اردو | हिन्दी | English
232 Views
Bihar News

بلدیاتی انتخابات میں پولنگ کیلئے ووٹروں میں دِکھا جوش

pol
Written by Taasir Newspaper

پھلواری شریف، 4جون (پرویز عالم)۔ پٹنہ میونسپل بلدیاتی انتخابات میں شدید گرمی کے باوجود ووٹروں کا جوش دن چڑھنے کے ساتھ ساتھ بڑھتا گیا ۔ وارڈ نمبر 11 میں کروڈی چک پرائمری اسکول کے پولنگ سینٹر نمبر 1 اور 2، برہم پور، ہرنی چک پرائمری اسکول میں پولنگ سینٹر نمبر 13، 14، 15، 16 اور 17 میں ووٹروں کی لمبی قطاریں نہیں نظر آئیں لیکن جیسے جیسے دن چڑھتا گیا ووٹرحوصلہ افزائی کے ساتھ اپنے ووٹ ڈالنے پولنگ مراکز پر پہنچتے رہے ۔ بائی پاس میں جگن پورا وارڈ نمبر 32 کے پولنگ مرکز راجکیہ نوین آدرش ہائی اسکول اشوک نگر اور سرکاری پرائمری اسکول جگن پورا میں پولنگ سینٹر 22، 23 اور 24 میں ووٹروں کی لمبی قطاریں جمہوریت کے عظیم تہوار کے جوش و جذبے کو بیاں کر رہی تھیں۔ خواتین کے ساتھ ہی یہاں نوجوان طبقہ اور ضعیف ووٹر بھی اپنے رشتہ داروں کے سہارے ووٹ ڈالنے پہنچے ۔یہاں تین بوتھوں پر ووٹ ڈالنے امنڈتی ووٹروں کی بھیڑ کی قطاریں سڑک کے اس پار سے اس پار تک لگی رہیں۔ بائی پاس میں ہی سورنگ پور پرائمری اسکول میں چھٹ پٹ ووٹروں کا ووٹ ڈالنے آنا جانا لگا رہا ۔وارڈ نمبر 31 میں پولنگ سینٹر 31 پر ووٹروں کی تعداد میں کمی کی وجہ لوگوں نے بتایا کہ اس محلے کے ووٹروں کا نام دوسرے پولنگ سینٹر پر چلا گیا ہے ۔پولنگ کے دن پولنگ مرکز پر نظر آنے کے بجائے یہاں لوگ بغل میں چل رہے یگیہ میں زیادہ نظر آئے ۔رام کرشن نگر تھانے کے ہی تنگ گلیوں میں بنا ڈھیلوا پرائمری اسکول میں ووٹنگ مرکز نمبر 27، 28، 29 اور 30 پر ووٹروں کی خاصی بھیڑ ووٹنگ کے لئے جوش و خروش کے ساتھ پہنچتی نظر آئی۔ پھلواری شریف کے سبز پورہ وارڈ نمبر 3 میں زرعی فارم سبز پورہ میں بنائے گئے پولنگ سینٹر نمبر 12 اور 13 میں پرامن طریقے سے ووٹنگ ہوتی رہی۔ اس کے علاوہ بلدیاتی انتخابات میں مختلف علاقے میں ووٹر اپنے پولنگ مراکز پر پہنچے اور اپنی رائے دہندگی کا استعمال کیا۔انیس آباد کوشل نگر میں وارڈ نمبر 9 میں وینٹری احاطے میں دو پولنگ مراکز پر ووٹروں کی لمبی قطاریں لگی رہیں۔گریجویشن کی طالبہ وندنا سنہا اپنی زندگی کا پہلا ووٹ ڈالنے کنبہ والوں کے ساتھ ڈھیلوا پرائمری اسکول میں پولنگ سینٹر پر پہنچیں اور اپنے ووٹ کے حق کا استعمال کیا ۔زندگی کا پہلا ووٹ دینے کے بعد وندنا کے چہرے پر جوش کی خوشیاں صاف جھلک رہی تھیں۔وندنا نے بتایا کہ پہلے اس کے گھر سے پاپا سچدانند سنہا، ماں نیلم کماری، بہن ارچنا سنہا ووٹ ڈالنے جاتی تھیں تو اسے بھی اپنے ووٹ ڈالنے کی للک رہتی تھی اس بار پورے خاندان کے ساتھ وہ بھی اپنی ووٹنگ کرکے اچھا محسوس کر رہی ہیں اور انہیں اپنی ذمہ داری کا احساس ہو رہا ہے ۔ دوسری طرف پولنگ سینٹروں پر پہنچ کر ایس ایس پی منو مہاراج حفاظتی انتظامات کا جائزہ لیتے رہے۔

About the author

Taasir Newspaper