اردو | हिन्दी | English
118 Views
Indian

خانہ پوری کرنے والے اخبارات کے خلاف کاروائی ہوگی : وینکیا

13psi21
Written by Taasir Newspaper

نئی دہلی، 13؍ جون (آئی این ایس انڈیا )اطلاعات و نشریات کے وزیر ایم وینکیا نائیڈو نے منگل کو واضح کرتے ہوئے کہا کہ حکومت چھوٹے یا درمیانے اخبارات پر کارروائی نہیں کر رہی ہے، صرف ان اخبارات پر کارروائی ہوگی جو صرف فائلوں میں چھپتے ہیں۔دہلی میں اپنی دیگر وزارت سے جڑی ایک پریس کانفرنس میں انہوں نے کہاکہ ایک بھی چلنے والا اخبار متاثر نہیں ہوا ہے، جو پیپر میں پیپر ہیں، انہی کے اوپر کارروائی کی گئی ہے، جو صرف اشتہار کے لیے ڈی اے وی پی کے لیے چھاپے جاتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ایسے اخبارات کو الگ رکھا گیا ہے جو باقاعدگی سے شائع ہو رہے ہیں، اہے وہ چھوٹا ہو یا بڑا ہو، کسی کے ساتھ کوئی امتیازی سلوک نہیں کیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ایک نظام تیار کیا گیا ہے کہ انگریزی، ہندی اور دیگر مقامی زبانوں کے لیے ڈی اے وی پی کے تحت کیا ضروری ہے۔انہوں نے کہا کہ ایک شبیہ بنائی جا رہی ہے کہ ہم چھوٹے اخبارات پر کاروائی کر رہے ہیں، اگر کسی کو لگتا ہے کہ ان اخبار کے ساتھ غلط ہوا ہے ،تو وہ ان سے یا ان کے افسران سے ملاقات کرکے دوبارہ جانچ کی درخواست دے سکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ایک پرنٹنگ پریس میں 65اخبارچھپ رہے ہیں، کیا یہ ممکن ہے؟ ہم نے ریاستوں سے بھی مدد مانگی ہے کہ وہ پرنٹنگ پریس کے بجلی کے بل چیک کریں ،اسی سے پتہ چل جائے گا کتنے اخبار چھپ رہے ہیں۔گزشتہ کافی عرصے سے مودی حکومت نے اخبارات کی دھاندلیوں کو روکنے کے لیے سخت قدم اٹھایا ہے۔آراین آئی نے اخبارات کے ٹائیٹل کا جائزہ لینا شروع کر دیا ہے،جائزے میں اخبارات کے تضاد ات سامنے آنے پر پہلے مرحلے میں آراین آی نے پروینشن آف پراپر یوز ایکٹ 1950کے تحت ملک کے 269556اخبارات کے ٹائٹل کو منسوخ کر دیا ہے ۔

About the author

Taasir Newspaper