Bowlers_guide_India_to_seventh_consecutive_T20_win_against_Australia_1507444782 2

کیویز کا شکار کرنے اترے گی ٹیم انڈیا

ممبئی، 21 اکتوبر (یو این آئی) ہندوستانی کرکٹ ٹیم نیوزی لینڈ کے خلاف اتوار کو یہاں وانکھیڑے اسٹیڈیم میں ہونے والے پہلے ایک روزہ میچ میں کپتان وراٹ کوہلی کے 200 ویں ون ڈے کا جشن فتح کے ساتھ منانے کے مقصد کے ساتھ اترے گی۔ہندستان کا نیوزی لینڈ کے خلاف تین میچوں کی سیریز میں اس کے ساتھ ہی ون ڈے رینکنگ میں ایک بار پھر سرفہرست رینکنگ پر واپسی کرنے کا بھی ہدف رہے گا جس کی شروعات اس پہلے ون ڈے میں جیت کے ساتھ کرنی ہوگی۔ ہندستان نے آخری سیریز میں ورلڈ چمپئنز آسٹریلیا کو 4۔1 سے شکست دی ہے اور کیویز کے خلاف اسی فتح کا سلسلہ برقرار رکھنا ہوگا۔دنیا کے بہترین بیٹسمین میں اپنا نام شامل کرانے والے کپتان وراٹ کے لئے یہ ون ڈے انتہائی خاص ہو گا۔ یہ ان کے کیریئر کا 200 واں ون ڈے ہوگا، جس میں وہ ہر صورت میں جیت درج کرکے اسے یادگار بنانا چاہیں گے ۔ وراٹ کل میدان میں اترنے کے ساتھ ہی یہ کامیابی حاصل کرنے والے 13 ویں ہندوستانی کھلاڑی بن جائیں گے ۔وراٹ اس وقت 199 ون ڈے کھیل چکے ہیں جس میں انہوں نے 30 سنچریوں کے ساتھ 8767 رنز بنائے ہیں۔وراٹ کا اس کے ساتھ ہی خود کو ون ڈے رینکنگ میں دوبارہ نمبر ون بنانے اور ٹیم انڈیا کو بھی درجہ بندی میں نمبر ایک پر لے جانے کا ہدف رہے گا۔وراٹ ون ڈے رینکنگ میں دوسرے نمبر پر کھسک گئے ہیں۔جنوبی افریقہ کے اے بی ڈی ولیرس ابھی 879 درجہ بندی پوائنٹس کے ساتھ ون ڈے میں بلے بازوں کی فہرست میں نمبر ون بن گئے ہیں۔ وراٹ (877) دوسری جگہ پر کھسک گئے ہیں ۔ ڈی ولیئرز اور وراٹ کے درمیان، صرف دو پوائنٹ کا فاصلہ ہے ۔جنوبی افریقہ کو ابھی بنگلہ دیش سے تیسرا ون ڈے کھیلنا ہے جبکہ ہندستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان تین ون ڈے سیریز شروع ہونے جا رہی ہے ۔اس وقت ڈی ویلیرز اور وراٹ کے درمیان سخت مقابلہ جاری رہے گا۔جنوبی افریقہ نے نمبر ایک جگہ کے ساتھ ہندستان کی جگہ لے لی ہے ۔جنوبی افریقہ 120 ریٹنگ پوائنٹس کے ساتھ پہلے نمبر پر آ گیا ہے ۔ہندستان اور جنوبی افریقہ کے یکساں ریٹنگ پوائنٹ ہیں لیکن عدد اعشاریہ حساب کی بنیاد پر جنوبی افریقہ ہندستان سے آگے نکل گیا ہے ۔ہندستان نے اپنی سابقہ چھ دوطرفہ سیریز جیت لی ہیں اور اب اس کا ہدف ساتویں سیریز ہوگا۔ ہندستان نے اس دوران زمبابوے کو 3۔0 سے ، نیوزی لینڈ کو 3۔2 سے ، انگلینڈ کو 2۔1 سے ، ویسٹ انڈیز کو 3۔1 سے سری لنکا کو 5۔0 سے اور آسٹریلیا کو 4۔1 سے شکست دی ہے ۔نیوزی لینڈ 2016 ۔17 میں ہندوستان کے گزشتہ دورے میں سیریز ہار چکا ہے لیکن اس نے اس ہار میں بھی قابل ستائش جدوجہد کی تھی لہذا ہندستان کے سامنے کیوی اس وقت بھی مشکل چیلنج رہے گا۔نیوزی لینڈ کی ٹیم سریز سے قبل دو پریکٹس میچ کھیل کر ہندستانی کنڈیشنز کے ساتھ ہم آہنگ ہونے کی کوشش کی ہے ۔نیوزی لینڈ نے بورڈ چیئرپرسن الیون سے پہلا پریکٹس میچ ہارا لیکن دوسرے پریکٹس میچ میں اس نے 300 سے اوپر کا اسکور بنا کر جیت حاصل کی اور سیریز کے لئے اپنا حوصلہ بلند کر لیا۔نیوزی لینڈ نے وکٹ کیپر بلے باز ٹام لاتھم (108) اور راس ٹیلر (102) کی شاندار سنچریوں کی بدولت دوسرے پریکٹس میچ میں 50 اوور میں آٹھ وکٹ پر 343 رن کا بڑا اسکور بنانے کے بعد بورڈ الیون کو 47.1 اوور میں 310 رن پر آ¶ٹ کر دیا تھا۔پہلے پریکٹس میچ میں بورڈ چیئرمین الیون کے نو وکٹ پر 295 رن کے جواب میں نیوزی لینڈ 47.4 اوور میں 265 رن پر محدود ہو گئی تھی لیکن اس ہار میں نیوزی لینڈ کے تیز بولر ٹرینٹ بولٹ کی شاندار بولنگ حوصلہ افزا رہی تھی جنہوں نے نو اوور میں 38 رنز دے کر پانچ وکٹ حاصل کئے تھے ۔نیوزی لینڈ کے کپتان کین ولیمسن نے بھی تسلیم کیا ہے کہ ہندستان کو اسی کی زمین پر ہرانا بہت مشکل کام ہے اور ٹیم انڈیا کو شکست دینے کے لئے ان کے کھلاڑیوں کو سو فیصد بہتر کارکردگی کرنا ہوگی ۔مہمان ٹیم کے سامنے ایک بڑی پریشانی یہ ہے کہ دونوں پریکٹس میچوں میں اس کے گیند بازوں نے 300 کے قریب رنز لٹایے تھے اور وراٹ کوہلی، روہت شرما، شکھر دھون، اجنکیا رہانے ، منیش پانڈے ، کیدار جادھو اور مہندر سنگھ دھونی جیسے بلے بازوں کو روکنا اس کے لئے کافی مشکل کام ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں