اردو | हिन्दी | English
325 Views
Education

سی بی ایس ای 10 ویں میں بہار کا جلوہ

2
Written by Taasir Newspaper

نئی دہلی؍پٹنہ، 3جون(تاثیر بیورو) سنٹرل بورڈ آف سیکنڈری ایجوکیشن کی دسویں کلاس کے امتحان میں اس مرتبہ 90.95 فیصد طلبہ کامیاب ہوئے جب کہ گذشتہ سال مجموعی طور پر 96.21 فیصد کامیاب ہوئے تھے ۔ اس لحاظ اس مرتبہ دسویں کے نتائج میں پانچ فیصد سے زیادہ کی گراوٹ آئی ہے ۔آج الہ آباد، چنئی، دہلی، دہرہ دون، اور وشاکھاپٹنم کے نتائج اعلان کردئے گئے جس میں ترواننت پورم کو پہلا مقام حاصل ہواجہاں سب سے زیادہ 99.85 طلبہ کامیاب رہے ۔ چنئی میں یہ فیصد 99.62 رہی ۔ الہ آباد 98.23 فیصد کے ساتھ تیسرے نمبر پر رہا جب کہ دہلی کافی پیچھے چھوٹ گیا۔ دہلی کے صرف 78.09فیصد طلبہ کامیاب ہوئے ہیں جو پچھلے سال کے مقابلے تیرہ فیصد کم ہے ۔پٹنہ ریجن کا ریزلٹ 95.50 فیصد رہا اور اس طرح وہ پانچویں نمبر پر رہا۔ اس سال دسویں بورڈ کے امتحان میں تقریباً سولہ ہزار اسکولوں کے سولہ لاکھ 67ہزار 573 طلبہ شریک ہوئے تھے ۔اس بار کے بورڈ ریزلٹ موڈریشن پالیسی کے تحت جاری کئے گئے ہیں۔ موڈریشن یعنی نمبر بڑھانے کی پالیسی کو لے کر چل رہی کھینچا تان کی وجہ سے اس بار سی بی ایس ای کے نتائج شائع ہونے میں تاخیر ہوئی۔بارہویں کے ریزلٹ میں بھی تھوڑا لیٹ ہوگیا تھا۔ کالج کے ہائی کٹ آف کو دیکھتے ہوئے سی بی ایس ای نے موڈریشن پالیسی کو ختم کردیا تھا جس کے تحت مشکل سوالوں پرامیدواروں کو گریس مارکس دیئے جاتے ہیں۔ لیکن گارجین کی عرضی پر دہلی ہائی کورٹ نے موڈریشن پالیسی کو جاری رکھنے کا بورڈ کو حکم دیا تھا۔ بورڈ اس فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ جاسکتا تھا لیکن اس میں مزید تاخیر کا امکان تھا اس لئے بورڈ نے ہائی کورٹ کے فیصلے پر ہی عمل کرنا مناسب سمجھا۔

About the author

Taasir Newspaper