آج کا شماره | اردو | हिन्दी | English
Politics

امریکہ میں ہندستانیوں کی ہلاکت پر بھارت خاموش نہیں رہے گا : سشما

sushma
Written by Tariq Hasan

نئی دہلی، 15 مارچ (یواین آئی) امریکہ میں ہندستانی شہریوں پر ہونے والے پر تشدد حملوں کے بارے میں حکومت نے آج کہا کہ ان واقعات پر امریکی حکومت اور سماج میں ہونے والے رد عمل سے واضح ہے کہ ایسے الگ الگ واقعات سے وہاں کے سماجی اقدار میں تبدیلی نہیں آئی ہے ۔ حکومت نے غیر مقیم ہندستانیوں کی حفاظت کیلئے کوئی کوشش نہ کرنے کے الزام کو یکسر مسترد کر دیا اور کہا کہ پریشان حال ہندستانی شہریوں کی مدد کے لیے حکومت کبھی بھی خاموش نہیں رہیگی۔ وزیر خارجہ سشما سوراج نے آج لوک سبھا میں امریکہ میں پیش آنے والے واقعات پر ایک بیان دیا۔ محترمہ سوراج نے کہا کہ گذشتہ تین ہفتوں میں ہند نژاد لوگوں پر حملوں کے تین واقعات سامنے آئیں ہیں۔ 22 فروری کو کنساس کے مضافات اولیتھ میں ہندوستانی انجینئر سرنیواس کچی بھوتلا کو قتل کر دیا گیا۔ اس واقعہ میں ایک دیگر ہندستانی آلوک مداساني اور انہیں بچانے کی کوشش میں ایک امریکی شہری ایان گریلاٹ زخمی ہوئے ہیں۔ دوسرا واقعہ میں دو مارچ کو ھرنش پٹیل کو لنکاسٹر جنوبی کیرولینا میں گولی ماری گئی۔ تاہم شیرف اور خاندان والوں کے مطابق یہ ڈاکہ زنی کا واقعہ تھا جس نے سنگین صورت اختیار کرلی۔ لیکن یہ بھی جانچ کی جا رہی ہے کہ کہیں یہ نسل تعصب کا واقعہ تو نہیں ہے ۔ تیسرا واقعہ چار مارچ کا ہے جب واشنگٹن اسٹیٹ کے سیٹل میں امریکی شہری دیپ رائے کو گولی مار دی گئی۔ تاہم مجرم ابھی پکڑا نہیں جا سکا ہے لیکن مسٹر رائے محفوظ اور خطرے سے باہر ہیں۔ اس واقعہ کی ایف بی آئی تحقیقات کر رہی ہے ۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ تینوں معاملوں میں حکومت نے اپنے سفارتخانہ اور قونصل خانوں کے ذریعے متاثرہ لوگوں اور ان کے اہل خانہ کو ہر ممکن مدد دینے کے لیے ان سے فوری طور پر رابطہ کیا۔ خارجہ سکریٹری نے بھی حال میں امریکہ کے دورے کے دوران اعلی سطح پر اس مسئلہ پر اپنی تشویش کا اظہار کیا ہے اور ہند نژاد لوگوں کو مکمل تحفظ فراہم کرنے کی اپیل کی ہے ۔ امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ، کنساس کے گورنر سام براؤن بیک، امریکی ھوم لینڈ سکیورٹی کے وزیر جان کیلی نے منافرت کی وجہ سے ہونے والے تشدد کی سخت مذمت کی ہے اور انہوں نے وعدہ کیا ہے کہ امریکہ حکومت ان حکومتوں کے ساتھ مل کر کام کریگی جن کے شہری تشدد کا شکار ہوئے ہیں۔ محترمہ سوراج نے کہا کہ یہ حقیقت ہے کہ امریکی معاشرے کے تمام طبقوں نے ان واقعات پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے ۔ یہ بات ہمیں یہ یقین دہائی کراتی ہے کہ مختلف واقعات کے باوجود امریکی سماج دونوں ممالک کے لوگوں کے باہمی رابطے کو اہمیت دیتا ہے ۔

About the author

Tariq Hasan