کھیل

دو سرے ٹسٹ میں انگلینڈ پر فالوآن کا خطرہ

Written by Dr.Mohammad Gauhar

وشاکھاپٹنم، 18 نومبر (یو این آئی) پہلے ٹیسٹ میں ڈرا سے مایوس میزبان ہندستانی کرکٹ ٹیم نے دوسرے ٹسٹ میں انگلینڈ کے خلاف 455 رن کا مضبوط اسکور بنانے کے بعد جمعہ کو دوسرے دن کا کھیل ختم ہونے تک مخالف ٹیم کو محض 103 رنز پر پانچ جھٹکے دے کر فالوآن کے خطرے میں ڈال دیا۔ہندستان نے میچ کے دوسرے دن اپنی پہلی اننگز میں 129.4 اوور میں 455 رن کا بڑا اسکور بنایا جس میں چتیشور پجارا (119)، کپتان وراٹ کوہلی (167) کی سنچری اور روی چندرن اشون (58) کی نصف سنچری شامل ہیں۔بہترین بلے بازی کے بعد میزبان ٹیم نے کمال کی گیند بازی سے دن کا کھیل مکمل ہونے تک انگلینڈ کی پہلی اننگز میں 49 اوور میں محض 103 رنز پر اس کے پانچ وکٹ گرا دیے ۔انگلینڈ کی ٹیم ابھی ہندوستان کے اسکور سے 352 رن پیچھے ہے اور اس کے پاس صرف پانچ وکٹ ہی باقی بچے ہیں۔ہندستان اگر تیسرے دن صبح جلد ہی انگلینڈ کے باقی وکٹ بھی گرا دیتا ہے تو مہمان ٹیم کو فالوآن کھیلنا پڑ سکتا ہے ۔انگلینڈ کی اننگز میں جو روٹ نے 53 رنز کی اہم نصف سنچری اننگز کھیلی۔بین اسٹوکس 12 اور جانی بیرسٹو 12 رنز بنا کر کریز پر ہیں۔ہندستان کی جانب سے تجربہ کار آف اسپنر روی چندرن اشون نے 13 اوور میں 20 رن دے کر دو وکٹ لئے ۔تیز گیند باز محمد سمیع نے 15 رنز اور ڈیبو کھلاڑی جینت یادو نے 11 رنز دے کر ایک وکٹ لیا۔اس سے قبل ہندستانی اننگز میں پہلے دن چتیشور پجارا (119) کی سنچری کے بعد کپتان وراٹ نے 167 رن اور مڈل آرڈر کے بلے باز اشون نے 58 رنز کی اہم نصف سنچری اننگز کھیلی۔ ہندوستان نے لنچ تک سات وکٹ پر 415 رنز بنائے تھے اور لنچ کے کچھ دیر بعد ہندستان کی اننگز 455 رنز پر سمٹ گئی. ڈیبو کھلاڑی جینت یادو نے 35 رنز بنائے ۔انگلینڈ کے معین علی نے 25 اوور میں 98 رن دے کر ہندستان کے تین وکٹ، جیمز اینڈرسن نے 20 اوور میں 62 رن دے کر تین وکٹ اور عادل راشد نے 34.4 اوور میں 110 رنز دے کر دو وکٹ حاصل کئے ۔بین اسٹوکس کو 20 اوور میں 73 رنز دے کر ایک وکٹ حاصل ہوا۔میزبان ٹیم نے اپنے آخری پانچ وکٹ 92 رن جوڑ کر گنوائے ۔لنچ کے کچھ دیر بعد اشون، جینت اور امیش یادو کے وکٹ 28 رن جوڑ کر گر گئے ۔اشون نے 95 گیندوں کی اننگز میں چھ چوکے لگا کر 58 رنز بنائے جو ان کی ٹیسٹ میں آٹھویں نصف سنچری ہے ۔جینت نے 84 گیندوں میں تین چوکے لگا کر 35 رنز بنائے اور آٹھویں وکٹ کے لیے اشون کے ساتھ 64 رن کی اہم نصف سنچری شراکت قائم کی۔امیش 13 رنز کا اضافہ کر کے آخری بلے باز کے طور پر آ¶ٹ ہوئے ۔انہوں نے 21 گیندوں میں تین چوکے بھی لگائے ۔ہندوستان نے میچ کی صبح اپنی اننگز کو کل کے چار وکٹ پر 317 رن سے آگے بڑھایا۔اس وقت وراٹ 151 اور روی چندرن اشون ایک رن پر ناٹ آ¶ٹ تھے ۔کپتان لیکن اپنے ا سکور میں 16 رنز کا اضافہ کرپائے تھے کہ معین علی نے انہیں بین اسٹوکس کے ہاتھوں کیچ کراکر دن کے پہلے اور ہندستان کے پانچویں بلے باز کے طور پر پویلین بھیج دیا۔وراٹ نے 267 گیندوں میں 18 چوکوں کی مدد سے 167 رنز کی اننگز کھیلی جو ان کی ٹیسٹ میں 14 ویں سنچری ہے ۔ساتھ ہی انہوں نے کیریئر میں چوتھی بار 150 سے زیادہ کا اسکور بنایا ہے ۔وراٹ نے اشون کے ساتھ 35 رن جوڑے ۔دوسرے سرے پر گرتے وکٹوں کے درمیان نچلے آرڈر کے بلے باز اشون نے سنبھلتے ہوئے رنز بنائے ۔ہندستان کے لیے دن کا آغاز ویسے کچھ خاص نہیں رہا اور وراٹ محض 16 رن ہی اور بنا سکے تھے کہ وہ پہلے بلے باز کے طور پر 351 کے اسکور پر لوٹ گئے جو انگلینڈ کے لیے بڑا وکٹ تھا۔
اس کے کچھ ہی دیر بعد وکٹ کیپر بلے باز ردھمان ساہا محض تین رنز بنا کر معین کے ہاتھوں ایل بی ڈبلیو ہو گئے اور میزبان ٹیم نے اپنا چھٹا وکٹ گنوایا۔ٹیم اس سے نکل پاتی کی رویندر جڈیجہ بھی اسی انداز میں علی کی گیند پر بغیر کھاتہ کھولے ایل بی ڈبلیو ہو گئے ۔ٹیم نے لنچ تک 415 رن پر سات وکٹ گنوا دیے ۔لنچ کے ٹھیک بعد تجربہ کار کھلاڑی اشون نے 86 گیندوں میں اپنے 50 رن پورے کئے ۔اگرچہ وہ بین اسٹوکس کی 140 کلومیٹر گھنٹے کی رفتار سے آتی گیند پر جان بیرسٹو کو کیچ تھما بیٹھے اور 58 رنز بنا کر آٹھویں بلے باز کے طور پر پویلین لوٹ گئے ۔اسی کے ساتھ جینت اور ان کی شراکت بھی ٹوٹ گئی۔جینت پھر نویں بلے باز کے طور پر راشد کی گیند پر اینڈرسن کو کیچ دے بیٹھے اور وہ بھی جلد ہی واپس لوٹ گئے ۔امیش کو بھی راشد نے جلد ہی واپس بھیجا اور علی کے ہاتھوں انہیں کیچ کراکر ہندستانی اننگز کو سمیٹ دیا۔انگلینڈ کی جانب سے اسٹوکس اور بیرسٹو نے تین تین بہترین کیچ لپکے جبکہ اینڈرسن اور علی نے بھی ایک ایک کیچ لپکے ۔انگلینڈ کی بولنگ کی طرح اس کی بلے بازی بھی کمزور رہی اور ٹیم نے اوپنر اور کپتان ایلیسٹیر کک (دو) کا وکٹ سستے میں گنوا دیا۔کک کو تیز گیند باز محمد سمیع نے بولڈ کیا۔راجکوٹ ٹیسٹ میں متاثر کرنے والے نوجوان کھلاڑی حسیب حمید بھی 50 گیندوں میں 13 رنز بنا پائے تھے کہ انہیں جینت اور ردھمان ساہا نے رن آ¶ٹ کرکے انگلینڈ کے دونوں اوپنروں کو پویلین بھیج دیا۔حمید نے روٹ کے ساتھ دوسرے وکٹ کے لئے اہم 47 رن کی ساجھے داری کی۔روٹ نے 98 گیندوں میں چھ چوکے لگا کر 53 رنز بنائے ۔بین ڈکٹ بھی پانچ رنز بنا کر پھر اشون کی گیند پر بولڈ ہوئے اور انگلینڈ نے اپنا تیسرا وکٹ گنوا دیا۔اس کے پانچ رنز بعد ہی 79 کے اسکور پر روٹ چوتھے بلے باز کے طور پر آ¶ٹ ہو گئے ۔انہیں اشون نے امیش یادو کے ہاتھوں کیچ کرایا۔انگلینڈ اس صورت حال سے نکلتا کہ جینت نے معین علی (ایک) کو ایل بی ڈبلیو کر کے اپنا پہلا ٹیسٹ وکٹ حاصل کیا اور دن کے اختتام تک انگلینڈ نے 103 رنز کے معمولی اسکور پر اپنی آدھی ٹیم کو گنوا دیا۔

About the author

Dr.Mohammad Gauhar

Chief Editor - Taasir