کھیل

حمید کی نصف سنچری، انگلینڈ کو 163 رنز کی برتری

Written by Dr.Mohammad Gauhar

راجکوٹ، 12 نومبر (یو این آئی) ڈیبو کھلاڑی حسیب حمید (ناٹ آ¶ٹ 62) اور کپتان ایلیسٹیر کک (ناٹ آ¶ٹ 46) کے درمیان پہلے وکٹ کے لئے 114 رن کی ناٹ آ¶ٹ ساجھے داری اور اس سے پہلے بولر عادل راشد (چار وکٹ) کی بدولت انگلینڈ کرکٹ ٹیم نے ہندستان کے خلاف پہلے کرکٹ ٹیسٹ کے چوتھے دن ہفتہ کو 163 رنز کی برتری لے کر اپنی پوزیشن مضبوط کر لی۔
ہندستانی کھلاڑی روی چندرن اشون کی 70 رنز کی نصف سنچری اننگز کے بعد میزبان ٹیم پہلی اننگز میں تمام وکٹوں کے نقصان پر 488 کے اسکور پر آل آ¶ٹ ہو گئی جس سے انگلش ٹیم کو 49 رنز کی برتری ملی۔انگلینڈ نے اس کے بعد اپنی پہلی اننگز میں دن کا کھیل ختم ہونے تک بغیر کوئی وکٹ گنوائے 37 اوورز میں 114 رنز بنا لئے ہیں۔اس کے بلے باز اور کپتان ایلیسٹیر کک (46) اور حمید (62) ناٹ آ¶ٹ کریز پر ڈٹے ہوئے ہیں۔انگلینڈ کی اب مجموعی برتری 163 رنز ہو گئی ہے ۔
انگلینڈ کیلئے ٹیسٹ ڈیبوکرنے والے حمید نے اپنی پہلی نصف سنچری ٹھوکتے ہوئے 116 گیندوں کی اننگز میں پانچ چوکے اور ایک چھکا لگایا۔انہوں نے اپنے 50 رن 94 گیندوں میں پورے کئے ۔کک نے 107 گیندوں کی اننگز میں تین چوکے لگائے ۔
اس سے پہلے ہندستان نے چوتھے دن اپنی اننگز کا آغاز کل کے 319 رن پر چار وکٹ سے آگے کیا تھا ۔ ٹیم 169 رن اور اضافہ کرکے 162 اوورز میں 488 رنز بنا کر آل آ¶ٹ ہو گئی۔ تاہم اشون کی نصف سنچری اننگز سے میزبان ٹیم نے انگلینڈ کو مضبوط برتری لینے سے روک دیا۔
ہندستانی اننگز میں ٹیسٹ کپتان وراٹ کوہلی کے لنچ سے پہلے ہٹ وکٹ ہونے کے بعد اشون نے صورتحال کو سنبھالتے ہوئے 70 رنز کی نصف سنچری اننگز کھیلی۔اشون معین علی کی گیند پر ظفر انصاری کو کیچ دے کر آخری بلے باز کے طور پر آ¶ٹ ہوئے ۔ردھمان ساہا نے 35 رن اور وراٹ نے 40 رنز بنائے ۔ٹیسٹ کپتان 14 برسوں میں ہٹ وکٹ ہونے والے پہلے ہندوستانی کرکٹر بھی بن گئے ۔ہندستان نے اپنی پہلی اننگز کا آغاز کل کے 319 رن پر چار وکٹ سے کیا ۔ مرلی وجے اور چتیشور پجارا کی زبردست سنچریوں کے بعد میزبان ٹیم کی حالت تسلی بخش تھی اور ٹیم کے اہم اسکورر وراٹ 26 رنز بنا کر کریز پر تھے ۔لیکن چوتھے دن ہندستان کا آغاز کچھ خاص نہیں رہا اور اس نے لنچ سے پہلے اپنے دو اہم بلے بازوں وراٹ اور اجنکیا رہانے کے وکٹ 361 کے اسکور پر گنوا دیے ۔
وراٹ اپنے کل کے اسکور میں محض 14 رنز ہی جوڑ سکے اور 95 گیندوں میں پانچ چوکے لگا کر 40 رنز ہی بنا سکے ۔کپتان وراٹ عادل رشید کی گیند پر ہٹ وکٹ ہوکر چھٹے بلے باز کے طور پر آ¶ٹ ہوئے ۔ان سے پھلے مڈل آرڈر کے اہم اسکورر رہانے نے بھی مایوس کیا اور 30 گیندوں میں ایک چوکا لگا کر 13 رنز ہی بنا سکے ۔رہانے کو ظفر انصاری نے بولڈ کیا۔
ہندستانی کپتان اور ٹیم کے اسٹار اسکورر وراٹ 14 سال میں پہلے ہندوستانی کھلاڑی بنے جو ہٹ وکٹ ہوئے ہیں۔28 سالہ بلے باز عادل راشد کی گیند کو کھیلنے کی کوشش کر رہے تھے کہ ان کے پا¶ں اسٹمپ سے چھو گئے اور بیل گر گئے جس سے انہیں پویلین لوٹنا پڑ گیا۔آخری بار سال 2002 میں ہندستانی کھلاڑی وی وی ایس لکشمن ویسٹ انڈیز کے خلاف ٹیسٹ کے دوران ہٹ وکٹ ہوئے تھے ۔اس کے علاوہ وہ لالہ امرناتھ کے بعد ہٹ وکٹ ہونے والے پہلے ہندستانی ٹیسٹ کپتان بھی ہیں۔
نچلے آرڈر کے بلے باز اشون نے پھر ساہا کے ساتھ ساتویں وکٹ کے لیے 64 رنز کی اہم شراکت کر کے انگلینڈ کی برتری کو کم کرنے کا بہترین کوشش کی۔ساتویں نمبر کے بلے باز اشون نے ٹیسٹ کیریئر میں اپنی ساتویں نصف سنچری بنا ئی۔ انہوں نے 139 گیندوں کی اننگز میں سات چوکے لگا کر 70 رن جوڑے ۔ساہا نے 82 گیندوں میں دو چوکے لگا کر 35 رنز بنائے ۔
اشون اور ساہا لنچ تک ہندوستان کے اسکور کو چھ وکٹ پر 411 تک لے گئے ۔انگلش بولر علی نے ساہا کو بیرسٹو کے ہاتھوں کیچ کراکر ہندوستان کا ساتواں وکٹ نکالا۔رویندر جڈیجہ 12 رنز بنا کر راشد کی گیند پر حسیب حمید کو کیچ دے بیٹھے ۔امیش یادو پانچ رنز بنا کر نویں اور اشون آخری بلے باز کے طور پر آ¶ٹ ہوئے ۔علی نے انصاری کے ہاتھوں انہیں کیچ کراکر ہندستان کی اننگز کو 488 پر سمیٹ دیا۔
انگلینڈ کی جانب سے عادل راشد نے 31 اوورز میں 114 رنز دے کر سب سے زیادہ چار وکٹ لئے ۔ظفر نے 77 رنز دے کر دو وکٹ اور معین نے 85 رن پر دو وکٹ لئے ۔ اسٹیورٹ براڈ کو 78 رنز اور بین اسٹوکس کو 52 رن پر ہندستان کا ایک وکٹ ملا۔

About the author

Dr.Mohammad Gauhar

Chief Editor - Taasir