اردو | हिन्दी | English
114 Views
Indian

کشمیر جنت ہے، امن کو یقینی بنانے کی ضرورت : فوج سربراہ

bipin
Written by Taasir Newspaper

نئی دہلی،14جون(پی ایس آئی)فوج کے سربراہ جنرل بپن راوت نے کہا کہ کشمیر جنت ہے اور وادی کو 1980 کی دہائی کے آخری وقت میں دہشت گردی کا شکار ہونے کے پہلے کی پوزیشن میں لانے کی ضرورت ہے. راوت نے کہا کہ دنیا وادی میں گھومنے آتی تھی لیکن لوگ اب وہاں بدامنی ہونے کی وجہ سے نہیں آ پا رہے ہیں. وادی میں پچھلے کچھ دنوں سے پتھراؤ کے واقعات میں اضافہ ہو گیا ہے. جموں و کشمیر میں چار بار سروس دینے والے راوت نے کہا، ‘کشمیر جنت ہے. ہمیں اسے دوبارہ اس کی سطح پر لے جانا ہے جہاں یہ پہلے تھا. دنیا وادی میں گھومنے آتی تھی لیکن کشیدگی کی وجہ لوگ یہاں نہیں آ پا رہے ہیں.’جموں و کشمیر میں اپنی تقرری کو یاد کرتے ہوئے راوت نے کہا کہ ریاست میں ان کی پہلی مدت 1981۔82 کے دوران تھی جب’ حالت اچھے تھے.انہوں نے کہا کہ دوسری تقرری کے دوران 1991 سے 1993 کے درمیان حالت خراب ہونے لگے. لیکن حکومت اور فوج کی کوشش یہاں ہیں کہ وادی میں دوبارہ وہیں 1981۔82 کا امن قائم کیا جائے، حکومت اور فوج اس طرف کام کر رہی ہیں آنے والے کچھ وقت میں وادی کی صورت حال پوری طرح بدل جانے والی ہے.ملک کے وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ بھی کہہ چکے ہیں کہ ہماری حکومت کشمیر کا مستقل حل نکالنا چاہتی ہیں حکومت کی پہلی ترجیح میں وادی میں امن بحال کرنا ہے.

About the author

Taasir Newspaper