اردو | हिन्दी | English
204 Views
Politics

نتیش کمار کو متحدہ اپوزیشن میں بڑا کردار دینے کی تیاری

nitish.jp2
Written by Taasir Newspaper

نئی دہلی، 28 اپریل.(پی ایس آئی)نریندر مودی کی قیادت میں بی جے پی کی مسلسل ہوتی مضبوط پوزیشن سے فکر مند اپوزیشن جماعتوں کے اتحاد کی کوشش اب ایک شکل لیتی نظر آرہی ہے. علاقائی پارٹیوں کے دباؤ کے بعد کانگریس کی طرف سے خود پارٹی صدر سونیا گاندھی نے اپوزیشن اتحاد کے لئے پہل تیز کی ہے. ذرائع کے مطابق، یو پی اے کو بڑی شکل دیتے ہوئے پوری شکل میں تبدیلی کی بھی ایک بلیو پرنٹ تیار کیا گیا ہے. اس کوشش میں کانگریس کے علاوہ جے ڈی (یو) چیف نتیش کمار اور این سی پی چیف شرد پوار کا بڑا کردار بتایا جا رہا ہے. دونوں کی سونیا گاندھی سے الگ الگ طویل بات چیت بھی ہوئی ہے.ذرائع کے مطابق، یو پی اے ۔2 کو توسیع دیتے ہوئے کانگریس کی قیادت میں متحدہ اپوزیشن جماعتوں کی ایک رابطہ کمیٹی بنانے کی تیاری بھی آخری مرحلے میں ہے. سونیا گاندھی اس کمیٹی کی صدر بن سکتی ہیں جبکہ نتیش کمار کو اس کے کنوینر کا کردار مل سکتا ہے. نتیش کو اگر کنوینر کا کردار ملتا ہے تو قومی سطح پر اپوزیشن کے طور پر پہلی بڑی موجودگی ہوگی. اس میں شرد پوار کا بھی کردار اہم تزوبکار کا ہوگا. اکھلیش یادو نے پہلے ہی اپوزیشن اتحاد کی ان کوششوں کے ساتھ جانے کے اشارہ دے دیئے ہیں.نو بھارت کے مطابق ان تمام واقعات سے منسلک ایک سینئر لیڈر نے کہا کہ سونیا گاندھی سے نتیش کمار کے اجلاس کے بعد دو چیزیں طے ہو گئی تھیں کہ مختلف اپوزیشن جماعتوں کی ایک بڑی کمیٹی بنے گی اور اس میں نتیش کمار کا اہم کردار ہو گا، لیکن باضابطہ طور پر اس اپوزیشن فورم کا اعلان کب ہوگا اس بارے میں سب کی الگ الگ رائے ہے. علاقائی پارٹیاں چاہتی ہیں کہ جلد از جلد اس کا اعلان ہو تاکہ باقی جماعتوں کو ایک پلیٹفارم پر لانے کی کوشش فوری طور پر شروع سکے، لیکن کانگریس چاہتی ہے کہ صدارتی انتخابات کے بعد اس کا اعلان ہو. کانگریس کا کہنا ہے کہ صدارتی انتخابات میں اپوزیشن اتحاد کا ایک مشق ہو جائے گا جس کے بعد وہ آگے بڑھ سکتے ہیں، لیکن دوسرے علاقائی لیڈر صدارتی انتخابات میں ہی اس کا استعمال دیکھنا چاہتے ہیں.جے ڈی (یو) لیڈر کے سی تیاگی نے کہا کہ گزشتہ کچھ دنوں سے خود سونیا گاندھی نے تمام اپوزیشن جماعتوں کے رہنماؤں سے ملنے کی جو پہل شروع کی ہے وہ دیر آئے، درست آئے کی طرح ہے. انہوں نے کہا کہ یہ کہنے میں کوئی حرج نہیں ہے کہ اگر اپوزیشن ایک نہیں ہوا تو نریندر مودی کی قیادت والی بی جے پی کو اب کے ماحول میں روکنا بہت مشکل ہوگا.وہیں دوسرے واقعات میں پہلی بار 1 مئی کو سماجوادی لیڈر مدھو لمیے کی جینتی کے موقع پر سماجوادی لیڈروں نے اہم تقریب میں کانگریسی لیڈروں کو بھی بلایا ہے. بدھو لمیے غیر کانگریس تحریک کے ذہنی متحرک مفکر تھے. وہیں، اب کانگریس لیڈر بھی اس پروگرام میں شرکت کریں گے.

About the author

Taasir Newspaper