اردو | हिन्दी | English
855 Views
Sports

نارائن کی دھما کے دار بیٹنگ سے کو لکاتا کی شاندار جیت

Sunil Narine of Kolkata Knight Riders celebrates his Fifty during match 46 of the Vivo 2017 Indian Premier League between the Royal Challengers Bangalore and the Kolkata Knight Riders held at the M.Chinnaswamy Stadium in Bangalore, India on the 7th May 2017Photo by Prashant Bhoot - Sportzpics - IPL
Written by Tariq Hasan

بنگلور، 07 مئی (یو این آئی) سنیل نارائن (54) کی آئی پی ایل کی تاریخ کی سب سے تیز نصف سنچری اور کرس لن (50) کی آتشی اننگ سے کولکاتا نائٹ رائڈرس نے رائل چیلنجرز بنگلور کو اتوار کو چھ وکٹ سے شکست دے کر آئی پی ایل 10 کے پلے آف کے لئے اپنی دعویداری مضبوط کر لی۔کولکتہ نے بنگلور کو چھ وکٹ پر 158 رن پر روکنے کے بعد نارائن اور لن کے طوفانی حملوں سے اس ہدف کو جیسے مذاق بنا کر رکھ دیا۔کولکتہ نے 15.1 اوور میں چار وکٹ پر 159 رن بنا کر 29 گیند باقی رہتے یکطرفہ جیت اپنے نام کی۔کولکتہ کی 12 میچوں میں یہ آٹھویں جیت ہے اور اس نے 16 پوائنٹس کے ساتھ پلے آف کی اپنی دعویداری مضبوط کر لی ہے ۔دوسری طرف بنگلور کی شرمناک کارکردگی جاری رہی اور اس کو 13 میچوں میں 10 ویں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ویسٹ انڈیز کے نارائن نے محض 15 گیندوں میں نصف سنچری بنا کر آئی پی ایل کی تاریخ کی سب سے تیز نصف سنچری کی برابری کر لی۔کولکاتا کے ہی یوسف پٹھان نے 2014 میں حیدرآباد کے خلاف 15 گیندوں میں نصف سنچری بنائی تھی۔نارائن اور لن نے چھ اوور کے پاورپلے میں 105 رن بنائے جو آئی پی ایل کی تاریخ میں پاورپلے میں سب سے زیادہ رنز ہیں۔یہ دوسرا موقع ہے جب کسی ٹیم نے پاورپلے میں 100 سے زیادہ رن بنائے ہیں۔اس سے قبل کرس گیل، وراٹ کوہلی اور اے بی ڈیولیرس کی تری مورتی کی سپر فلاپ کارکردگی کے درمیان ٹریوس ہیڈ (ناٹ آ¶ٹ 75) اور مندیپ سنگھ (52) کی شاندار نصف سنچریوں سے رائل چیلنجرز بنگلور نے کولکتہ نائٹ رائڈرس کے خلاف آئی پی ایل 10 مقابلے میں اتوار کو چھ وکٹ پر 158 رن کا مشکل اسکور بنا لیا تھا ۔آسٹریلوی کھلاڑی ٹریوس ہیڈ نے زبردست شاٹ لگاتے ہوئے صرف 47 گیندوں پر تین چوکوں اور پانچ چھکوں کی مدد سے ناقابل شکست 75 رنز کی اننگز کھیلی جس کی بدولت بنگلور کی ٹیم 158 تک پہنچ پائی۔ہیڈ نے اننگز کے آخری اوور میں امیش یادو کی آخری تین گیندوں پر دو چھکے اور ایک چوکا لگایا۔اس اوور میں کل 21 رن پڑے جس نے بنگلور کی حالت کو درست کیا۔ٹریوس کے اٹیک کی وجہ سے ہی بنگلور آخری پانچ اوورز میں 53 رن جوڑ پایا۔گیل (صفر)، کپتان وراٹ (پانچ) اور ڈی ولیرس (10) کے 34 رن کے اسکور تک پویلین لوٹ جانے کے بعد مندیپ اور ہیڈ نے چوتھے وکٹ کے لئے 71 رن کی اہم شراکت کی۔مندیپ نے 43 گیندوں پر 52 رن میں چار چوکے اور ایک چھکا لگایا۔مندیپ ٹیم کے 105 کے اسکور پر آ¶ٹ ہوئے ۔اس کے بعد کیدار جادھو نے آٹھ اور پون نیگی نے پانچ رنز بنا کر ہیڈ کو اچھا تعاون دیا جنہوں نے دوسرے سرے سے تابڑ توڑ شاٹ لگائے ۔

About the author

Tariq Hasan