260496 2

آسٹریلیا نے دکھا یا دم ، رانچی ٹسٹ ڈرا

رانچی، 20 مارچ (یو این آئی) پیٹر ھیڈاسکمب (ناٹ آ¶ٹ 72) اور شان مارش (53) کی پر جدو جہداننگز کی بدولت آسٹریلیا نے ہندستان کے خلاف تیسرے ٹیسٹ کو ڈرا کرا لیا۔ آسٹریلیا نے پانچویں اور آخری دن میچ ڈرا ختم ھونے تک دوسری اننگز میں 100 اوور میں چھ وکٹ پر 204 رنز بنائے اور ٹیم انڈیا کی برتری حاصل کرنے کی امیدوں پر پانی پھیر دیا ۔تیسرا ٹیسٹ ڈرا ختم ھونے کے بعد اب دونوں ٹیمیں اب 1۔1کی برابری پر ہیں۔سیریز کا فیصلہ اب دھرم شالہ میں 25 مارچ سے ہونے والے چوتھے اور آخری ٹیسٹ سے ہوگا۔اگر ہندستان دھرم شالہ میں جیت حاصل کرتا ہے تو وہ گواسکر۔بارڈر ٹرافی پر قبضہ کر سکے گا لیکن اگر آسٹریلیا جیتا یا میچ ڈرا کرا گیا تو گواسکر۔بارڈر ٹرافی اس کے قبضے میں ہی رہے گی۔ہندستان کو رانچی ٹیسٹ جیتنے کی پوری امید تھی جب اس نے صبح کے سیشن میں آسٹریلوی کپتان اسٹیون اسمتھ سمیت لنچ تک مہمان ٹیم کے چار وکٹ 83 رن تک گرا دیے تھے ۔ لیکن مارش اور ھیڈاسکمب نے پر جدوجہدمظاہرہ کرتے ہوئے پانچویں وکٹ کیلئے 124 رنز کی قیمتی شراکت کر کے میچ کو ڈرا کی جانب دھکیل دیا۔سال 2010۔11 کے بعد یہ پہلا موقع ہے جب کسی مہمان ٹیم نے ہندستان میں پہلی اننگز میں پچھڑنے کے بعد میچ ڈرا کرا لیا۔میچ ڈرا کرانے کا کریڈٹ پوری طرح دو بلے بازوں کو جاتا ہے جنہوں نے صبر و تحمل اور ضبط کا نمونہ پیش کرتے ہوئے ہندستانی گیند بازوں کو حاوی ہونے سے روک دیا۔مارش نے 197 گیندیں کھیل کر 53 رنز میں سات چوکے لگائے جبکہ ھیڈاسکمب نے 200 گیندیں کھیل کر ناٹ آ¶ٹ 72 رنز میں سات چوکے لگائے ۔مارش اور ھیڈاسکمب کے درمیان پانچویں وکٹ کے لیے 124 رنز کی شراکت 62.1 اوور میں بنی۔اسی حقیقت سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ دونوں بلے بازوں نے اپنا وکٹ بچائے رکھنے کے لئے کتنی زبردست جدوجہد کی۔ہندستانی کپتان وراٹ کوہلی نے تمام کوششیں کیں لیکن اس شراکت کو توڑنے میں انہیں ناکامی ہاتھ لگی۔لیفٹ آرم اسپنر رویندر جڈیجہ نے 92 ویں اوور میں جب مارش کو آ¶ٹ کر اس شراکت کو توڑا تب تک بہت دیر ہو چکی تھی۔مارش کا وکٹ 187 کے اسکور پر گرا۔دوسری اننگز میں اپنے پہلے وکٹ کے لئے ترس رہے آف اسپنر روی چندرن اشون کو تین رنز بعد ہی آخر کامیابی ہاتھ لگ گئی جب انہوں نے گلین میکسویل (دو) کو مرلی وجے کے ہاتھوں کیچ کرا دیا۔وجے نے ہی مارش کا کیچ بھی لپکا۔میکسویل کا جب وکٹ گرا تو آسٹریلوی اننگز کا 95 واں اوور چل رہا تھا اور 100 سے زائد پورے ہوتے ہی دونوں کپتان نے ڈرا کے لئے اتفاق کیا ۔ یہ ٹیسٹ میچ ڈرامائی اتار چڑھاو سے بھرپور رہا جس میں ہندستانی ٹیم نے اپنا دبدبہ تو بنایا لیکن آخری دن کے آخری دو سیشن میں ٹیم انڈیا آسٹریلیا کے عزم میں نقب نہیں لگا پائی۔ہندستان کے لیے میچ میں سب سے زیادہ کامیاب بولر رہے جڈیجہ نے دوسری اننگز میں 44 اوور میں 18 میڈن رکھتے ہوئے محض 54 رنز دیے اور چار وکٹ حاصل کئے ۔جڈیجہ نے اس طرح میچ میں کل نو وکٹ لئے ۔انہوں نے پہلی اننگز میں 49.3 اوورز میں 124 رنز پر چار وکٹ لئے تھے ۔جڈیجہ نے ہی ہندستان کو صبح اہم کامیابیاں دلائی۔جڈیجہ نے حریف کپتان اسمتھ اور تیز گیند باز ایشانت شرما نے میٹ رینشا کے طور پر اہم وکٹ نکال کر آسٹریلیا کو بحران میں ڈال دیا۔ آسٹریلیا نے صبح میچ کے ابتدائی ایک گھنٹے تک کوئی وکٹ گرنے نہیں دیا اور کل کے دوسری اننگز میں 23 رنز پر دو وکٹ سے آگے اپنی اننگز کو کنٹرول طریقے سے آگے بڑھایا۔ناٹ آ¶ٹ بلے باز رینشا نے سات رن سے آگے کھیلنا شروع کیا اور دوسرے اینڈ پر کپتان اسمتھ نے ان کے ساتھ اننگز کو آگے بڑھایا۔دونوں بلے بازوں نے تیسرے وکٹ کے لئے 21.2 اوور میں 36 رنز کی شراکت کی ۔اگرچہ پھر سے کافی فٹ دکھائی دے رہے کپتان وراٹ کوہلی گیند بازوں کا حوصلہ بڑھاتے رہے ۔ہندستان کو دن کا پہلا وکٹ نکالنے کیلئے 21 اوور کا طویل انتظار کرنا پڑا۔لیکن دہلی کے ایشانت نے 29 ویں اوور میں رینشا کو ایل بی ڈبلیو کر آسٹریلیا کو 59 رنز کے معمولی اسکور پر تیسرا جھٹکا دے دیا۔رینشانے 84 گیندوں کی اننگز میں ایک چوکا لگا کر 15 رنز بنائے ۔اس کے اگلے اوور کی پہلی ہی گیند پر جڈیجا نے پہلی اننگز کے سنچری میکر اسمتھ (21) کو بولڈ کر کے ہندستان کو اہم وکٹ دلا دیا۔جڈیجہ کی مڈل اسٹمپ پر پڑی گیند پر اسمتھ نے اپنا بیٹ ہوا میں اٹھا دیا اور گیند ٹرن لے کر ان کا آف اسٹمپ لے اڑی۔اسمتھ بولڈ ہونے کے بعد کچھ دیر تو حیران رہ گئے جبکہ ہندستانی خیمے میں جشن کا ماحول ہوگیا۔جڈیجہ نے اسمتھ کو اسی انداز میں بولڈ کیا جس طرح انہوں نے ناتھن لیون کو کل بولڈ کیا تھا۔ ہندستان اور آسٹریلیا کے درمیان موجودہ سیریز میں چل رہی کشیدگی کے مرکز اسمتھ دوسری اننگز میں دبا¶ میں آ گئے اور 68 گیندوں میں دو چوکے لگا کر 21 رنز ہی بنا پائے ۔دنیا کے نمبر ایک بلے باز نے پہلی اننگز میں ناٹ آ¶ٹ 178 رنز بنائے تھے ۔آسٹریلیا کا چوتھا وکٹ 63 کے اسکور پر گرا۔لنچ کے وقت مارش 15 اور ھیڈاسکمب چار رن پر ناٹ آ¶ٹ تھے ۔دونوں نے لنچ کے بعد دوسرے سیشن میں سست بلے بازی کرتے ہوئے 66 رن جوڑے ۔چائے کے وقفہ کے وقت آسٹریلیا کا اسکور چار وکٹ پر 149 رنز تک پہنچ چکا تھا۔ تب مارش 38 اور ھیڈاسکومب 44 رنز بنا چکے تھے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں