اردو | हिन्दी | English
1115 Views
Around the World

برطانیہ کی عدالت میں مالیاپیش، خود کو بتایا معصوم

malia
Written by Taasir Newspaper

لندن،13جون(پی ایس آئی)بہت سے بینکوں کا قرض نہیں ادا کرنے کے معاملات میں مطلوبہ بھارتی کاروباری وجے مالیا حوالگی متعلق سماعت کے لئے منگل کو یہاں ویسٹ منسٹر مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش ہوئے۔ کورٹ نے انہیں 4 دسمبر تک کے لئے ضمانت دی ہے۔ معاملے کی اگلی سماعت 6 جولائی کو ہوگی۔ کورٹ کے باہر میڈیا کے اہلکاروں کے سوالات کے جواب دیتے ہوئے مالیا نے خود کو بے قصور بتایا۔ ساتھ ہی دعوی کیا کہ خود کو معصوم ثابت کرنے کے لئے ان کے پاس کافی ثبوت ہیں۔مالیا نے کہا، ‘میرے پاس کہنے کے لئے کچھ نہیں ہے۔ میں تمام الزامات کی تردید کرتا ہوں۔ میں کسی کورٹ سے بھاگا نہیں ہوں۔ خوشی ہے کہ یہاں منصفانہ عدالت میں مجھے اپنا موقف رکھنے کا موقع ملا ہے۔’لیکن اس سوال کو ٹال دیا، جس میں ان سے پوچھا گیا کہ کیا انہیں اس بات کا ڈر لگتا ہے کہ کیا بھارت میں مقدمہ ان کے لئے ظالم ہوگا؟بھارت اور جنوبی افریقہ کے درمیان میچ دیکھنے پہنچے مالیا کے سامنے چور چور کے نعرے پر انہوں نے کہا، ‘اوول میدان پر مجھے چور نہیں کہا گیا تھا۔ دو شرابی وہاں چللا رہے تھے، لیکن بہت سے دوسرے لوگوں نے مجھے نیک خواہشات دیں۔’ اپریل میں گرفتاری کے بعد سے 61 سالہ مالیا ضمانت پر باہر ہیں۔ مالیا کی کنگ فشر ایئر لائنز نے بینکوں کا قریب 9000 کروڑ روپے کا قرض نہیں چکایا ہے، اس صورت میں وہ بھارت میں مطلوبہ ہیں۔ وہ مارچ 2016 سے برطانیہ میں ہیں۔ 18 اپریل کو حوالگی وارنٹ پر اسکاٹ لینڈ یارڈ نے انہیں گرفتار کیا تھا۔ مرکزی وزیر وزیر مملکت جنرل وی کے سنگھ نے منگل کو کہا کہ وجے مالیا کو بھارت لانا آسان مسئلہ نہیں ہے، پھر بھی انہوں نے یقین دہانی کرائی کہ بھگوڑے شراب تاجر کو ہندوستان لایا جائے گا۔ انہوں نے تاہم، کنگ فشر کے سابق مالک کو انگلینڈ سے بھارت لانے کی تاریخ بتانے سے انکار کر دیا۔ انہوں نے کہا کہ منگل کو برطانیہ میں مالیا کی حوالگی عمل کی سماعت شروع ہوگی۔ ای ٹی اور مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) وجے مالیا کی حوالگی کے لئے عمل کا تعین تیار کر رہی ہے۔ عمل پہلے ہی شروع ہو چکا ہے۔

About the author

Taasir Newspaper