اردو | हिन्दी | English
275 Views
Appointment

چائے والا مودی اب پے ٹی ایم والا ہوگیا ہے :ممتا بنرجی

The Union Minister for Railways, Kumari Mamata Banerjee addressing at the Economic Editors’ Conference-2010, in New Delhi on October 27, 2010.
Written by Tariq Hasan

کولکاتا19دسمبر (یو این آئی)مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے مودی حکومت بہری ، گونگی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایک زمانے میں خود کو ”چائے والا ” کہنے والے نریندر مودی اب پے ٹی ایم والا بن گئے ہیں ۔مغربی بنگال کے بانکوڑہ ضلع میں ایک ریلی سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم مودی خود کو چائے والا کہتے تھے مگر اب وہی مودی کروڑ پتی ”پی ٹی ایم” والا بن گئے ہیں ۔نوٹ منسوخی پر نریندر مودی کی قیادت والی حکومت کی سخت تنقید کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے کہا کہ نوٹ بندی کی وجہ سے ملک کے عوام شدید مشکلات سے دو چار ہیں ۔انہوں نے کہا کہ کسی کو بھی یہ حق نہیں ہے کہ وہ لوگوں کو اپنی محنت کی کمائی کو مخصوص جگہ رکھنے کی ہدایت کریں ۔انہوں نے کہا کہ ڈکٹیٹ کرنے کا حق کسی کو بھی نہیں ہے ۔ممتا بنرجی نے کہا کہ مرکزی حکومت کونگی ، بہری اوراندھی ہوچکی ہے اسے پریشان حال عوام کی فکر بالکل نہیں ہے ۔مرکزی حکومت نے پورے ملک کو پریشانی میں مبتلا کردیا ہے ۔ممتا بنرجی نے کہا کہ مودی حکومت نے ملک کی صحیح صورت حال کا اندازہ لگانے کے بجائے چند کمپنیوں کو فائدہ پہنچانے کیلئے ایسا کیا ہے ۔نوٹ بندی کے بعد سے ہی ملک کے کروڑوں عوام مشکلات میں مبتلا ہیں مگر وزیر اعظم کو ملک کے حالات کا جائزہ لینے کی فرصت نہیں ہے ۔ممتا بنرجی نے ہزاروں کے مجمع سے سوال کیا کہ جب کہ نوٹ بندی سے عام آدمی کو فائدہ پہنچ رہا ہے تو پھر آج دوکاندار، کسان اور مزدور پریشان حال کیوں ہیں ؟۔ممتا بنرجی نے کہا کہ ہم کسی بھی صورت میں عوام کے خون پسینے کی قربانی کے بدلے کارپوریٹ سے کمیشن لینے نہیں دیں گے ۔نوٹ بندی کے خلاف وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی مسلسل احتجاج کررہی ہیں ۔انہوں نے دہلی، لکھنو اور بہار میں احتجاج اور عوامی ریلی سے خطاب کیا ہے ۔
دوسری جگہ ایک بیان ممتا بنرجی نے مودی حکومت کی تنقید کرتے ہوئے آج کہا ہے کہ نوٹ بندی کی وجہ سے عوام ”فقیر” ہورہے ہیں مگراس کا احساس کرنے میں مرکزی حکومت ناکام ہوچکی ہے ۔ممتا بنرجی نے بانکوڑہ ضلع میں ایک ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وینزوئیلا کی حکومت نے بھی نوٹ منسوخی کا فیصلہ کیا مگر عوام کی پریشانیوں کا احساس کرتے ہوئے اس فیصلے کو واپس لے لیا ۔مگر مودی حکومت کسی کے درد اور تکلیف کو محسوس کرنے کو تیار نہیں ہیں۔عام آدمی مشکلات سے دو چار ہے مگر ہمیں وہ اس کی جانب توجہ دینے اور لوگوں کی پریشانی کو محسوس کرنے کو تیار نہیں ہیں ۔مگر ملک کے عوام انہیں سبق ضرور سکھلائے گی۔ممتا بنرجی نے کہا کہ لوگ اپنے روپے کو نہیں نکال پارہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ڈیجیٹل کے نام پر لوگوں کو فقیر بنایا جارہا ہے ۔کیا کوئی گرانٹی دے سکتا ہے کہ ڈیجیٹل میں ان کا روپیہ محفوظ ہے ۔ممتا بنرجی نے کہا کہ حکومت کہہ رہی ہے فلاں ایپ لوڈ کرو اور فلاں موبائل خریدیں مگر ہم سب کو اس سے ہوشیار رہنا ہوگا ۔ممتا بنرجی نے کہا کہ اب مودی خود کو فقیر کہہ رہے ہیں ۔ایک زمانے میں وہ حود کو چائے والا کہتے تھے مگر وزیر اعظم بننے کے بعد اب وہ کروڑ پتی بن گئے ہیں ۔کیا فقیر مطلب کروڑ پتی ہوتا ہے ۔

About the author

Tariq Hasan