آج کا شماره | اردو | हिन्दी | English
Politics

ممتا بنرجی عظیم سیاسی اتحاد کےلئے سونیا گاندھی سے ملاقات کریں گی

mamata-l
Written by Tariq Hasan

کولکاتا ۵۲ جولائی:نئے صدرکی حلف برداری کی تقریب میں حصہ لینے کےلئے مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی دہلی آئی ہوئی ہیں۔ ظاہری طور پر وہ یہاں حلف برداری کی تقریب میں آئی ہوئی ہیں لیکن ان کا ارادہ کچھ اور ہے۔آج ان کے کانگریس کی صدر سونیا گاندھی سے ملاقات کا امکان ہے۔ وہ یہاںبی جے پی کے خلاف ایک عظیم اتحاد کا حتمی شکل دینے کی کوشش میںہیں۔واضح رہے کہ دھرمتلہ میں ریلی کے دوران وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے اعلان کیا ہے کہ ۹۱۰۲ کے لوک سبھا میں چناو¿ میں بی جے پی کردیا جائے گا۔اسی کے لئے انہوں نے اپنے طورپرکوشش شروع کر دی ہے۔آل انڈیا ترنمول کانگریس کے ذرائع کے مطابق وزیر اعلیٰ سوموار کو ہی دہلی پہنچ گئی تھیں۔ وہ سونیا گاندھی کے علاوہ بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار، دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کجریوال، آر جے ڈی کے چیف لالو پرساد یادو اور اڑیسہ کے وزیر اعلیٰ نوین پٹنائیک سے ملاقات کریں گی۔لوک سبھا چناو¿ میں اپوزیشن متحد ہوکر چناو¿ لڑے اسی سلسلے میں وہ یہاں بات چیت کرنا چاہتی ہیں۔ فرقہ وارانہ معاملے پر بھی وہ بات چیت کریں گی۔کسانوں کی خودکشی کے واقعات، ویاپم گھوٹالہ سمیت دیگر موضوعات پر بھی وہ بات چیت کریں گی۔ترنمول کانگریس کے ذرائع کے مطابق اس سے قبل بھی ممتا بنرجی نے سونیا گاندھی کے ساتھ عظیم اتحاد کے بار ے میں بات چیت کی ہے۔ اس وقت نتیش کمار اور اروند کجریوال نے ان کے منصوبے پر اتفاق نہیں کیا تھا۔ اس طرح ممتا بنرجی کو خالی ہاتھ لوٹنا پڑا۔ اس اتحاد میں سی پی ایم کو بھی شامل کرنے کی بات ہے۔ سی پی ایم کے سوجن چکرورتی کا کہنا ہے کہ ممتا بنرجی کا وزیر اعظم بننے کا خواب ہوسکتاہے۔لیکن ابھی تک کوئی اس کےلئے تیار نہیں ہوا ہے۔سوجن چکرورتی کاکہنا ہے کہ ابھی تک کوئی تیار نہیں ہواہے۔
ممتا بنرجی پر یہ الزام ہے کہ ان کا بی جے پی کے ساتھ خفیہ معاہدہ ہے۔کانگریس کے رہنما عبد المنا ن کا کہنا ہے کہ دیکھا جائے سونیا گاندھی کے ساتھ ممتا بنرجی کی بات چیت کا کیا نتیجہ نکلتا ہے۔اس سے قبل بھی ممتا بنرجی نے سونیا گاندھی سے ملاقات کی ہے لیکن اس کا کوئی نتیجہ نہیں نکلا۔ بی جے پی لیڈروںکے مطابق ممتا بنرجی ممتا بنرجی کسی بھی سیاسی پارٹی کے ساتھ ہاتھ ملا سکتی ہیں لیکن مرکز سے بی جے پی کو اکھاڑنے کا کوئی چانس نہیں ہے۔ بی جے پی کے دلیپ گھوش کا کہنا ہے کہ ہمارے ووٹروں کی تعدادمیںروز بروز اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔

About the author

Tariq Hasan