’ستر دھار ‘کے زیر اہتمام پریم چند کی جینتی تقریب کاانعقاد

0
52

کھگول ، 31 جولائی( پی آر)ممتا ز کہانی کار پریم چند کی 138 ویں جینتی کے موقع پر سموار کے ر وز ثقافتی تنظیم ’ ستردھار‘ کے زیراہتمام شایان شان تقریب کا انعقاد کیاگیا۔ اس موقع پر ’ آج کا کسان اور پریم چند‘ کے موضوع پر منعقد ایک مذاکرہ سے خطاب کر تے ہوئے سینئر صحافی اورقلمکار کملیش نے کہاکہ پریم چند کی تخلیقات ملک کے کسانوں اورزندگی کے حاشیئے پر جی رہی آبادی کے حالات پرمبنی ہیں ۔ان کی معنویت آج بھی برقرار ہے ۔ پر یم چندکی آج کے دور میں پریم چند کو یادکر نا صرف ان کی تخلیقات کو سمجھنا نہیں ہے بلکہ اپنی زبان اور اپنی ثقافت کا احترام کر ناہے ۔انہوں نے پریم چند کی تخلیقات کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے پریم چندکی زندگی اوران کی خدمات پر تفصیل سے رو شنی ڈالی۔معروف اسٹیج آرٹسٹ ادئے کمار نے پریم چندکے کرداروں کے حوالے سے بتایاکہ ان کے تمام تر کردار آج بھی ہماری نظروں کے سامنے گھومتے پھر تے نظر آتے ہیں ۔پریم چندکے کردارزندگی کی بنیاد ی سہولتوں سے محروم ہیں ۔انہو ں نے کہاکہ آج سے الگ بھگ 100 سال پہلے پریم چند نے جن کسانو ں کی زندگی کو اپنی کہانیو ں کی بنیاد بنائی تھی ۔وہ کسان آج بھی خود کشی کرنے کیلئے مجبور ہیں ۔کسان بڑی تیزی کے ساتھ شہری مزدور بنتے جارہے ہیں ۔جو ہندو ستان کے ا نہّ داتا تھے وہ خود دا نے دانے کے محتاج ہوگئے ہیں ۔اس موقع سے ستر دھار کے جنرل سکریٹری اور سینئر اسٹیج آرٹسٹ نواب عالم نے الزام لگایا کہ ایک ساز ش کے تحت پریم چند جیسے عظیم فنکار کو در کنار کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔پریم چندن نے زندگی کے ہاشیہ پرزندگی گزار رہی آبادی کیلئے جو کچھ بھی لکھا اس کو دفن کر نے کی سازش ہو رہی ہے ۔جو افسوس ناک ہے ۔انہوں نے کہاکہ پریم چند کی شخصیت اوران کے خدمات کا کوئی جوا ب نہیں ہے ۔اس موقع پر سدھیر مدھو کر، ڈاکٹر ایس این یادواور ستیہ کام سہائے وغیرہ نے بھی پریم چند کی حیات وخدمات پر رو شنی ڈالی ۔مذاکرہ کے بعد پریم چند کی مشہور اور آفاقی تخلیق ’ پوس کی رات ‘ پرمبنی ایک ڈرامہ بھی پیش کیاگیا۔ڈرامہ میں نا ٹک کار ادئے کمارنے ہلکھو کسان کے کردار کو بہت ہی کامیابی کے ساتھ نبھا یا۔انہوںنے کسانو ں کے کر ب اور دیہی زندگی کے مناظرکو بخوبی اسٹیج کے تو سط سے پیش کیا۔ رنجیت پر ساد سنہا، راکیش پریم ،رام ناتھ رو ہت اور ارجن وغیرہ نے معاونین کے طورپر حصہ لیا۔ڈرامے کے ناظرین میں رنجیت پرسادسنہا ، رام نارائن پاٹھک ، اشوک کنال ، انیل کنا، راکیش گپتاسمیت مقامی ادیبوں، صحافیوں ، دانشوروں اوربڑی تعداد میں طلباءوطالبات نے شرکت کی ۔آخر میں نواب عالم نے شرکاکا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہاکہ اگلے سال پریم چندکی جینتی بڑے پیمانے پرمنعقد کی جائے گی ۔