راشن-کراسن گاو¿ں میں ہی تقسیم کیا جائے ،نہیں جائیں گے دوسرے گاو¿ں

0
18
Taasir Urdu News | Uploaded on 22-OCTOBER-2017

سمستی پور / روسڑا ، 22 اکتوبر ( نمائندہ ) گوبندپور بلاک کے ہائی اسکول کے احاطہ میں اتوار کو راشن-کراسن میں ہو رہی پریشانی کو لے کر دیہی صارفین کی ایک میٹنگ طلب کی گئی۔ اجلاس میں سینکڑوں صارفین کی طرف سے اپنے گاو¿ں میں ہی راشن-کراسن فراہم کرنے کی ایک آواز اٹھایا اور فیصلہ کیا کہ کوئی صارفین راشن کراسن لینے کے لئے کسی دوسرے گاو¿ں نہیں جائیں گے۔ اس سلسلے میں گاو¿ں والوں کا کہنا تھا کہ اس گاو¿ں کے لوگوں کو قریب 50 سال سے اپنے گاو¿ں میں ہی تقسیم کا سامان ملتا رہا ہے لیکن مقامی بیچنے والے آنجہانی دیپ نارائن لال کے موت کے بعد محکمہ کی طرف سے ان کے بیٹے رنجیت لال کے ساتھ صارفین کے سامان کی اٹھاو¿ تقریبا ڈھائی سال گزر چکے ہیں ، لیکن فی الحال مقامی انتظامیہ کی طرف سے گوبندپور کے راشن-کراسن کو گاو¿ں سے تین کلومیٹر دور دوسرے گاو¿ں کے ساتھ شامل کر دیا گیا ہے جس کا ہم صارفین کی طرف سے کافی دنوں سے مخالفت کی جا رہی ہے پر اس سلسلے میں کوئی سنوائی اب تک نہیں ہوئی ہے۔ صارفین کا کہنا ہے کہ کوئی بھی سامان اٹھاو¿ کرے لیکن وہ ہم گاو¿ں والوں کو ہمار ے گاو¿ں میں دستیاب کرائے۔ اجلاس میں سکل دےو پاسو ان، وجئے مہتو، اروند پاسوان، اشوک ساہ، ببلو شرما، رام ادگار ساہ، سرےندر کمار سنگھ منا، پنٹو شرما سمیت سبھی وارڈ رکن اور پنچوں نے اپنا اپنا خیال رکھا۔ اس موقع پر سینکڑوں صارفین اور دیہی باشندہ موجود تھے۔