اردو | हिन्दी | English
313 Views
Bihar News

نوادہ میں مسلمانوں کے خلاف یکطرفہ کارروائی نہیں: نیرحسنین

ig
Written by Taasir Newspaper

پٹنہ 11مئی (اسٹاف رپورٹر): پٹنہ کے زونل آئی جی نیر حسنین خان نے ایک مقامی اردو روزنامہ (تاثیرنہیں) میں نوادہ کے سلسلے میں شائع اس خبر کو بے بنیاد بتایا ہے جس میں کہا گیا تھا کہ نوادہ میں مسلمانوں کے خلاف یکطرفہ کارروائی کی گئی ہے۔ جس سے مسلمانوں میں اضطراب اور عدم تحفظ کا احساس پایا جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گذشتہ ماہ رام نومی کے موقع پر جب وہاں ماحول بگاڑنے کی کوشش ہوئی تھی تو میں ذاتی طور پر وہاں خود کیمپ کررہا تھا ۔ اس وقت اور اس کے بعد بھی کبھی کسی مسلمان نے اس طرح کی کوئی شکایت نہیں کی کہ ان کے خلاف یکطرفہ کارروائی کی جارہی ہے یا انہیں انتظامیہ تحفظ فراہم نہیں کرارہی ہے۔ حقیقت یہ ہے کہ اس معاملے میں وہاں 30 افراد دونوں طرف سے گرفتار کئے گئے ہیں اور فسادیوں کے ذریعہ مکانات یا دکانوں میں توڑپھوڑ سے جن لوگوں کا بھی نقصان ہوا ہے انہیں بلاامتیاز معاوضہ فراہم کرایا گیاہے۔جو لوگ ہجوم میں غلط طریقے سے گرفتار ہوگئے تحقیق کے بعد انہیں بلاتاخیر نہ صرف رہا کیا گیا بلکہ انہیں باعزت طریقے سے ان کے گھر تک پہنچایا گیا۔ زونل آئی جی نے کہا کہ پینتھرس پارٹی کے خلاف شکایتیں ملنے کے بعد 27 پولس اہلکاروں کا تبادلہ کیاگیا ہے اور آج بھی شہر کے 11 حساس مقامات پر پولس کی تعیناتی ہے اور حالات پر گہری نظر رکھی جارہی ہے۔ حکومت اور انتظامیہ کی ایماندارنہ کوشش کا ہی نتیجہ ہے کہ نوادہ میں حالات پوری طرح سازگار ہیں۔ لیکن اتنے دنوں بعد عین شب برأت کے دن اس طرح کی گمراہ کن خبر کی اشاعت کسی بھی طرح ریاست یا ریاست کے مسلمانوں کے مفاد میں نہیں ہے اس سے لوگوں میں غلط پیغام جائے گا اور جن لوگوں نے حالات پر قابو پانے میں رات دن ایک کیا ہے ان کی بھی حوصلہ شکنی ہوگی۔

About the author

Taasir Newspaper