کھیل

مو ہالی میں ہند ’تانی گیند بازو ں کا دبدبہ، انگلینڈ 268/8

Written by Dr.Mohammad Gauhar

موہالی، 26 نومبر (یو این آئی) آف اسپنر جینت یادو، لیفٹ آرم اسپنر رویندر جڈیجہ اور تیز گیند باز امیش یادو کی بہترین بولنگ سے ہندستان نے انگلینڈ کو تیسرے کرکٹ ٹیسٹ کے پہلے دن ہفتہ کو بری طرح جھنجھوڑ دیا۔انگلینڈ نے آٹھ وکٹ کے نقصان پر 268 رنز بنائے ۔ہندوستانی اسپنروں نے انگلینڈ کے کپتان ایلیسٹیر کک کے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرنے کے فیصلے کو صبح سیشن میں 92 رنز پر چار وکٹ گراکر سرے سے غلط ثابت کر دیا۔انگلینڈ نے جانی بیرسٹو (89) کے طور پر دوسرے سیشن میں صرف ایک وکٹ گنوایا اور چائے کے وقفہ تک اپنے ا سکور کو پانچ وکٹ پر 205 رنز پہنچا دیا۔بیرسٹو نے 177 گیندوں کی اننگز میں چھ چوکے لگائے ۔ہندوستانی گیند بازوں نے آخری سیشن میں انگلینڈ کے تین وکٹ اور لیے اور دن کے اختتام تک اپنا پلڑا بھاری کر لیا۔آخری سیشن میں گرے تینوں وکٹ جڈیجہ، جینت اور یادو نے جھٹکے ۔ اپنا دوسرا ٹیسٹ کھیل رہے ہریانہ کے جینت نے جو روٹ (15) اور بیرسٹو (89) کو نمٹا یا جبکہ جڈیجہ نے بین اسٹوکس (29) اور جوس بٹلر (43) کے وکٹ لئے ۔یادو نے اوپنر حسیب حمید (نو) اور کرس ووکس (25) کو پویلین بھیجا۔آف اسپنر روی چندرن اشون نے انگلینڈ کے کپتان اور اوپنر ایلیسٹیر کک (27) کو آ¶ٹ کیا۔ تیز گیند باز محمد سمیع نے معین علی (16) کا وکٹ لیا۔یادو نے پہلے دن اسٹمپ سے پہلے ووکس کو بولڈ کرکے مہمان ٹیم کو بحران میں ڈال دیا۔اسٹمپ کے وقت عادل راشد چار اور گیرتھ بیٹی کھاتہ کھولے بغیر کریز پر تھے ۔جینت نے 15 اوور میں 49 رن پر دو وکٹ، جڈیجہ نے 21 اوور میں 56 رن پر دو وکٹ، یادو نے 16 اوور میں 58 رن پر دو وکٹ، سمیع نے 20 اوور میں 52 رن پر ایک وکٹ اور اشون نے 18 اوور میں 43 رن پر ایک وکٹ لیا۔موہالی ٹیسٹ کیلئے دونوں ٹیموں نے کچھ تبدیلی کیں ۔ہندستانی ٹیم میں دو تبدیلیاں ہوئیں اور کرونا نائر کو ٹیسٹ میں ڈیبو کا موقع مل گیا جن کا میچ سے سابق کپتان سنیل گواسکر نے ٹیسٹ کیپ فراہم کر کے قومی ٹیم میں استقبال کیا۔لوکیش راہل کے زخمی ہونے کی وجہ سے بلے بازی آرڈر میں تبدیلی کی گئی اور نائر چھٹے نمبر پر بلے بازی کے لیے اتریں گے ۔وہیں وکٹ کیپر ردھمان ساہا کے زخمی ہوکر اس میچ سے باہر ہونے کے بعد پارتھیو پٹیل کو بھی حتمی الیون میں جگہ مل گئی جنہوں نے آٹھ سال بعد ٹیسٹ ٹیم میں واپسی کی۔دوسری طرف انگلینڈ نے تین تبدیلی کیں اور جوس بٹلر، کرس ووکس اور گیرتھ بیٹی کو حتمی الیون میں اتارا۔تاہم وشاکھاپٹنم میں 246 رنز کی بڑی شکست کے بعد دبا¶ میں دکھائی دے رہی مہمان ٹیم موہالی میں بھی کچھ دم نہیں دکھا سکی اور اس کی شروعات ہی کافی خراب رہی۔ہندستان کے دورے میں انگلینڈ کی کھوج مانے جا رہے اوپننگ آرڈر کے بلے باز حمید 31 گیندوں میں ایک چوکے کی مدد سے محض نو رنز بنا کر یادو کی گیند پر اجنکیا رہانے کو کیچ دے بیٹھے اور ہندستان کو پہلی کامیابی مل گئی۔اپنا دوسرا ٹیسٹ کھیل رہے نوجوان آف اسپنر جینت نے روٹ کو ڈرنکس کے بعد پہلی ہی گیند پر ایل بی ڈبلیو کر پویلین لوٹا دیا۔روٹ 13 گیندوں میں تین چوکے لگا کر 15 رنز بنا سکے ۔ روٹ کے بعد ایک سرے پر ٹکے ہوئے کک نے 42 گیندوں میں چھ چوکے لگائے اور وہ بھی ایک اوور بعد 27 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے ۔انگلش کپتان کو اشون نے وکٹ کیپر پٹیل کے ہاتھوں کیچ کرایا اور 51 رنز پر انگلینڈ نے اپنے تین اہم بلے بازوں کو کھو دیا۔کک نے گیند کو کٹ کرنے کی کوشش کی اور پٹیل نے وکٹ کے پیچھے شاندار کیچ لپکا۔کک نے حمید کے ساتھ پہلے وکٹ کے لئے 32 رن جوڑے ۔معین نے چوتھے وکٹ کے لئے بیرسٹو کے ساتھ 36 رنز کی شراکت کر کے صورت حال کو کچھ سنبھالا۔لیکن تیز گیند باز سمیع کے با¶نسر پر معین علی نے ہک کیا اور فائن لیگ پر مرلی وجے نے آسان کیچ لپک لیا اور انگلینڈ کا چوتھا وکٹ 87 کے اسکور پر گر گیا۔معین نے 45 گیندوں میں ایک چوکا اور ایک چھکا لگا کر 16 رنز بنائے ۔لنچ کے بعد بیرسٹو اورا سٹوکس نے شراکت کرتے ہوئے ہندستانی گیند بازوں کے دبا¶ کو توڑنے کی کوشش کی۔اس دوران دونوں نے کچھ اچھے شاٹس بھی لگائے ۔اسٹوکس تھوڑے جارحانہ دکھائی دے رہے تھے ۔لیکن لیفٹ آرم اسپنر جڈیجہ پر آگے بڑھ کر مارنے کی کوشش میں وہ گیند کی لائن چوکے اور پٹیل نے آسان اسٹمپ کر دیا۔اسٹوکس نے 59 گیندوں پر 29 رنز میں پانچ چوکے لگائے ۔اس کے بعد بیرسٹو اور اس میچ کے لیے انگلینڈ کی ٹیم میں شامل بٹلر نے بہتر بیٹنگ کرتے ہوئے چائے کے وقفہ تک ٹیم کو کوئی اور نقصان نہیں ہونے دیا۔بیرسٹو نے اپنے 50 رن 76 گیندوں میں پورے کئے ۔چائے کے وقفہ تک انگلینڈ کا اسکور 205 رنز تک پہنچ گیا۔بیرسٹو 66 اور بٹلر 38 رنز پر ناٹ آ¶ٹ تھے ۔چائے کے وقفہ کے بعد جڈیجہ نے بٹلر کو آ¶ٹ کر کے ہندستان کو چھٹی کامیابی دلائی۔بٹلر کا کیچ کپتان وراٹ کوہلی نے لپکا۔بٹلر نے 80 گیندوں پر 43 رن پر پانچ چوکے لگائے ۔ اپنی سنچری کی طرف بڑھ رہے اس سال کے سب سے زیادہ کامیاب بلے باز بیرسٹو کو جینت یادو نے ایل بی ڈبلیو کر کے ہندستان کو بڑی کامیابی دلا دی۔تاہم بیرسٹو نے ڈی آر ایس مانگا لیکن وہ آ¶ٹ ہو کر پویلین لوٹ گئے ۔دن کے 89 ویں اوور چل رہا تھا اور گیند امیش یادو کے ہاتھوں میں تھی۔یادو نے اپنے اوور کی آخری گیند پر ووکس کو بولڈ کر دیا۔

About the author

Dr.Mohammad Gauhar

Chief Editor - Taasir