اردو | हिन्दी | English
571 Views
Sports

بنگلہ دیش فالو آن ٹالنے کیلئے کو شاں

258974 (1)
Written by Tariq Hasan

حیدرآباد، 11 فروری (یواین آئی) بنگلہ دیش نے شکیب الحسن (82)، کپتان مشفق الرحیم (ناٹ آوٹ 81) اور مہدی حسن معراج (ناٹ آوٹ 51) کی نصف سنچری سے ہندوستان کے خلاف واحد ٹیسٹ کے تیسرے دن ہفتہ کو جدوجہد کرتے ہوئے چھ وکٹ کے نقصان پر 322 رنز بنا لئے اور ابھی اسے فالو آن سے بچنے کیلئے ابھی 165 رن درکار ہے ۔ بنگلہ دیش کے چار وکٹ محفوظ ہیں اور میچ میں چوتھے دن صبح کا کھیل بہت فیصلہ کن رہے گا۔ کپتان مشفق ناٹ آ¶ٹ 81 رن اور مہدی حسن ناٹ آ¶ٹ 51 رن بنا کر کریز پر جمے ہوئے ہیں۔ دونوں نے ساتویں وکٹ کی ناٹ آوٹ ساجھے داری میں 87رن کا اضافہ کر کے بنگلہ دیش کو چھ وکٹ پر 235 رن سے باہر نکال لیا۔ ہندوستانی ٹیم نے کل اپنی پہلی اننگز چھ وکٹ پر 687 رنز بنا کر ڈکلئر کی تھی۔دن کا آغاز بنگلہ دیشی ٹیم کے لئے اچھا نہیں رہا اور اس نے لنچ تک اپنے چار وکٹ گنوا دیے تھے لیکن تیسرے دن کے کھیل میں شکیب الحسن نے 82 رن، مشفق نے ناٹ آ¶ٹ 81 رن اور مہدی حسن نے ناٹ آ¶ٹ 51 رن کی نصف سنچری اننگز سے ٹیم کو کچھ حد تک سنبھال لیا، لیکن بنگلہ دیش پر ابھی خطرہ برقرار ہے ۔ شکیب اور کپتان مشفق نے 27.3 اوور میں پانچویں وکٹ کے لئے 107 رن کی سنچری شراکت قائم کی۔ہندوستانی سر زمین پر پہلی بار ٹیسٹ کھیل رہی بنگلہ دیش نے صبح کی پہلی اننگز کو 41 رن پر ایک وکٹ سے آگے بڑھایا۔اس وقت تمیم اقبال 24 رن اور مومن الحق ایک رن بنا کر کریز پر تھے ۔ تمیم اپنے کل کے اسکور میں کوئی اضافہ نہیں کر سکے جبکہ مومن محض 12 رن بنا کر امیش یادو کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہو گئے ۔ تمیم رن آوٹ ہوئے ۔ اس کے بعد محمود اللہ 28 رن بنا کر ایشانت کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہو گئے ۔ لنچ تک بنگلہ دیش کی ٹیم محض 109 رنز ہی جوڑ سکی تھی جبکہ اس نے اپنے چار اہم وکٹ گنوا دیے ۔صبح کے سیشن میں جس طرح بنگلہ دیش کے چار وکٹ گرے اس سے ایک بار تو لگا کہ ٹیم کو سمٹنے میں زیادہ وقت نہیں لگے گا لیکن تجربہ کار شکیب اور مشفق نے پانچویں وکٹ کے لیے 105 رن کا اضافہ کر کے ہندوستانی گیند بازوں کا انتظار بڑھا دیا۔شکیب الحسن نے اپنے 50 رن 69 [؟][؟]گیندوں میں 10 چوکوں کی مدد سے مکمل کئے ۔ انہوں نے کافی بہترین بلے بازی کی اور ہندوستانی اور اسپن گیند بازوں کو حاوی ہونے کا موقع نہیں دیا۔ شکیب اپنی پانچویں ٹیسٹ سنچری کی طرف گامزن تھے کہ تبھی تجربہ کار آف اسپنر روی چندرن اشون نے انہیں ایک غلط شاٹ کھیلنے کے لیے مجبور کیا اور امیش یادو نے مڈ آن پر ان کا آسان کیچ حاصل کرلیا۔ شکیب مایوس ہوکر پویلین کی طرف چلے گئے ۔ اشون کا یہ 249 واں وکٹ تھا اور وہ سب سے تیز 250 وکٹ حاصل کرنے کا عالمی ریکارڈ بنانے سے اب ایک قدم دور ہیں۔ اشون نے اپنے 245 ویں ٹیسٹ میں 249 وکٹ حاصل کئے ہیں۔ اس وکٹ کو چھوڑ کر اشون کو 24 اوور میں 77 رن دے کر کوئی اور وکٹ نہیں ملا۔ اشون انگلینڈ کے خلاف گزشتہ سیریز میں مین آف دی سیریز رہے تھے ۔بنگلہ دیش کا پانچواں وکٹ 216 کے اسکور پر گرا۔ لیفٹ آرم اسپنر رویندر جڈیجہ نے شبیر رحمان (16) کو ایل بی ڈبلیو کرکے بنگلہ دیش کو چھٹا جھٹکا دیا۔ بنگلہ دیش کا چھٹا وکٹ 235 کے اسکور پر گرا تب مہمان ٹیم کی اننگز کا 72 واں اوور چل رہا تھا. لیکن اس کے بعد 31.5 اوور میں ہندوستانی گیند بازوں کو پھر کوئی وکٹ نہیں مل پایا۔ہندوستانی کپتان وراٹ کوہلی نے 81 ویں اوور میں دوسری نئی گیند لی لیکن ہندوستانی گیندباز کوئی اثر نہیں چھوڑ پائے ۔ مشفق نے اس سے پہلے اپنی نصف سنچری 133 گیندوں میں چھ چوکوں کی مدد سے مکمل کی۔ بنگلہ دیش کے 300 رنز 96.2 اوور میں پورے ہوئے ۔ معراج کے 50 رن 102 گیندوں میں 10 چوکوں کی مدد سے بنے ۔ دن کے اختتام تک بنگلہ دیش کا اسکور 322 رنز تک پہنچ چکا تھا۔ بنگلہ دیش نے جس طرح کی جدوجہد دکھائی وہ یقینی طور پر قابل تعریف تھی۔ مشفق 206 گیندوں پر ناٹ آ¶ٹ 81 رنز میں 12 چوکے اور معراج 103 گیندوں پر ناٹ آ¶ٹ 51 رنز میں 10 چوکے لگا چکے ہیں۔ امیش یادو 18 اوور میں 72 رن پر دو وکٹ لے کر سب سے کامیاب رہے ۔ ایشانت کو 16 اوور میں 54 رن پر ایک وکٹ، اشون کو 24 اوور میں 77 رن پر ایک وکٹ اور جڈیجہ کو 29 اوور میں 60 رن پر ایک وکٹ ملا۔

About the author

Tariq Hasan