بھاگلپور میں بھیانک حادثہ ، سڑک کنارے کھڑے آٹھ لوگوں کو کار نے روندا

0
34
Taasir Urdu News | Uploaded on 23-sep-2017

بھاگلپور ،23 ستمبر ( نمائندہ ) بھاگلپور میں جمعہ کی دیر رات بھیانک حادثہ پیش آیا ہے۔ سڑک کنارے کھڑے آٹھ لوگوں کو ایک تیز رفتار کار نے کچل ڈالا ۔یہ حادثہ شام سنٹرل جیل کے سامنے پیش آیا۔ اس بھیانک حادثے میں چار لوگوں کی موت ہوگئی اور چار لوگوں کی حالت تشویشناک ہے۔ حادثے میں کار میں سوار پانچ لوگ بھی زخمی ہوگئے ۔چشم دید لوگوں کے مطابق واقعہ کے وقت زخمی سبھی آٹھ لوگ بائک لے کر سڑک کنارے کھڑے تھے۔ تبھی تلکا مانجھی سے زیرو مائل کی طرف جارہی تیزرفتار بے قابو کار نے انہیں کچل دیا۔ این ایچ 80 پر سنٹرل جیل کے سامنے تیز رفتار کار جمعہ کی شام بے قابوہوگئی۔ فلمی انداز میں کار تین منٹ تک سڑک پر موت بن کر گھومتی رہی ۔پہلے سائیکل سوار کو ٹکر ماری ، پھر لہراتی ہوئی ایئر پورٹ کی دیوار کی طرف پہنچی اوربائک سوار کو اڑا دیا۔ بائک سوار 30 فٹ ہوا میں اچھلا اور پھر دھرام سے نیچے جا گرا۔ اس کے بعد جیل گیٹ کے سامنے کھڑے پانچ لوگوں کو بائک سمیت اڑاد یا۔ ٹکر مارنے کے بعد کار پھر لہرائی اور بائک پر بیٹھے ایک نوجوان کو ٹکر مار دی۔ نوجوان 30فٹ پھینکا گیا اور درخت سے جا ٹکڑایا۔ کار کی ٹکر سے دو لوگوں کی موت ہوگئی۔ جبکہ گیارہ لوگ زخمی ہوگئے سبھی کو میڈیکل کالج ہسپتال اور سبور کے ایک پرائیویٹ نرسنگھ ہوم میں داخل کروایا گیا۔ شام 6.30 بجے اپنی کار جے ایچ 09 اے ایف 1721 سے آسنسول کے ڈاکٹر اوما شنکر پرساد اپنے سسرال سبور جارہے تھے ۔کار میں ان کی اہلیہ کرشنا کماری ، دو بیٹیاں ، امنی(6 سال)پریانشی (3 سال) بھی سوار تھیں۔ نیووردمان ٹاو¿ن شپ کا ڈرائیور انل کمار رجک کار چلارہاتھا۔ ہنسڈیہا کے راستے بھاگلپور پہنچی ڈاکٹر اوما شنکر کی کار سنٹرل جیل کے پاس بے قابو ہوگئی ۔ جیل کے پاس سائیکل سے انگلش فرکا جارہے سداما یادو کو کار نے سب سے پہلے اپنی زد میں لیا ۔ اس کے ہاتھ پیر میں چوٹیں آئیں ۔ٹکر کے بعد کار بائیں طرف سے لہراتی ہوئی داہنے کی طرف چلی گئی۔ موصولہ اطلاع کے مطابق کار میں بیٹھے ایک ہی خاندا ن کے دو بچے سمیت ایک مرد اور ایک خاتون کا پرائیویٹ نرسنگھ ہوم میں علاج چل رہا ہے۔