shami_647_080816071903 3

دھرم شالہ میںمل سکتاہے سمیع کو موقع

دھرم شالہ، 23 مارچ (یو این آئی) پنے ، بنگلور اور رانچی میں اسپن کا غلبہ رہنے کے بعد اب دھرم شالہ کے خوبصورت میدان میں رفتار کا طوفان اٹھے گا جو ہندستان اور آسٹریلیا کے درمیان چوتھے ٹیسٹ اور سیریز کا فیصلہ کرے گا۔دھرم شالہ کی پچ دیکھ کر تیز گیند بازوں کی بانچھیں کھلی ہوئی ہیں اور دونوں ہی ٹیمیں ایک اضافی فاسٹ بولر رکھنے کی منصوبہ بندی پر سنجیدگی سے غور کر رہی ہیں۔ہماچل پردیش کرکٹ ایسوسی ایشن کی پچ کے لئے کہا جا رہا ہے کہ اس میں رفتار اور اچھال ہوگی جس سے تیز گیند بازوں کو زیادہ مدد ملے گی۔پنے اور بنگلور میں پچوں میں اتنا ٹرن تھا کہ انہیں خراب قرار دے دیا گیا۔تاہم رانچی میں زیادہ ٹرن نہیں ملا لیکن تیز گیند بازوں کو بھی کوئی بہت مدد نہیں ملی۔میچ پورے پانچ دن تک چلنے کے بعد ڈرا ختم ہو گیا۔دھرم شالہ سے اندازہ لگایا جا رہا ہے کہ یہاں بارڈر۔گواسکر ٹرافی کا فیصلہ ہوگا۔ اس پچ کی وجہ سے آسٹریلیا ایک اسپنر کو باہر کر کے ایک اضافی فاسٹ بولر شامل کرسکتا ہے ۔دھرم شالہ کی پچ میں گھاس دکھائی دے رہی ہے اور ہندستانی خیمہ بھی فٹ ہو چکے تیز گیند باز محمد سمیع پر نظریں لگائے ہوئے ہے ۔سمیع دھرم شالہ میں ہندستانی ٹیم کے ساتھ جڑ چکے ہیں اور یہ دیکھنا دلچسپ ہوگا کہ کیا کپتان وراٹ کوہلی سمیع پر کوئی دا¶ کھیلتے ہیں ۔میڈیا میں بھی دھرم شالہ کی پچ کی رفتار اور اچھال کو لے کر کافی کچھ کہا جا رہا ہے اور اس پچ کا موازنہ انگلینڈ کی سوئنگ لینے والی پچوں سے کچھ حد تک کی جا رہا ہے ۔ہندستان ان حالات میں سوئنگ کے ماہر بھونیشور کمار کو بھی کھلانے پر غور کر سکتا ہے ۔بھونیشور سوئنگ کے حالات کا فائدہ اٹھانے میں ماہر مانے جاتے ہیں، اگرچہ بھونیشور نے 2016 کے ویسٹ انڈیز کے دورے کے بعد سے ہندستان کے 16 ٹسٹ میچوں میں صرف پانچ میچ کھیلے ہیں اور 18.71 کی اوسط سے 14 وکٹ لئے ہیں۔لیکن بھونیشور کیلئے یہ مانا جاتا ہے کہ اگر انہیں پچ سے تھوڑی بھی مدد ملے تو وہ کافی موثرثابت ہو سکتے ہیں۔سمیع اپنے دائیں پا¶ں کی چوٹ سے نجات حاصل کر کے ٹیم میں واپس آئے ہیں اور آہستہ آہستہ اپنی میچ فٹنس ثابت کر رہے ہیں۔سمیع نے بنگلور اور رانچی ٹسٹ میچوں سے پہلے نیٹ پر بولنگ بھی کی تھی۔وہ وجے ہزارے ٹرافی میں بنگال کے لئے دو میچ کھیلے تھے ۔سمیع گجرات کے خلاف سات اوور میں کوئی وکٹ نہیں لے پائے تھے جبکہ تمل ناڈو کے خلاف فائنل میں انہوں نے 8.2 اوور میں چار وکٹ حاصل کئے تھے ۔سمجھا جاتا ہے کہ سلیکٹر سمیع کی فارم اور فٹنس سے کافی خوش ہیں لیکن ٹیم مینجمنٹ نیٹ پر ان کی فٹ نیس کا اندازہ کرنے کے بعد میچ کیلئے ان پر کوئی فیصلہ لے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں