آج کا شماره | اردو | हिन्दी | English
Bihar News

کیسے منے گا بزرگوں کا دشہرہ ، پینشن کے انتظار میں گزر گئے ڈیڑھ سال

arwal -old-pension
Written by Taasir Newspaper
Taasir Urdu News | Uploaded on 19-sep-2017

ارول ، 19 ستمبر ( نمائندہ ) جب حکومت نے بزرگوں کو سہارا دینے کے مقصد سے ضعیف العمری پنشن جیسی اسکیم نافذ کی تھی تو ایسا لگا تھا کہ اب بزرگوں کو اپنی اولاد کی مار نہیں جھیلنا پڑے گا۔ حکومت نے ان بزرگوں کے لئے ایک مضبوط لاٹھی کا سہارا پنشن کے طور پر دیا تھا ۔ لیکن حکومت کے دیگر منصوبوں کی طرح یہ بھی نوکر شاہی کی لاپروائی کے بھینٹ چڑھ رہا ہے ۔ پینشن ملے تقریبا ڈیڑھ سال گزر گیا ہے۔ اس دوران بہت سے تہوار آئے اور چلے گئے۔ بزرگوں کی بجھتی آنکھیں پنشن کا انتظار ہی کرتے رہگئی ۔ اتنا ہی نہیں کئی بزرگ تو کسی طرح یہ امید لے کر صاحب کے دفتر تک کا چکر کاٹتے رہتے ہیں تاکہ وہاں سے کوئی سنوائی ہو سکے۔ مکھیا جی کے دروازے پر بھی بزرگ اسی امید سے دستک دیتے ہیں کہمکھیا جی کچھ کریں گے اور ہمیں پنشن دلائیں گے۔ لیکن محکمہ جاتی داو¿ پیچ میں یہ معاملہ اس طرح الجھا رہا کہ بیچارے بوڑھوں کے پنشن کا سہارا بھی ان سے دور ہوتا چلا گیا۔ بزرگ بتاتے ہیں کہ پہلے تو بیٹوں سے بھی کچھ مل جاتا تھا لیکن حکومت جب سے پنشن دینے لگی ہے بیٹوں نے بھی نظر پوری طرح موڑ لیا ہے ۔ اب یہ سوال پیدا ہوتا ہے کہ آخر جب منصوبہ بندی میں بوڑھوں کا اتنا خیال رکھا گیا تو پھر پنشن دینے میں اتنی دیر کیوں؟ حد تو تب ہو جاتی ہے کہ اس مسئلے پر نہ تو ضلع کے کوئی افسر کچھ بتاتے ہیں اور نہ ہی بلاک کے ہیڈ یونین کے ضلع صدر ابھیشیک رنجن سے بزرگوں کے اس مسئلہ کے تئیں پوچھا گیا تو انہوں نے بھی دکھ ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے دروازے پر روزانہ پنشن کے انتظار میں بہت سے بزرگ آتے ہیں اور مایوس ہو کر چلے جاتے ہیں۔ ہم اس مسئلے کو لے کر ڈویزن سے لے کر ضلع تک کے حکام سے یہاں تک کہ پٹنہ تک کے حکام سے بات کی ہے ہر طرف سے یہی یقین دہانی کی جاتی ہے کہ جلد ہی پنشن پہنچ جائے گا ۔انہوں نے کہا کہ بزرگوں کی اس حالت کو دیکھ کر اب ہم عوامی نمائندوں کا بھی صبر کا باندھ ٹوٹنے لگا ہے ۔ حکومت اگر دسہرہ کے پہلے ان بزرگوں کا پنشن نہیں دیتی ہے تو یقینا بزرگوں کی حق کی لڑائی ہم عوامی نمائندے لڑیں گے۔ اور اسے لے کر جس طرح کی تحریک کی ضرورت پڑے گی ویسی تحریک ایسوسی ایشن کے ذریعہ بھی کیا جائے گا۔ بزرگوں کے ساتھ ناانصافی برداشت نہیں کی جائے گی ۔ وہیں ڈسٹرکٹ کونسلر آنند چندرونشی نے بھی حکومت سے فوراََ پنشن کا مطالبہ کیا ہے اور پنشن نہیں ملنے کی صورت میں تحریک چلانے کے لئے خبردار کیاہے ۔

About the author

Taasir Newspaper