sunny lyoni 1

سنی لیونی رام گوپال ورما پر بھاری پڑ گئیں

بالی وڈ میں رواں ہفتہ ویمنز ڈے یعنی یومِ خواتین کے نام رہا اور اس کا سہرا فلمساز رام گوپال ورما کے سر ہوگا جنھوں نے یومِ خواتین کے موقعے پر تمام خواتین کو مبارکباد دیتے ہوئے انھیں ہدایت کی کہ وہ بھی سنی لیونی کی طرح لوگوں میں خوشیاں بانٹیں۔
رامو کی اس ٹوئٹ کے بعد سوشل میڈیا پھر سرگرم ہو گیا اور لوگوں نے رامو کو بہت لتاڑا۔ کسی نے انھیں انھی کی ماں بہن کی دہائی دی تو کسی نے انھیں گھٹیا پبلسٹی بٹورنے والا کہا۔ان سب میں خود سنی لیونی کا جواب قابلِ ستائش رہا۔ سنی نے ایک ویڈیو میں یومِ خواتین کی مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ ‘معاشرے میں تبدیلی تبھی آتی ہے جب ہم یک زباں ہوں اور لفظوں کا انتخاب سمجھداری سے کیا جانا چاہیے۔’تمام بحث میں دو چیزوں پر غور کرنا ضروری ہے ایک تو یہ کہ رام گوپال ورما نے کس ذہینیت کے نتیجے میں سنی لیونی کا حوالہ دیا دوسرے یہ کہ جو لوگ اسے گھٹیا کہہ رہے ہیں کیا ان کے خیال میں سنی لیونی کی زندگی سے مشابہت قابلِ تضحیک ہے۔
سوال یہ ہے کہ جب سنی کو اپنے ماضی پر کسی طرح کی شرمندگی نہیں تو ان کے ماضی یا کردار پر سوالیہ نشان لگانے کا حق کسی کو کیوں ہو اور رہی بات رامو کی تو اپنی آنے والی فلم ‘سرکار تھری’ کی پبلسٹی کے لیے انھوں نے ایک بار پھر سنی لیونی پر ہاتھ صاف کرنے کی کوشش کی ہے۔ویسے لگتا ہے کہ ابھی رامو کا پیٹ نہیں بھرا تھا کہ انھوں نے ٹائیگر شروف کو بھی نشانہ بنا ڈالا۔ ایک میگزین کے سرورق پر ان کی تصویر دیکھنے کے بعد ایک ٹویٹ میں رام گوپال ورما نے کہا کہ ‘ارمِلا کے انداز میں تصویر نہ بنوایا کرو اور اپنے پاپا سے مردانگی کا سبق لو۔’ٹائیگر نے تو ان کی اس ٹویٹ کے جواب میں انتہائی مؤدبانہ انداز میں کہا کہ ‘میں کتنی بھی کوشش کرلوں اپنے پاپا جیسا نہیں بن سکتا کیونکہ وہ اصلی ہیرو ہیں اور جہاں تک رام گوپال ورما کا تعلق ہے وہ ایک سینیئر فلمساز ہیں اور ہر کسی کو بولنے کی آزادی ہے۔’لیکن سونم کپور کہاں چپ بیٹھنے والی تھیں۔ وہ خود کو روک نہیں سکیں اور جھٹ سے ٹویٹ کر ڈالا ‘ٹائیگر کو شکر ادا کرنا چاہیے کہ وہ رام گوپال ورما کو پسند نہیں کیونکہ رامو جس کو نہ پسند کریں وہ کامیاب رہتے ہیں۔’

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں