BENGALURU, MAR 5 :- India's Ravindra Jadeja (2nd R) celebrates the wicket of Australia's Matt Renshaw with team mates during Second Test cricket match between India v/s Australia at the M Chinnaswamy Stadium, Bengaluru, India - 05/03/17.  REUTERS-15R 2

آسٹریلیا کو 48 رنز کی برتری، ہندوستان دبا میں

بنگلور، 05 مارچ (یو این آئی) میٹ رینش (60) اور شان مارش (66) کی نصف سنچری اننگز سے آسٹریلوی کرکٹ ٹیم نے یہاں ایم چنا سوامی اسٹیڈیم میں کھیلے جا رہے دوسرے کرکٹ ٹسٹ کے دوسرے دن اتوار کو دن کا کھیل ختم ہونے تک چار وکٹ باقی رہتے اپنی پہلی اننگز میں 48 رنز کی اہم برتری حاصل کرکے میزبان ہندستانی ٹیم کو دبا¶ میں ڈال دیا۔آسٹریلوی ٹیم نے دوسرے دن کا کھیل ختم ہونے تک 106 اوورز میں چھ وکٹ کے نقصان پر 237 رنز بنا لئے ہیں۔اسے پہلی اننگز میں 48 رنز کی برتری مل گئی ہے اور اس کے ابھی چار وکٹ محفوظ ہیں۔وکٹ کیپر بلے باز میتھیو ویڈ 25 رنز اور مشیل اسٹارک 14 رنز بنا کر ناٹ آ¶ٹ کریز پر ڈٹے ہوئے ہیں۔مہمان ٹیم کی اننگز میں دوسرے دن رینش نے 196 گیندوں میں پانچ چوکے اور ایک چھکا لگا کر 60 رنز اور شان نے 197 گیندوں میں چار چوکے لگا کر 66 رنز کی نصف سنچری اننگز کھیلی۔تاہم پہلی اننگز میں 189 رنز پر ڈھیر ہو ئی ہندستانی ٹیم نے دن کا آغاز میں کافی کفایتی بولنگ کی لیکن مہمان ٹیم کے بلے بازوں نے سنبھلتے ہوئے بلے بازی کر کے اپنے اسکور میں 197 رنز اور جوڑکر برتری لے لی۔لیفٹ آرم اسپنر رویندر جڈیجہ نے 17 اوورز میں 49 رنز دے کر سب سے زیادہ تین وکٹ نکالے اور کافی کامیاب رہے ۔لیکن تجربہ کار آف اسپنر روی چندرن اشون کوئی کمال نہیں کر سکے اور 75 رنز پر انہوں نے ایک وکٹ نکالا۔تیز گیند باز ایشانت شرما نے حریف بلے بازوں کے ساتھ مزاحیہ نوک جھونک کی اور 23 اوورز میں کفایتی بولنگ کرکے محض 39 رنز دیے اور ایک وکٹ نکالا۔امیش یادو کو 57 رن پر ایک وکٹ ملا۔اس سے پہلے آسٹریلیا نے اننگز کا آغاز 40 رنز سے آگے کیا تھا اور لنچ تک وہ 29 اووروں کے کھیل میں صرف 47 رنز ہی جوڑ سکی۔ مہمان ٹیم ابھی بھی ہندوستان کے اسکور سے 102 رن پیچھے ہے جسے اس نے پہلی اننگز میں ہفتہ کو 189 رنز پر ڈھیر کر دیا تھا۔لنچ کے وقت سلامی بلے باز میٹ رینشا 40 رن اور شان مارش دو رن بنا کر ناٹ آ¶ٹ تھے ۔ میچ میں صبح ہندوستانی گیند بازوں نے کفایتی گیندبازی کرتے ہوئے آسٹریلیا کے بلے بازوں کو بورڈ پر رنجوڑنے سے روکنے کی کوشش کی۔ کل کے ناٹ آ¶ٹ بلے باز ڈیوڈ وارنر نے 23 رنز اور رینشا نے 15 رن سے آگے اپنی اننگز کو بڑھایا اور پہلے وکٹ کے لئے 21.1 اوور میں 52 رن جوڑے ۔لنچ تک آسٹریلیا نے دو وکٹ پر 87 رن اور پھر چائے کے وقفہ تک پانچ وکٹ پر 163 رنز بنائے ۔آسٹریلیا نے لنچ کے بعد اپنے تین وکٹ 86 رن جوڑ کر گنوائے ۔وارنر 33، رینش 60، اسٹیون اسمتھ آٹھ، شان مارش 66، پیٹر ھیڈاسکمب 16 اور مچل مارش صفر پر آ¶ٹ ہوئے ۔آسٹریلوی ٹیم کے کل کے ناٹ آ¶ٹ بلے باز وارنر اور رینش نے صبح اپنی اننگز کو آگے بڑھانے کی کوشش کی اور پہلے وکٹ کے لئے 21.1 اوور میں 52 رن جوڑے ۔وارنر نے اگرچہ آسٹریلیا کو اس کی پہلی اننگز میں نصف سنچری اوپننگ شراکت دلائی لیکن وہ دیر تک میدان پر ٹک نہیں سکے اور اپنے کل کے اسکور میں 10 رنز کا ہی اضافہ کر سکے ۔انہوں نے 67 گیندوں کی اننگز میں تین چوکے لگا کر 33 رنز بنائے ۔لیکن پھر وہ اشون کا شکار بن گئے اور ان کی گیند پر بولڈ ہوئے جس سے ہندستان نے صبح جلد ہی پہلی وکٹ حاصل کر لی۔رینش تاہم دوسرے سرے پر ٹکے رہے لیکن کپتان اسمتھ بھی اس بار دیر تک نہیں ٹک سکے ۔پنے ٹیسٹ میں نامساعد حالات میں سنچری بنانے والے نمبر ایک ٹیسٹ بلے باز 52 گیندوں میں صرف آٹھ رنز ہی جوڑ سکے تھے کہ جڈیجا کی گیند پر دفاعی شاٹ کھیلنے کے چکر میں گیند ان کے بلے کا اندرونی کنارہ لیتے ہوئے وکٹ کیپر ردھمان ساہا کے ھاتھوں میں سما گئی۔اسمتھ نے رینش کے ساتھ دوسرے وکٹ کے لئے 30 رن جوڑے اور ہندستان نے 82 کے اسکور پر آسٹریلیا کے دو اہم بلے بازوں وارنر اور اسمتھ کو سستے میں پویلین کا راستہ دکھا دیا۔ وارنر کے آ¶ٹ ہونے کے بعد ہندوستانی تیز گیند باز اشانت اور اسمتھ اور رینش کے درمیان میدان پر کچھ نوک جھونک نے بھی میچ کی شدت بیان کر دی۔ایشانت نے اپنی بولنگ سے اسمتھ کو کافی پریشان بھی کیا۔چھٹی کی وجہ سے میچ کے دوسرے دن چنا سوامی اسٹیڈیم میں بھی بڑی تعداد میں ناظرین کی موجودگی رہی جنہوں نے میزبان ٹیم کی جم کر حمایت کی۔ وہیں ہندوستانی گیند بازوں نے بھی کفایتی گیند بازی کی اور صبح میچ کے ابتدائی 14 اووروں میں آسٹریلیا کو صرف 21 رنز ہی بنانے د یے ۔تیز گیند باز ایشانت شرما نے بھی اپنی گیندبازی سے اسمتھ کو کافی پریشان کیا۔ اشون نے اپنے 10 اوور کی گیندبازی میں وارنر کا وکٹ حاصل کرنے کے ساتھ محض آٹھ رنز ہی دیے ۔ اس کے بعد کپتان وراٹ کوہلی نے لیفٹ آرم اسپنر جڈیجہ کو اتارا جنہوں نے اسمتھ کا اہم وکٹ حاصل کیا ۔ تاہم ہندوستان نے کیچ چھوڑنے کی کمزوری سے سبق حاصل نہیں کیا اور وراٹ نے امیش یادو کی ایک گیند پر رینشا کا ایک کیچ چھوڑدیا۔رینش اور شان مارش نے تیسرے وکٹ کے لئے 52 رن کی شراکت کرکے ٹیم کو مضبوطی دی۔رینش کو جڈیجہ نے وکٹ کیپر ساہا کے ہاتھوں اسٹمپ کراتے ہوئے 134 کے اسکور پر آسٹریلیا کا تیسرا وکٹ نکالا اور اس شراکت پر بھی روک لگائی۔ تاہم شان نے دوسرے سرے پر رن بنانا جاری رکھا اور ہندوستانی خیمے پر دبا¶ بھی بنا رہا۔ہندستان کو چوتھی کامیابی پھر 76 ویں اوور میں جاکر ملی جب ھیڈاسکمب کو جڈیجہ نے اشون کے ہاتھوں کیچ کر کے اپنا تیسرا اور ہندستان کا چوتھا وکٹ نکالا۔ھیڈاسکمب نے 30 گیندوں میں دو چوکے لگائے اور شان کے ساتھ 26 رن جوڑے ۔آسٹریلیا کے اسکور میں محض تین رنز کا ہی اضافہ ہوا تھا کہ تیز گیند باز ایشانت نے مشیل کو بغیر کھاتہ کھولے ہی ایل بی ڈبلیو کر پویلین بھیج دیا۔آسٹریلوی ٹیم اس وقت 163 کے اسکور پر پانچ وکٹ گنوا چکی تھی اور میچ ہندستان کے حساب سے متوازن صورت حال میں تھا۔لیکن ایک سرے پر شان ڈٹے ہوئے تھے جنہوں نے ویڈ کے ساتھ مل کر ایک اور نصف سنچری شراکت قائم کی۔شان اور ویڈ نے چھٹے وکٹ کے لئے 20.2 اوور میں 57 رن جوڑے جو دن میں آسٹریلیا کی تیسری نصف سنچری شراکت بھی تھی۔اسی کی بدولت مہمان ٹیم نے اپنا اسکور 200 کے پار پہنچا دیا۔میچ ختم ہونے سے کچھ اوور پہلے شان کو تیز گیند باز امیش یادو نے آ¶ٹ کر اپنا پہلا اور آسٹریلیا کا چھٹا وکٹ نکالا۔ویڈ نے 68 گیندوں کی اننگز میں دو چوکے لگا کر ناٹ آ¶ٹ 25 رن اور اسٹارک نے 19 گیندوں میں دو چوکے لگا کر ناٹ آ¶ٹ 14 رن بنائے اور دونوں فی الحال کریز پر ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں