اردو | हिन्दी | English
385 Views
Sports

بولٹ اور سمون کو کھیلوں کے آسکر

Glasgow 2014 XX Commonwealth Games...Commonwealth Games - Glasgow 2014 XX Commonwealth Games - Glasgow, Scotland - 26/7/14
 Jamaica's Usain Bolt during a press conference
 Mandatory Credit: Action Images / Paul Harding
 Livepic
 EDITORIAL USE ONLY.
Written by Tariq Hasan

موناکو، 15 فروری ( یو این آئی) دنیا کے سب سے تیز دوڑنے والے یوسین بولٹ نے کرسٹیانو رونالڈو اور لیبرن جیمز جیسے مایہ ناز کھلاڑیوں کو پیچھے چھوڑتے ہوئے بہترین کھلاڑی کا لاریس ایوارڈ چوتھی بار اپنے نام کیا جبکہ خواتین کے زمرے میں جمناسٹ سمون بالس اس ایوارڈ کی فاتح بنیں۔ موناکو میں منعقد ہوئے لاریس عالمی ایوارڈ تقریب نے جمائکا کے رنر اور مسلسل تین بار کے اولمپک چیمپئن بولٹ نے ریکارڈ چوتھی بار سال کے بہترین کھلاڑی کا ایوارڈ اپنے نام کیا۔ جہاں ایک طرف بولٹ 1.95 میٹر لمبے ہیں تو وہیں امریکی جمناسٹ لمبائی میں محض 1.45 میٹر ہیں۔لیکن دونوں کھلاڑیوں نے ریو اولمپکس میں اپنی شاندار کارکردگی سے طلائی تمغے جیتے ۔ بولٹ نے سال 2009، 2010 اور 2013 میں بھی لاریس ایوارڈ جیتے تھے ۔اس سے پہلے سوئٹزرلینڈ کے راجر فیڈرر اور امریکی ٹینس کھلاڑی سرینا ولیمز اور سرفر کے کیلی سلیٹر نے کھیلوں کے آسکر کہے جانے والے لاریس ایوارڈ چار چار بار جیتے ۔ بولٹ کو عظیم کھلاڑی مائیکل جانسن نے نوازا اور ساتھ ہی دوسروں کے ریکارڈ نہیں توڑنے کا بھی مشورہ دیا۔ بولٹ نے پھر مذاق میں کہا “مجھے معاف کیجئے میں نے اپنا ریکارڈ توڑ دیا.” انہوں نے کہا “مجھے اس اعزاز کے لیے شکریہ. لاریس میرے لئے دنیا کا سب سے بڑا اعزاز ہے ۔یہ میرا چوتھا ایوارڈ ہے اور میں نے اس معاملے میں فیڈرر جیسے عظیم کھلاڑی کی برابری کر لی ہے . میں اب اچھے لوگوں کے زمرے میں شامل ہوں۔ یہ میرے لیے بہت خاص ہے ۔” ریو اولمپکس میں چار طلائی اور ایک کانسے کا تمغہ جیتنے والی اولمپک جمناسٹ چیمپئن بائلس کو سب سے بہترین خاتون کھلاڑی کا اعزاز ملا. انہوں نے کہا “واہ، میرے پاس الفاظ نہیں ہیں، میرے لئے پرنس البرٹ ایر نادیہ کوماس¸ سے یہ اعزاز ملنا اچھا تجربہ ہے ۔ یہ اعزاز میرے لیے ہی نہیں بلکہ میرے زمرے کے باقی نامزد امیدواروں کے لیے بھی ہیں۔ ” انہوں نے کہا “میں نے یہاں تک پہنچنے کے لئے بہت کچھ کیا ہے ۔ میں نے بہت کچھ حاصل کر لیا ہے ۔ اس کیلئے آپ سب کا شکریہ. “اس کے علاوہ امریکی تیراک اور اولمپین مائیکل فلپس کو ‘کم بیک آف دی ایئر کا اعزاز دیا گیا۔ سال 2012 میں ریٹائرمنٹ کے بعد دوبارہ واپسی کرنے والے فیلپس نے گزشتہ سال ریو اولمپکس میں پانچ طلائی جیتے تھے ۔
امریکی تیراک نے کہا “میں جب اپنے کیریئر کو پیچھے مڑ کر دیکھتا ہوں تو مجھے لگتا ہے کہ ریو میرے سب سے عظیم اولمپکس تھے .” وہیں فارمولا ون چیمپئن نیکو روسبرگ کو برے کتھرو آف دی ایئر ایوارڈ ملا. دیگر زمروں میں اٹلی کے تلوار باز راس ویو کو ڈیسبل ایوارڈ اور اولمپک پناہ گزین ٹیم کو کھیلوں میں انسپائریشن ایوارڈ سے نوازا گیا۔

About the author

Tariq Hasan