gopalganj-khet-678x381 3

بلند حوصلہ کے ساتھ کھیتی کی جائے تو آج بھی معاشی حالت بہتر ہوسکتی ہے

گوپال گنج ، 29 اکتوبر ( نمائندہ ) آج کے وقت میں جہاں کسان کھیتی کو غیر مفید مان کر مایوس ہیں ۔ وہیں مانجھا بلا ک کے پھلوریا گاو¿ں کے کسان راما جی پرساد کشواہا نے سبزی کی کھیتی کر پورے علاقہ میں ایک مثال قائم کردیا ہے۔ صرف اپنے دو بیگہہ زمین پر کھیتی کر سالانہ تین لاکھ روپے کی کمائی کرتے ہیں۔ اس سال بھی وہ صرف اپنے دو بیگہہ زمین میں گوبھی کی کھیتی کئے ہیں۔ لہلہاتی ان کی کھیتی اگل بغل کے لوگوں کے لئے ترغیب کا ذریعہ بنی ہوئی ہیں۔ صبح ہوتے ہی ان کے دروازے پر گوپال گنج سیوان ، موتیہاری کے کاروباریوں کا دروازہ پر ہی مجمع لگ جاتا ہے۔ صبح سے گوبھی کی بکری شروع ہوجاتی ہے اور تقریباََ ایک گھنٹے میں ہی روزانہ کی نکالی گئی گوبھی یا دیگر سبزیاں کاروباری کھیت سے ہی لے جاتے ہیں ۔ غور طلب ہے کہ راما جی پرساد کشواہا نے انٹر کی تعلیم 1992 میں حاصل کرنے کے بعد نوکری کی تلاش میں لگ گئے، نوکری نہیں ملنے پر در در بھٹکنے لگے ۔ ادھر خاندانی حالات کمزور ہونے کی وجہ سے کھیتی کو ہی خاندان کی پرورش کے لئے منتخب کرلیا۔ وہ کھیتی باری میں 2004 سے لگ گئے۔ آج خاندان کی معاشی حالت کافی مضبوط کرلی ہے۔ وہ ایک سماجی کارکن بھی ہیں اور بلاک کے دیگر کسانوں کے لئے نظیر بنے ہوئے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں