اردو | हिन्दी | English
320 Views
Politics

عام آدمی پارٹی میں اختلاف، وشواس چھوڑ سکتے ہیں پارٹی

vishwas
Written by Taasir Newspaper

نئی دہلی، 2 مئی (یو این آئی) عام آدمی پارٹی (آپ) کے بانی رکن کمار وشواس اور پارٹی کے دوسرے لیڈروں کے درمیان اختلافات میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے اور اس دوران مسٹر وشواس کے پارٹی چھوڑنے کے اشارے مل رہے ہیں۔رکن اسمبلی امانت اللہ خان کے الزامات سے بری طرح صدمہ میں مبتلا مسٹر وشواس نے کہا کہ ان کے خلاف کوئی بڑی سازش رچی جارہی ہے ، ایسے میں وہ آج رات کوئی بڑا فیصلہ کر سکتے ہیں۔ دوسری طرف عام آدمی پارٹی کے سینئر لیڈر اور دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے مسٹر وشواس سے اپیل کی ہے کہ وہ ٹیلی ویزن چینلوں پر بیان بازی کرنے کی بجائے پارٹی کے پلیٹ فارم پر اپنی بات رکھیں۔غازی آباد میں آج اپنی رہائش گاہ پر نامہ نگاروں سے بات چیت میں مسٹر وشواس نے کہا کہ مسٹر خان کا انہیں بی جے پی اور آر ایس ایس کا ایجنٹ بتانا انتہائی قابل اعتراض ہے ۔ دراصل یہ امانت اللہ نہیں کہہ رہے بلکہ ان سے ایسا کہلوایا جا رہا ہے ، وہ تو صرف چہرہ ہیں۔ کسی نے اگر ایسا وزیر اعلی اروند کیجریوال یا نائب وزیر اعلی منیش سسودیا کے خلاف کہا ہوتا تو اسے اب تک پارٹی سے نکال دیا جاتا۔مسٹر وشواس نے کہا کہ ان کے جس ویڈیو ‘وی دی نیشن’ پر سوال اٹھائے جا رہے ہیں، اس کے لئے وہ کسی سے معافی نہیں مانگیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ملک اور فوجیوں کا مسئلہ ہو گا تو وہ ضرور بولیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی لیڈروں کو ایسا کچھ نہیں کرنا چاہئے جس سے محنت کرنے والے کارکن خود کو نظرانداز محسوس نہ کریں۔اس دوران مسٹر سسودیا نے صحافیوں کو بتایا کہ مسٹر وشواس پارٹی پلیٹ فارم پر اپنی بات رکھنے کی بجائے ٹی وی پر بیان بازی کر رہے ہیں جس سے کارکنوں کا حوصلہ ٹوٹ رہا ہے ۔ کارکن یہ جانتے ہیں کہ ایسے بیانات سے کن پارٹیوں کو فائدہ ہو رہا ہے ۔ انہوں نے کہا، “مسٹر کیجریوال نے مسٹر وشواس سے تین تین گھنٹے تک بات چیت کی۔ میں خود بھی ان سے ملنے گیا تھا لیکن وہ ٹی وی پر بیان بازی کرنے میں لگے ہیں جس سے کوئی حل نکلنے والا نہیں۔ “گوا اور پنجاب اسمبلی اور دہلی میونسپل انتخابات میں ملی زبردست شکست سے عام آدمی پارٹی میں عدم اطمینان بڑھتا جا رہا ہے ۔

About the author

Taasir Newspaper