بہارکانگریس: ریاستی مندوبین کی کانفرنس میں گھماسان،چلے لات گھونسے

0
13

پٹنہ 09اکتوبر (تاثیر بیورو): بہار پردیش کانگریس میں مچے گھماسان کے بعد آج صداقت آشرم میں ریاستی نمائندگان کی بلائی گئی کانفرنس میں شرکت کی غرض سے آفس پہنچے کانگریسی رہنماﺅں اور کارکنان کے درمیان جم کرمارپیٹ ہوئی۔ صداقت آشرم کے اندر اور باہر خوب ہنگامہ ہوا۔ اس دوران سابق ریاستی صدر اشوک چودھری کے ساتھ دھکا مکی بھی کی گئی۔ جبکہ ان کے حامیوں کے کپڑے بھی پھاڑ دیئے گئے۔ ہنگامے کے بعد ریاستی کانگریس دفتر صداقت آشرم پولس چھاﺅنی میں تبدیل ہوگیاہے۔ ریاستی نمائندگان کی کانفرنس میں حصہ لینے صداقت آشرم پہنچے کانگریس رہنماﺅں اور کارکنوں کے درمیان بھی خوب مارپیٹ ہوئی۔ کانگریس کے ناراض کارکنان نے داخلہ پر روک لگائے جانے کے خلاف جم کر نعرہ بازی کی اور پی ایم نریندر مودی کی حمایت میں نعرہ لگائے۔ اس دوران اشوک چودھری کے ساتھ ہی ان کے گروپ کے رہنماﺅں اور کارکنوں کے ساتھ دھکا مکی کی گئی۔ بڑھتے بوال کے مدنظر صداقت آشرم کے باہر بڑی تعداد میں پولس فورس تعینات کردی گئی ہے۔ موصولہ اطلاع کے مطابق ہنگامے کے مدنظر آشرم کے اندر میڈیا کے کارکنان کے داخلے پربھی روک لگا دی گئی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ پارٹی رہنماﺅں کے درمیان مچے گھماسان میں دروازے سے صرف قادری گروپ کے رہنماﺅں کو اندر جانے کی اجازت دی گئی۔ چودھری گروپ کے رہنماﺅں کوبھی اندر جانے کی اجازت نہیں ملی، جس کے بعد جم کر بوال ہوا اور کئی نیتا آپس میں بھڑگئے۔ واضح ہوکہ عظیم اتحاد ٹوٹنے کے بعد کانگریس اپنی اندرونی بحران سے جوجھ رہی ہے۔ اس بیچ کوکب قادری کے ریاستی کانگریس کے کارگذار صدر بننے کے بعد روزانہ کوئی نہ کوئی بیان بازی ہورہی ہے ۔ ایک طرف اشوک چودھری اپنی مہم میں لگے ہوئے ہیں تو وہیں کارگزار صدر سے زیادہ تر ایم ایل اے ناراض نظر آرہے ہیں۔ ادھر کارگزار صدر کوکب قادری کا کہنا ہے کہ پارٹی کے اندر کسی بھی طرح کا کوئی تنازعہ نہیں ہے۔