آج کا شماره | اردو | हिन्दी | English
Sports

آسٹریلیا کی 220 رن سے شاندار جیت

the-ashes-steve-smith-white-s_3325483
Written by Tariq Hasan

سڈنی، 7 جنوری (یو این آئی) جوش ھیزل ووڈ (29 رن پر تین وکٹ) اور اسٹیو او کیف (53 رن پر تین وکٹ) کی شاندار گیند بازی کی بدولت آسٹریلیا نے پاکستان کو یہاں تیسرے کرکٹ ٹیسٹ کے پانچویں اور آخری دن ہفتہ کو دوسری اننگز میں 244 رن پر سمیٹ کر نہ صرف 220 رنوں سے جیت حاصل کی بلکہ مہمان ٹیم کا سیریز میں تین صفر سے صفایا کردیا۔ہیزل ووڈ نے 18.2 اوور میں 29 رن دے کر اور کیف نے 17 اوور میں 53 رن دے کر تین وکٹ لئے ۔ پہلی اننگز میں شاندار ناٹ آوٹ 175 رن کی شاندار اننگز کھیلنے والے یونس خان سے دوسری اننگز میں بھی بڑے اسکور کی توقع تھی لیکن وہ اس اننگز میں کوئی خاص کارنامہ انجام نہیں دے پائے اور محض 13 رن بنا کر ناتھن لیون کا شکار ہو گئے ۔یونس اس طرح ٹیسٹ کرکٹ میں اپنے 10000 رن مکمل کرنے سے بھی چوک گئے ۔ ان کے اب 9977 رنز ہیں۔465 رن کے ہدف کا تعاقب کرتے ہوئے پاکستان نے چوتھے دن کا کھیل ختم ہونے تک 55 رنوں پر ایک وکٹ گنوا دیا تھا۔پانچویں دن صبح اظہر علی نے 11 اور یاسر شاہ نے تین رن سے آگے کھیلنا شروع کیا۔پاکستان کے بلے باز پر بڑے ہدف کا دبا¶ صاف نظر آرہا تھا اور لنچ تک مہمان ٹیم نے چار وکٹ اور گنوا دیے تھے ۔پہلے سیشن کا کھیل ختم ہونے کے بعد پاکستان 128 رنز پر پانچ وکٹ گنوا کر میچ بچانے کے لیے جدوجہد کر رہی تھی۔پہلی اننگز میں سنچری لگانے والے یونس تاہم آ¶ٹ ہو گئے تھے لیکن کپتان مصباح الحق 30 اور اسد شفیق 23 رنز بنا کر شکست کو ٹالنے کیلئے مسلسل جدوجہد کر رہے تھے ۔لنچ کے بعد شفیق 136 رن پر پویلین لوٹ گئے ۔اس کے بعد مصباح اور سرفراز کے درمیان ساتویں وکٹ کے لیے 52 رنوں کی سب سے بڑی شراکت ہوئی۔مصباح نے 38 رن بنائے جبکہ سرفراز 72 رن پر ناٹ آ¶ٹ رہے ۔ سرفراز نے 70 گیندوں کی اپنی تیز اننگز میں آٹھ چوکے اور ایک چھکا لگایا۔پاکستان کی طرف سے خاص بات یہ رہی کہ تمام بلے بازوں نے جم کر کھیلنے کی بھرپور کوشش کی اس کے باوجود بھی وہ اپنے وکٹ گنواتے چلے گئے ۔پاکستان کے لیے اظہر علی نے 11، شرجیل خان نے 40، یاسر شاہ نے 13، بابر اعظم 9، یونس خان نے 13، مصباح نے 38، اسد شفیق نے 30، اور وہاب ریاض نے 12 رن بنائے ۔ پاکستان کی پوری ٹیم 80.2 اوور میں 244 رن پر سمٹ گئی اور مہمان ٹیم نے یہ مقابلہ 220 رنز سے گنوا دیا۔ آسٹریلیا کی جانب سے ھیزل ووڈ اور کیف کے تین تین وکٹوں کے علاوہ لیون نے دو اور مشیل اسٹارک نے ایک وکٹ لیا۔میچ کے پانچویں روز پاکستان نے اپنی نامکمل اننگز دوبارہ شروع کی تو پہلے ہی اوور میں اظہر علی کو آ¶ٹ کر کے آسٹریلیا نے جیت کی بنیاد رکھی۔بابر اعظم تواقعات کے باوجود ایک بار پھر ناکام ہوئے اور 9 رنز بنانے کے بعد آ¶ٹ ہوئے ۔پاکستان کو سب سے بڑا دھچکا اس وقت لگا جب یونس خان 13 رنز بنانے کے بعد ناتھن لیون کو وکٹ دے بیٹھے ۔یاسر شاہ نے 93 گیندیں کھیل کر نائٹ واچ مین کردار بخوبی ادا کیا اور جب وہ پویلین لوٹے تو 96 رنز پر آدھی پاکستانی ٹیم آ¶ٹ ہو چکی تھی۔اسد شفیق نے کپتان مصباح الحق کے ساتھ مل کر 136 رنز بنائے لیکن مچل اسٹارک نے وکٹیں بکھیر کر ان کی پیش قدمی روک دی۔سرفراز احمد اور مصباح الحق نے ساتویں وکٹ کیلئے 52 رنز جوڑے لیکن پہلی اننگز میں غیر ضروری شاٹ کھیلنے والے پاکستان کے کپتان نے اپنی غلطی دہراتے ہوئے اسٹیو او کیف کو وکٹ تحفتاً پیش کی۔
سرفراز احمد آسٹریلین بلے بازوں کے خلاف ڈٹ گئے لیکن دوسرے اینڈ سے کوئی بھی کھلاڑی ان کا ساتھ نبھانے پر تیار نہ ہوا اور پوری ٹیم 244 رنز بنا کر آ¶ٹ ہو گئی، سرفراز نے 75 رنز بنائے اور آ¶ٹ نہیں ہوئے ۔یہ آسٹریلین سرزمین پر پاکستان کو لگاتار چوتھا وائٹ واش اور 12ویں مسلسل شکست ہے ۔ آسٹریلین اوپنر ڈیوڈ وارنر کودونوں اننگز میں جارحانہ بیٹنگ پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا جبکہ آسٹریلین کپتان پوری سیریز میں اپنی ٹیم کی بہترین قیادت اور ذمہ دارانہ بیٹنگ پر بہترین کھلاڑی کے ایوارڈ کے مستحق قرار پائے ۔

About the author

Tariq Hasan