بہار

منریگا میں بند ر بانٹ کو اجاگر کرنے والے خاندان پر دبنگوں کا حملہ

Profile photo of Taasir Newspaper
Written by Taasir Newspaper
Taasir Urdu News | Uploaded on 04-OCTOBER-2017

شیخ پورہ، 4 اکتوبر ( نمائندہ ) ضلع کے ارریہ بلاک کے حسین آباد پنچایت میں منریگا منصوبہ میں 5-6 کروڑ کی رقم کے غبن کا معاملہ اجاگر ہوا تھا۔ اب خلاصہ کرنے والے سماجی کارکن اور اس کے خاندان پر حملہ شروع ہوگیا ہے۔ حملے کا الزام غبن کرنے کے ملزم کو ہی بتایا گیا ہے ۔بتا دیں کہ منگل کو دیر شام منریگا معاملے کو اجاگر کرنے والے ککڈاڈ گاو¿ں باشندہ سماجی کارکن امتیاز میاں کے گھر پر ملزم نے حملہ کر دیا۔ اس حملے میں، امتیاز کی بڑی بہن نازآفرین شدید طور پر زخمی ہوگئی۔ انہیں علاج کے لئے صدر ہسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ متاثرہ نے بتایا کہ وہ اپنے گھر کے صحن میں بیٹھی تھی۔ اسی درمیان اس کے گھر کے دروازے کے باہر بہت شور شرابہ ہونے لگا۔ شور سن کر وہ جیسے ہی باہر نکلی ویسے ہی چار پانچ لوگوں نے اس کا ہاتھ پکڑ کر کھینچ لیا ۔ جب تک کہ وہ کچھ سمجھ پاتی اس کے اوپر لاٹھی -راڈ سے حملہ کرنا شروع کردیا۔ وہ شد ید طور پر زخمی ہوکر نیچے گر پڑی ۔ اسی بیچ امجد علی، مختار، احمد علی اور دیگر نے اسے جان سے مار ڈالنے کی بات کہی ۔ اس کی چیخ کو سننے کے بعد اس کے بھائی امتیاز گھر سے نکل گئے۔ اس کے بعد بدمعاشو ں نے اسے زخمی کردیا۔ اس نازک حالت میںمتاثرہ کے علاج کے لئے صدر ہسپتال میں داخل کرایا گیا ۔ متاثرہ نے بتایا کہ اس کے بھائی اور گاو¿ں کے دوسرے لوگوں نے مل کرحسین آباد پنچایت میں منریگا منصوبہ میں 5-6 کروڑ سرکاری رقم کے غبن کے معاملے کا پردہ فاش کیا تھا۔ اس معاملے میں پوسٹ ماسٹر امجد علی، حسین آباد کے مکھیا آلوک کمار سمیت دیگر پر ڈی ایم نے جانچ کے بعد سرکاری رقم کے غبن کا معاملہ درج کرایا تھا۔ اسی رنجش میں امجد علی اور اس گرگوں نے ان پر قاتلانہ حملہ کیا تھا۔ وہیں اس معاملے میں ایس پی راجندر کمار بھیل نے کہا کہ ککڈاڈ میں منریگا کیس کے ملزم اور اس معاملے کو اجاگر کرنے والے کے درمیان مارپیٹ کا معاملہ نوٹس میں آیا ہے۔ متاثرہ اور ملزم دونوں ایک دوسرے کے رشتہ دار ہیں۔ ماضی میں ان کے درمیان تنازعہ چلا آرہا ہے ۔ دوونوں طرف سے معالہ درج کر کارروائی کی جارہی ہے۔

About the author

Profile photo of Taasir Newspaper

Taasir Newspaper

Skip to toolbar