اردو | हिन्दी | English
865 Views
Sports

روہت کو آرام دیناصحیح : کوہلی

Virat-Kohli-Main-Article-1-BCCI
Written by Taasir Newspaper

برمنگھم، 16 جون (یو این آئی) ہندوستانی کپتان وراٹ کوہلی نے چیمپئنز ٹرافی کے بعد ویسٹ انڈیز دورے سے اوپنر روہت شرما کو باہر رکھے جانے کے فیصلے کی حمایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ آئندہ سری لنکا اور جنوبی افریقہ سیریز کے لئے روہت کو آرام دیا جانا ضروری ہے ۔وراٹ نے کہا کہ روہت کو ویسٹ انڈیز کے دورے میں آرام دیئے جانے کا فیصلہ صحیح فیصلہ ہے تاکہ حال میں کولہہے کی چوٹ سے صحت یاب ہوئے اوپنرکی فٹنس پر توجہ دی جا سکے ۔ہندوستانی ٹیم آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی کے فائنل میں اتوار کو پاکستان سے مقابلہ کرے گی اور اس کے بعد ٹیم انگلینڈ سے ہی سیدھے ویسٹ انڈیز کے دورے پر روانہ ہو جائے گی۔ہندوستان اور ویسٹ انڈیز کے درمیان پانچ ون ڈے اور واحد ٹوئنٹی میچ کھیلا جانا ہے ۔ وراٹ نے کہا کہ روہت کو کریبیائی دورے سے باہر رکھے جانے سے سری لنکا اور جنوبی افریقہ کے خلاف اس سال ہونے والے آئندہ دوروں کیلئے ان کی فٹنیس برقرر رکھنے میں مدد ملے گی۔انہوں نے کہا ”روہت نے چوٹ سے واپسی کرتے ہوئے پورا آئی پی ایل سیشن کھیلا ہے جو کافی تھکانے دینے والا رہا۔ ان کی ٹیم ممبئی انڈین فائنل تک پہنچی اور خطاب بھی جیتا تھا۔ اس کے علاوہ ان کی بڑی سرجری ہوئی ہے اور پٹھوں میں ہمیشہ کھینچاؤ کا ڈر رہتا ہے ۔ وہیں سیمی فائنل میچ میں بھی انہیں گھٹنے میں کچھ درد محسوس ہوا تھا”۔روہت بنگلہ دیش کے خلاف سیمی فائنل میں سنچری والی اننگز کھیل کر مین آف دی میچ رہے ۔ وہ اس وقت اچھی فارم میں بھی ہیں۔ کپتان نے کہا ”اس بات میں کوئی دو رائے نہیں ہے کہ وہ ٹیم کے بڑے کھلاڑی ہیں اور ضروری ہے کہ ہم انہیں آگے کے لئے بچاکر رکھیں۔ ہمیں سال کے باقی سیزن میں کافی بڑی سیریز کھیلنی ہیں تب ان کی ٹیم میں کافی ضرورت ہو گی”۔وراٹ نے کہا ”ہم چاہتے ہیں کہ وہ اب بڑی سرجری سے آئے ہیں تو اپنا خیال رکھیں۔ اگر آپ اس وقت خود پر زیادہ دباؤ ڈالیں گے تو اگلے سات آٹھ ماہ کے لئے ہی باہر ہو جائیں گے ۔ ٹیم میں سبھی نے مل کر یہ فیصلہ کیا ہے کہ انہیں آرام دیا جائے ۔ وہ اس وقت اچھی فارم میں ہیں اور وہ خود بھی اس صورت حال کے بارے میں سمجھتے ہیں”۔روہت کو گزشتہ سال اکتوبر میں نیوزی لینڈ کے خلاف گھریلو ون ڈے سیریز میں چوٹ لگی تھی اور اس وجہ سے وہ انگلینڈ، بنگلہ دیش اور آسٹریلیا کے خلاف سیریز سے باہر رہے تھے ۔ لیکن انہوں نے پھر ممبئی کے لئے آئی پی ایل میں واپسی کرکے اسے خطاب دلایا اور چیمپئنز ٹرافی کا حصہ بنے ۔اوپنر نے بنگلہ دیش کے خلاف سیمی فائنل میچ میں 129 گیندوں میں ناٹ آؤٹ 123 رن بناتے ہوئے ہندوستان کو فائنل میں آسانی سے پہنچانے میں اہم کردار ادا کیا اور مین آف دی میچ بھی بنے ۔ وہ چیمپئنز ٹرافی میں 87.60 کے اسٹرائک ریٹ سے 304 رن بنا کر دوسرے بہترین اسکورر بھی بنے ہوئے ہیں۔

About the author

Taasir Newspaper