایک مشکل ہدف رکھے ۔ہندستان نے انگلینڈ کو 255 رن پر سمیٹنے کے بعد دوسری اننگز میں بھی خراب شروعات کی۔ اوپنر مرلی وجے محض تین رن بنا کر اسٹیورٹ براڈ کا شکار بنے ۔ وجے ڈرامائی طریقے سے آ¶ٹ ہوئے ۔ ان کے خلاف ایل بی ڈبلیو اور گلی پر کیچ دونوں کی اپیل ہوئی۔ امپائر راڈ ٹکر نے پہلے ناٹ آ¶ٹ کا فیصلہ دیا تھا جس پر انگلینڈ نے ریویو مانگا جس میں پتہ چلا کہ جو روٹ نے گلی میں چھلانگ لگاکر شاندار کیچ لیااور وجے روٹ کے ہاتھوں کیچ آ¶ٹ ہو گئے ۔پہلی اننگز میں صفر پر آوٹ ہونے والے لوکیش راہل دوسری اننگز میں بھی مایوس کر گئے ۔ راہل کے خلاف وکٹ کیپر جانی بییرسٹو کے ہاتھوں کیچ کی اپیل ہوئی لیکن میدانی امپائر کا فیصلہ ناٹ آوٹ تھا۔ شارٹ لیگ پر کھڑے حمید کو یقین تھا کہ گیند نے بلے کا کنارہ لیا ہے ۔ الٹرا ایج پر پایا گیا کہ گیند نے بلے کا کنارہ لیا ہے اور انگلینڈ کا دوسرا ریویو بھی کامیاب رہا۔ راہل نے 31 گیندیں کھیل کر دو چوکوں کے لگاکر 10 رن بنائے ۔ہندستان کو تیسرا جھٹکا 40 کے اسکور پر لگا جب پہلی اننگز میں سنچری لگانے والے چتیشور پجارا کو تیز گیند باز جیمز اینڈرسن نے اپنی سوئنگ سے بولڈ کر دیا۔ پجارا نے 24 گیندیں کھیل کر محض ایک رن بنایا۔ تین وکٹ 40 رن پر گر جانے کے بعد وراٹ اور رہانے نے ہندوستانی اننگز کو سنبھالا اور چوتھی وکٹ کی ناٹ آوٹ شراکت داری میں 17.1 اوور میں 58 رن بنا ئے ۔وراٹ نے اپنی نصف سنچری 50 گیندوں میں مکمل کی۔ وراٹ دوسری اننگز میں جس مضبوطی کے ساتھ کھیل رہے ہیں اس سے لگتا ہے کہ وہ میچ میں ایک اور سنچری مکمل کرلیں گے ۔ بریڈ نے چھ اوور میں محض چھ رن دے کر دو وکٹ اور اینڈرسن نے آٹھ اوور میں 16 رن دے کر ایک وکٹ حاصل کیا۔اس سے پہلے تجربہ کار آف اسپنر اشون نے اپنے کیریئر میں 22 ویں بار پانچ وکٹ لیتے ہوئے انگلینڈ کی جدوجہد کو 255 رن پر ختم کر دیا۔ اشون نے 67 رن پر پانچ وکٹ لئے اور ان کے لیے یہ پہلا موقع ہے جب انہوں نے انگلینڈ کے خلاف ایک اننگز میں پانچ وکٹ لئے ہیں۔انگلینڈ نے صبح پانچ وکٹ پر 103 رن سے آگے کھیلنا شروع کیا اور اس پر فالو آن کا خطرہ منڈلا رہا تھا لیکن بین اسٹوکس (70) اور جانی بیرسٹو (53) کی اہم نصف سنچری اننگز نے مہمان ٹیم کو سنبھال لیا۔ تاہم لنچ کے کچھ دیر بعد انگلینڈ کی اننگز 102.5 اوور میں 255 رن پر سمٹ گئی۔ اشون کی اسپن میں پھنسے انگلینڈ نے اپنے باقی چار وکٹ لنچ کے بعد 30 رن کے اندر اندر گنوا دیے ۔اشون نے 29.5 اوور میں 67 رن دے کر سب سے زیادہ پانچ وکٹ لئے ۔ انہوں نے دوسرے دن انگلینڈ کے دو وکٹ لئے تھے جبکہ ہفتہ کو بین اسٹوکس، اسٹورٹ براڈ اور جیمز اینڈرسن کے وکٹ لے کر مہمان ٹیم کی اننگز کا اختتام کر دیا۔ دلچسپ ہے کہ اشون نے ان تینوں کھلاڑیوں کو ایل بی ڈبلیو کیا۔انگلینڈ کی اننگز میں تیز گیند باز محمد سمیع نے 28 رن، امیش یادو نے 56 رن، رویندر جڈیجہ نے 57 رن اور جینت یادو نے 38 رن دے کر ایک ایک وکٹ لیا۔انگلینڈ نے پہلی اننگز میں کل ہی 103 رن کے معمولی اسکور پر اپنے پانچ وکٹ گنوا دیئے تھے لیکن تیسرے دن اس نے کافی بہتر شروعات کی اور مڈل آرڈر کے بلے بازوں نے صورتحال کو سنبھالتے ہوئے لنچ تک اسکور چھ وکٹ پر 191 رن تک پہنچایا۔ ہندستان کی جانب سے دن کا پہلا وکٹ تیز گیند باز امیش یادو نے بیرسٹو کو ایک بہترین گیند پر بولڈ کرکے جھٹکادیا اور ان کی اسٹوکس کے ساتھ چھٹے وکٹ کے لئے 110 رن کی سنچری شراکت کو توڑتے ہوئے ہندستان کو بڑی راحت دلائی۔بیرسٹو نے 152 گیندوں میں پانچ چوکے لگا کر 53 رن کی اننگز کھیلی اور لنچ سے پہلے آ¶ٹ ہوئے لیکن اسٹوکس نے صورتحال کو سنبھالے رکھا اور 157 گیندوں میں 11 چوکے لگا کر 70 رن کی اہم نصف سنچری اننگز کھیلی۔ انہوں نے عادل راشد (32) کے ساتھ ساتویں وکٹ کے لیے 35 رن جوڑے ۔ راشد 73 گیندوں میں چھ چوکے لگا کر 32 رن پر ناٹ آ¶ٹ رہے ۔اسٹوکس ساتویں بلے باز کے طور پر اشون کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہوئے اور انگلینڈ نے اپنا اہم وکٹ گنوا دیا۔ اس کے کچھ دیر بعد ظفر انصاری چار رن ہی بنا سکے تھے کہ انہیں جڈیجہ نے اپنا شکار بنایا اور ایل بی ڈبلیو کرکے انگلینڈ کو آٹھواں جھٹکا دے دیا۔ فٹنس مسائل سے دو چار اسٹیورٹ براڈ بھی 13 رن بنا کر سستے میں آ¶ٹ ہوئے ۔ انہیں اشون نے ایل بی ڈبلیو کیا۔ اشون نے پھر اینڈرسن (صفر) کو بھی ایل بی ڈبلیو کرکے مہمان ٹیم کی اننگز سمیٹ دی۔ہندوستانی گیند بازوں نے انگلینڈ کے پانچ بلے بازوں کو ایل بی ڈبلیو کرکے پویلین بھیجا ۔ آخری تین بلے بازوں کو اشون نے ایل بی ڈبلیو کیا جبکہ جڈیجہ اور جینت یادو نے ایک ایک انگلش بلے باز کو ایل بی ڈبلیو کیا۔ ہندستان نے اپنی پہلی اننگز میں 455 رن بنائے تھے اور انگلینڈ کی پہلی اننگز 255 پر سمٹ جانے سے اسے 200 رن کی بڑی سبقت مل گئی ہے ۔

About the author

Dr.Mohammad Gauhar

Chief Editor - Taasir