کھیل

ہندستان کی جیت کی جانب پیش قدمی

Written by Dr.Mohammad Gauhar

وشاکھاپٹنم، 20 نومبر (یو این آئی) ہندوستانی کرکٹ ٹیم نے دوسرے کرکٹ ٹیسٹ کے چوتھے دن اتوار کو انگلینڈ کے سامنے جیت کے لیے 405 رنز کا بڑا ہدف رکھنے کے ساتھ دن کا کھیل مکمل ہونے تک مہمان ٹیم کے دونوں اوپنروں کو پویلین بھیج کر میچ پر گرفت مضبوط کر لی ہے ۔ ہندستان نے دوسری اننگز میں 204 رنز بنانے کے ساتھ کل 404 رنز کی برتری حاصل کی اور انگلینڈ کے سامنے جیت کے لیے 405 رنز کا ہدف دیا۔چوتھے دن کا کھیل مکمل ہونے تک ہدف کا پیچھا کر رہی مہمان ٹیم نے 59.2 اوور میں دو وکٹ کے نقصان پر 87 رنز بنا لئے ہیں اور وہ جیت سے ابھی 318 رنز پیچھے ہے جبکہ اس کے آٹھ وکٹ باقی ہیں۔اوپنر اور کپتان ایلیسٹیر کک اور حسیب حمید نے سنبھلتے ہوئے اننگز کا آغاز کیا اور پہلے وکٹ کے لئے 75 رن جوڑ ڈالے ۔لیکن آف اسپنر روی چندرن اشون نے حمید کو ایل بی ڈبلیو کر کے اس شراکت کو توڑا۔حمید نے 144 گیندوں میں تین چوکے لگا کر 25 رنز بنائے ۔دیر تک وکٹ پر ٹکے رہنے کی کوشش کر رہے کک بھی دن کا کھیل مکمل ہونے سے ٹھیک پہلے 54 رنز بنا کر دیگر اسپنر رویندر جڈیجہ کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہو گئے ۔کک نے 188 گیندوں میں چار چوکے لگائے ۔اشون کو 16 اوور میں 28 رن دے کر ایک اور جڈیجہ کو 22.2 اوور میں 25 رن پر ایک وکٹ ملا۔اس سے پہلے دن کے آغاز میں وراٹ کوہلی (81) کی کپتانی اننگز سے ہندوستان نے دوسری اننگز میں بلے بازوں کی مایوس کن کارکردگی کے باوجود انگلینڈ کے سامنے جیت کے لیے 405 رنز کا بڑا ہدف دیا۔انگلینڈ کے گیند بازوں اسٹورٹ براڈ اور عادل راشد نے چار چار وکٹ لے کر ہندستان کی دوسری اننگز کو لنچ سے پہلے 63.1 اوور میں 204 رن کے اسکور پر سمیٹ دیا۔ لیکن پہلی اننگز میں ملی 200 رن کی برتری کی بنیاد پر ہندوستان نے اپنی مجموعی برتری کو 404 رنز پہنچا کر مہمان ٹیم کے سامنے مشکل صورت حال پیدا کر دی۔ہندستان نے اپنی دوسری اننگز کی شروعات کل کے 98 رن پر تین وکٹ سے کی تھی۔اس وقت وراٹ کوہلی 56 اور اجنکیا رہانے 22 رنز بنا کر کریز پر تھے ۔وراٹ نے اپنے اسکور میں 25 رنز کا اضافہ اور کیا اور 109 گیندوں میں آٹھ چوکے لگا کر 81 رنز کی اننگز کھیلی۔ہندستانی کپتان کی یہ ٹیسٹ میں 13 ویں نصف سنچری بھی ہے ۔وہ اننگز میں سب سے زیادہ اسکور بنانے والے اکیلے بلے باز رہے جبکہ باقی کھلاڑیوں نے مایوس کیا۔رہانے کل کے اپنے اسکور میں چار رنز ہی جوڑ پائے تھے کہ بریڈ نے انہیں آ¶ٹ کرکے ہندوستان کو دن کا پہلا جھٹکا دیا۔رہانے نے 65 گیندوں میں دو چوکے لگا کر 26 رنز بنائے ۔ انہوں نے وراٹ کے ساتھ چوتھے وکٹ کے لئے 77 رن جوڑے ۔رہانے کا چوتھا وکٹ 117 کے اسکور پر گرا اور اس کے بعد ہندستان نے پھر مسلسل وقفے میں اپنے وکٹ گنوائے ۔اسکور میں 10 رنز کا ہی اضافہ ہوا تھا کہ پانچویں نمبر پر بلے بازی کے لیے روی چندرن اشون محض سات رنز بنا کر بریڈ کی گیند پر وکٹ کیپر جانی بیرسٹو کو کیچ تھما بیٹھے اور ہندستان کا پانچواں وکٹ بھی سستے میں گر گیا۔30 سالہ انگلینڈ کے درمیانے تیز گیند باز بریڈ نے اشون کو آ¶ٹ کرکے اننگز میں اپنا چوتھا وکٹ بھی حاصل کیا۔انہوں نے اس سے پہلے دونوں اوپنروں مرلی وجے (تین) اور لوکیش راہل (10) کو بھی آ¶ٹ کیا تھا جبکہ چوتھے دن صبح کے سیشن میں انہوں نے رہانے اور اشون کے اہم وکٹ نکالے ۔نچلے آرڈر میں اہم بلے باز ثابت ہونے والے اور پہلی اننگز کے نصف سنچری بنانے والے اشون نے 12 گیندوں میں ایک چوکا لگایا۔ہندستان اس جھٹکے سے نکل پاتا کی وکٹ کیپر بلے باز ردھمان ساہا دو رن بنا کر اسپنر راشد کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہو گئے اور چھٹا وکٹ بھی سستے میں گر گیا۔اگرچہ ایک اینڈ پر وراٹ ٹکے رہے اور انہوں نے ہمیشہ کی طرح اہم پوزیشن میں اپنی کپتانی اننگز جاری رکھی۔انگلینڈ کے لیے سب سے بڑا خطرہ وراٹ کا اہم وکٹ بھی راشد کے کھاتے میں آیا۔انگلش اسپنر راشد کی گیند کو کھیلنے کی کوشش کر رہے وراٹ کے بلے سے گیند ایج سے لگ کر اسٹوکس کے ہاتھوں میں پہنچی جنہوں نے زبردست طریقے سے کیچ لپکا اور ساتواں اور اہم وکٹ 151 کے اسکور پر گر گیا۔نچلے آرڈر کے بلے باز رویندر جڈیجہ نے 24 گیندوں میں ایک چوکا لگا کر 14 رنز بنائے اور راشد نے انہیں معین علی کے ہاتھوں کیچ کراکر اپنا تیسرا وکٹ حاصل کیا جبکہ سمیع کو نویں بلے باز کے طور پر صفر پر آ¶ٹ کرکے اپنے چار وکٹ پورے کئے ۔لیکن پھر جینت یادو اور محمد سمیع نے 10 ویں وکٹ کے لئے اہم 42 رن کی ساجھے داری کرکے ہندوستان کو 200 کے پار پہنچانے میں مدد کی۔سمیع نے 22 گیندوں میں ایک چوکا اور دو چھکے لگا کر 19 رنز بنائے جبکہ جینت نے 59 گیندوں میں چار چوکوں کی مدد سے ناقابل شکست 27 رنز بنائے ۔سمیع کو علی نے آخری بلے باز کے طور پر بیرسٹو کی مدد سے اسٹمپ کرا کر ہندستان کی دوسری اننگز سمیٹ دی۔انگلینڈ کی جانب سے بریڈ نے 14 اوورز میں 33 رنز دے کر چار وکٹ اور راشد نے 24 اوور میں 82 رن دے کر چار وکٹ حاصل کئے ۔جیمز اینڈرسن نے 15 اوور میں 33 رن پر ایک اور معین علی نے 3.1 اوور میں نو رن دے کر ایک وکٹ لیا۔انگلش اسپنر راشد نے تیسری بار اننگز میں چار وکٹ لئے ہیں جبکہ بریڈ نے کسی ٹیسٹ کی اننگز میں 14 ویں بار چار وکٹ حاصل کئے ہیں۔

About the author

Dr.Mohammad Gauhar

Chief Editor - Taasir