اردو | हिन्दी | English
389 Views
Sports

اب تینوں فارمیٹس میں ڈی آرایس

ICC_LOGO_6_FC
Written by Tariq Hasan

نئی دہلی، 06 فروری (یو این آئی) بین الاقوامی کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے کرکٹ کے تینوں فارمیٹس ٹیسٹ، ون ڈے اور ٹوئنٹی 20 میں اب یکساں امپائر کے فیصلے کا جائزہ نظام ( ڈ¸ آرایس) کے استعمال کو اپنی ہری جھنڈی دے دی ہے جو اکتوبر ماہ سے لاگو ہوگا ۔
آئی سی سی کی دبئی میں ہوئی دو روزہ ایگزیکٹو افسران کی میٹنگ میں ان تجاویز پر بحث کے بعد انہیں منظوری دے دی گئی ہے ۔ساتھ ہی یہ پہلا موقع ہوگا جب ویسٹ انڈیز میں 2018 میں ہونے والے آئی سی سی ٹوئنٹی 20 خاتون ورلڈ کپ ٹورنامنٹ میں بھی ڈ¸ آرایس استعمال کیا جائے گا جہاں ہر ٹیم کو ایک جائزے کا موقع دیا جائے گا۔
گذشتہ ہفتے ہوئی اس میٹنگ میں اس بات کی بھی تجویز پیش کی گئی کہ دو طرفہ سیریز میں بھی آئی سی سی ہی ڈ¸ آرایس کا خرچہ برداشت کرے گی جس سے رکن بورڈز پر مالی بوجھ کم ہوگا۔ عالمی ادارے کی مئی میں ہونے والی کرکٹ کمیٹی کی میٹنگ میں اس سے منسلک اور تفصیلی تجاویز رکھی جائیں گی اور پھر جون میں لندن میں ہونے والی سالانہ میٹنگ میں اس پر آخری مہر لگے گی۔
آئی سی سی نے صاف کیا ہے کہ جو بھی ادارے ڈ¸ آرایس ٹیکنالوجی مہیا کرائیں گے ان سے پہلے میسا چوسٹس ٹیکنالوجی انسٹی ٹیوٹ (ایم ائی ٹی) سے پہلے اس کی جانچ اور رضامندی حاصل کرنا بھی لازمی ہوگا اور اس کے بعد ہی میچوں میں اس کا استعمال کریں گے ۔گذشتہ سال ڈ¸ آرایس میں استعمال کی جانے والی ٹیکنالوجی ہاک آئی ، بیبس اسپاٹ، الٹرا ایج، ریئل ٹائم سنکو کی بھی ایم آئی ٹی میں تحقیقات کرائی گئی تھی۔
ڈ¸ آرایس کا استعمال اب بڑے پیمانے پر نہ ہونے کی وجہ اس ٹیکنالوجی کا مہنگا ہونا بھی ہے جس کے پیش نظر اب آئی سی سی نے اس کا مالی بوجھ اٹھانے کا فیصلہ بھی کیا ہے ۔آئی سی سی کے چیف ایگزیکٹو ڈیوڈ رچرڈسن نے بھی مانا کہ عالمی ادارے کے لیے ڈ¸ آرایس پر زیادہ کنٹرول ضروری ہے ۔
دو طرفہ سیریز میں عام طور پر گھریلو براڈکاسٹر ہی ڈ¸ آرایس کے استعمال کے لئے خرچہ برداشت کرتا ہے ، اور بعض صورتوں میں گھریلو کرکٹ بورڈ بھی اس خرچ میں اپنا کچھ حصہ ہے یا مکمل خرچہ برداشت کرتا ہے ۔تاہم سی ای سی کمیٹی نے اب یہ فیصلہ لیا ہے کہ آئی سی سی میچ کے روزانہ ڈ¸ آرایس کے استعمال کے لئے مقررہ رقم ادا کرے گی۔عالمی ادارے کا یہ فیصلہ بنیادی طور پر ڈ¸ آرایس کے استعمال کو بڑھانے کے مقصد سے لیا گیا ہے ۔
آئی سی سی نے کہا کہ ایگزیکٹو کمیٹی نے ڈ¸ آرایس ٹیکنالوجی کو بین الاقوامی کرکٹ میں استعمال کرنے کے فیصلے پر اتفاق کیا ہے ۔مئی میں آئی سی سی کی کرکٹ کمیٹی اس کے مکمل طور پر استعمال پر بحث کرے گی اور جون 2017 میں اس پر حتمی فیصلہ لیا جائے گا جس کے بعد اسی سال اکتوبر میں اس کا اطلاق کیا جائے گا۔سی ای سی نے ڈ¸ آرایس کے استعمال کو لے کر ایک اور اہم فیصلہ لیا ہے جس کے مطابق پہلی بار ٹوئنٹی 20 بین الاقوامی میچوں میں بھی پہلی بار اس نظام کو استعمال کیا جائے گا۔سال 2018 میں ویسٹ انڈیز میں ہونے والے خاتون ٹوئنٹی 20 ورلڈ کپ میں بھی پہلی بار اس ٹیکنالوجی کا استعمال کریں گے ۔یہ اس ٹیکنالوجی کے ساتھ آئی سی سی کا اس شکل میں پہلا ٹورنامنٹ ہو گا ۔وہیں کئی رکن ممالک کے بورڈز نے بھی ٹوئنٹی 20 بین الاقوامی دو طرفہ سیریز میں ڈ¸ آرایس کے استعمال کو لے کر آئی سی سی سے اپیل کی ہے ۔
گذشتہ ماہ انگلینڈ کے خلاف ہندوستان میں تین ٹوئنٹی 20 میچوں کی سیریز میں بھی اس معاملے پر بحث کی گئی تھی۔ناگپور میں جو روٹ کے ایل بی ڈبلیو فیصلے کو لے کر دوسرے میچ کے بعد انگلینڈ نے آئی سی سی میچ ریفری سے اس بارے میں تحریری شکایت کی تھی۔انگلینڈ کے کپتان ایون مورگن نے اس دوران ڈ¸ آرایس نہ ہونے کا حوالہ دیا تھا۔
سی ای سی نے رکن بورڈز کے ساتھ ٹوئنٹی 20 دو طرفہ سیریز میں ڈ¸ آرایس کے استعمال کو لے کر بھی اجلاس میں بات چیت کی۔حالانکہ ابھی تک عالمی ٹوئنٹی 20 کے بعد اس فارمیٹ میں ڈ¸ آرایس کے استعمال کو لے کر کوئی تفصیلی بحث نہیں ہوئی ہے ۔اس بارے میں مئی میں ہی حتمی فیصلہ متوقع ہے ۔آئی سی سی نے ساتھ ہی بتایا کہ جون میں چمپئنز ٹرافی میں بھی ڈ¸ آرایس کو استعمال کیا جائے گا۔

About the author

Tariq Hasan